شاعری


  وقت اشاعت: 01 مئی 2017

ایک مزدور

ذرا سا شور گر کم ہو
یہاں چلتی مشینوں کا
تو پوچھوں تم سے میں بھائی
سنا ہے آج ہی میں نے
کسی پنج تارہ ہوٹل میں
یہ زیرِغور تھا عُقدہ
کہ مزدورں کی حالت کو
انھوں نے اب بدلنا ہے
تمہاری میری قسمت نے
بہر سُو اَب سنورنا ہے

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 10 اپریل 2017

کہاں میں رُکتا .......کہ سدرۃ المنتہی سے اونچا تو کچھ نہیں تھا!

چڑھائی مشکل تھی ...
آسماں گیر ہاتھ اونچے اُٹھے ہوئے
پاؤں آگے بڑھتے
لپکتے، رستوں کو ماپتے ، سیڑھی سیڑھی چڑھتے
بدن تموج میں ایسے حرکت پذیر
جیسے کہ تیرتا ہو!
 

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 10 اپریل 2017

تم کبھی بدلوگے بھی اس جسم سے باہر نکل کر؟
ایک پنجرے میں مقید
جسم کے ان آٹھ سوراخوں کے کشکولوں میں
اپنی کم بقا محرومیوں کی دکھشنا بھرتے ہوئے
تم آج بھی یہ چاہتے ہو
سارے کشکولوں کو بھر لو
 

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 27 2016

ساتھ اس کا جو مل گیا ہوتا
میرا جیون سنور گیا ہوتا

اک آرزو کی تکمیل کو
آخری ابربھی برس گیا ہوتا

دشت میں آئے تو خیال آیا
سحاب اک چھوٹا ہی مل گیا ہوتا
 

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 02 2015

یہ رقصِ شامِ غم ہے اور مَیں ہوں
محبت محترم ہے اور مَیں ہوں

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 01 2015

مکاں اکیلا رہا عمر بھر نہیں آیا
بنا تھا جس کے لیے اپنے گھر نہیں آیا

 

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 01 2015

جیون کو دکھ، دکھ کو آگ اور آگ کو پانی کہتے..
بچے لیکن سوئے ہوئے تھے کس سے کہانی کہتے؟

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 13 اگست 2015

آج ہے یومِ آزادی ، سب مل کر جشن منائیں
بھول کے سارے غم دنیا کے ، گیت خو شی کے گائیں
نفرت کی اٹھنے سے پہلے ہر دیوار گرائیں
مہر و وفا کی خوشبو بانٹیں ، پیا ر کی جوت جگائیں
 

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 21 جون 2015

خون اپنا ہو یا پرایا ہو
نسل آدم کا خون ہے آخر
جنگ مشرق میں کہ مغرب میں
امن عالم کا خون ہے آخر

مزید پڑھیں

Growing dangers of Islamist radicalism on Pakistani politics

Mr Arshad Butt is an insightful observer of the political events in Pakistan. Even though the hallmark of Pakistani political developments and shabby deals defy any commo

Read more

loading...