ٹرمپ دیوار کے تنازعہ پر ایمرجنسی نافذ کرسکتے ہیں

واشنگٹن: امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اس بات کا عندیہ دیا ہے کہ وہ اہمرجنسی اختیارات استعمال کرتے ہوئے فوج کے لئے مختص فنڈز مین سے میکسیکو کے ساتھ دیوار کی تعمیر کا منصوبنہ شروع کرسکتے ہیں۔ یہ اشارہ کانگرس میں ڈیموکریٹ پارٹی کے ساتھ اس معاملہ پر کسی مفاہمت میں ناکامی کے بعد دیاگیا ہے۔
صدر ٹرمپ نے یہ بات میکسیکو کی سرحد کے دورے کے دوران یہ بات کہی ہے۔ انہوں نے کہا ہے کہ اگر وہ دیوار کے لیے رقوم منظور کرانے کے لیے حزب مخالف کے ڈیموکریٹس کے ساتھ کسی سمجھوتے تک نہیں پہنچ پاتے تو شاید وہ ہنگامی حالت کا اعلان کریں۔
صدر ٹرمپ نے ڈیموکریٹ قائدین کے ساتھ بدھ کو مذاکرات کئے تھے لیکن جب دیوار کے مسئلہ پر مفاہمت کا اشارہ سامنے نہیں آیا تو انہوں نے یہ ملاقات اچانک ختم کردی تھی۔ ٹرمپ نے اخباری نمائندوں کو بتایا کہ ’’مجھے پورا حق حاصل ہے کہ میں قومی ایمرجنسی کا اعلان کروں۔ ابھی تک میں نے ایسا نہیں کیا۔ میں ایسا کر سکتا ہوں۔ اگر میں کامیاب نہیں ہوتا، تو ممکن ہے مجھے ایسا ہی کرنا پڑے۔ میں یہی کہوں گا کہ یقینی طور پر‘‘۔
ٹرمپ نے کہا کہ ’’کوئی وجہ نہیں کہ ہم سمجھوتے تک نہ پہنچ سکیں‘‘۔ لیکن، اُنہوں نے کہا کہ ’’ایک فریق کو سرحدی سکیورٹی سے کوئی غرض نہیں‘‘۔
امریکہ میں صدر اور کانگرس کے تنازعہ کی وجہ سے حکومت کا کام جزوی طور سے بند ہے اور آٹھ لاکھ سرکاری ملازمین کو تنخواہیں نہیں مل سکی ہیں۔

Comments:- User is solely responsible for his/her words