مباحث (76)

  وقت اشاعت: 13 2017

پاکستانی فوج کی جانب سے آج بیان آیا ہے اور ترجمان کے مطابق ’وردی پہننے والا کسی بھی مذہب کا ہو، وہ پاکستانی سپاہی ہوتا ہے‘۔ میجر جنرل آصف غفور کا کہنا ہے کہ کوئی بھی جب فوج میں آتا ہے اور وردی پہنتا ہے تو وہ صرف پاکستان کا سپاہی ہوتا ہے، اس سے قطع نظر کے اس کا تعلق کس مذہب اور کس صوبے سے ہے۔ فوج کی جانب سے کم ہی ایسا کوئی بیان آیا ہوگا جس سے فوج کی جمہوریت پسندی اور عوام دوستی کی علامات ظاہر ہوتی ہوں۔ اس کا مطلب یہ ہر گز نہیں کہ خدانخواستہ فوج کی وطن پرستی پر کسی شبہ کی گنجائش ہے۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 25 ستمبر 2017

دنیا بہت تیزی سے بدل رہی ہے۔ دنیا کے سیاسی اکھاڑے میں  سرعت سے دوست دشمن تبدیل ہوکر نئے گٹھ جوڑ تیار ہو رہے ہیں۔ مجھے یاد ہے کہ ہرارے میں غیر جانب دار ملکوں کی کانفرنس میں ہندوستان دنیا کے کمزور ملکوں کی زبان ہوا کرتا تھا۔ مگرآج وہی ہندوستان امریکہ کی گود میں کھیل رہا ہے۔ اور پاکستان جو امریکہ کا سچا پکا حواری تھا۔ کسی نئے اتحاد کی تلاش میں سرگرداں ہے۔ دنیا کو ہو کیا گیا ہے۔ یا دوسرے لفظوں میں یہ سوال کرنا زیادہ درست ہے کہ دنیا کے باسیوں کو خوف کیا ہے۔ کیوں نہرو اور اندرا کی کانگریس کو ووٹ دینے والے ایک اقلیتی چھوٹی سی سیاسی پارٹی کے ہاتھ مضبوط کر رہے ہیں۔ کہ سکیولر ہندوستان آج مذہبی انتہا پسندی کو سیاسی راستہ اور ترقی کا زینہ سمجھ کر آگے بڑھ رہا ہے۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 19 ستمبر 2017

تب ہماری زبان توتلی تھی اور درست طریقے سے مولوی بول ہی نہ سکتا تھا۔ اور اس کے بجائے مولی صاحب ہی بولتا تھا۔ اس وقت ہمیں یہ سمجھ نہیں آتی تھی کہ مولی میم پر پیش کے ساتھ اور مولی میم پر زبر کے ساتھ میں کیا فرق ہے۔ البتہ کھانے کے اور پڑھانے کے اور  کے مابین فرق کا  ضرور علم تھا۔  بچپن میں جب مولی صاحب سے پڑھتا تھا تو امی نے کئی بار ڈانٹا۔  بیٹا مولی صاحب نہیں مولوی صاحب درست ہے۔ البتہ تب مولوی صاحب درست  بھی ہوا کرتے تھے۔ اب نہیں۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 07 ستمبر 2017

تب قربانی کا مطلب سنت ابراہیمی کا ادا کرنا ہوتا تھا اور اسے اس کے شایان شان ادا کیا جاتا تھا، اسے حکم الہی کا بجا لانا جان کر۔ شکر گذاری کے ساتھ۔ یہ نہیں تھا کہ محلے میں سب سے صحت مند اور قیمتی جانور روز قربانی تک ہمارے گیٹ کے سامنے بندھا ہو۔ اور قربانی کے روز اور کئی دن تک خون  اور چھیچھڑے محلے کے سب سے بڑے جانور کے ذبح ہونے کی کہانی تو سنارہے ہوں۔  اور گوشت ہنٹر بیف کی تیاری کے مرکز کو بھجوا دیا گیا ہو۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 15 اگست 2017

پاکستان کی 70 ویں سالگرہ پر عالم یہ ہے کہ منتخب وزیر اعظم کی معزولی پر قوم کے جذبات ملے جلے ہیں۔  جن کی پہنچ فیس بک تک ہے ان کی آواز سنو تو لگتا ہے کہ یہ ایک مستحسن اقدام ہے مگر ایسے میں سڑک پر نکلے ان چاردنوں سے ہم رکاب ہجوم کو نظر انداز کرنا بھی درست نہیں۔ کیا ایک شخص پر فرد جرم عائد کر دینے سے احتساب کا عمل مکمل ہوگیا۔ کیا ستر سالہ تاریخی گناہوں کا کفارہ فرد واحد کی معزولی سے ادا ہو جائے گا۔ نہیں۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 10 اگست 2017

کراچی کی چوڑی چکلی سڑکیں۔ شہری موٹر وے کی موجودگی میں ٹریفک کے اژدہام کو دیکھ کر آسانی سے اندازہ لگایا جاسکتا ہے اس عفریت کے جنم لینے میں کہیں نہ کہیں جینیاتی خرابی ۔۔۔۔ اس طرح سے وقوع پذیر ہوچکی ہے کہ اس کا سدھرنا مشکل ہی نہیں نا ممکن ہے۔۔۔۔۔۔ 

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 02 اگست 2017

بقول اماں کے زما نہ خاک ترقی کر گیا ہے، بس زمانے کو بے حیائی کی ہوا لگ گئی ہے۔ بس یہی وجہ ہوگی، اسی لیے تو اور سب چھوڑ چھاڑ ٹرینوں کا بھی نام ایسا رکھا ہے کہ بندہ بڑے بوڑھوں کے سامنے نام لیتے ہوئے بھی ہچکچائے۔ جب میں نے یہ نام پہلی دفعہ سنا توکانوں کو زور زور سے جھٹکایا کہ شاید غلط سن لیا ہے۔ پھر لغت نکال کر دیکھا کہ شاید اس کا مطلب وہ نہ ہو جسے سمجھ کر ہم شرما رہے ہیں۔ مگر بے سود۔۔۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 11 جولائی 2017

لندن کی زمین دوز ٹرینوں پر ایک کالم نہ لکھنا ان روحوں کی سخت حق تلفی ہوگی جو عرصے سے ان تنگ و تاریک سرنگوں میں بسی ہیں جہاں لوگ باگ ہر روز صبح و شام دفتر و اسکول آتے جاتے کئی کئی سو میٹر گہرائی میں اتر کر ان کے ساتھ چھیڑ خوانی کر تے ہیں۔ ان روحوں میں یقینا کنگ ایڈورڈ پنچم اور کوئن میری کی  روحیں بھی ہوں گی۔ جن کے لگائے ہوئے درخت سے کل ہائیڈ پارک میں ملاقات بھی ہوئی۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 02 جولائی 2017

دسویں جماعت  میں انگریزی کا ایک سبق تھا۔ جسے میری بہن رٹ رٹ کر یاد کر رہی تھی۔ اور اس کا جملہ بار بار دہرا کر، جانے کس قسم کے امتحان کی تیاری کر رہی تھی۔ جسٹ دین علی کیم ان ۔۔۔۔just than Ali   came in ۔ ہمارے گھر میں دو گروپ تھے۔ ایک رٹا لگانے والا گروپ۔ جس کا امتحان کی تیاری کا فارمولا تھا کہ رٹا فیکیشن اس دی بسٹ پر یریپرشن آف دی اگزا مینیشن۔ جبکہ دوسرا گروپ اس کے بالکل برعکس سمجھ کر پڑھنے اور پوانٹ نوٹ کرنے کو امتحان کی تیاری کے لیے کافی جانتا تھا۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 01 جولائی 2017

ہندوستان میں حالیہ ہونے والے یکے بعد دیگرے کئی مشترکہ بلادکار،  انتہائی شرمناک  ہو نے کے ساتھ ساتھ ہندوستان جیسی جمہوریت کے منہ پر طمانچہ بھی ہے۔ لیکن غور سے دیکھنے پر معلوم ہوتا ہے کہ ہندوستانی معاشرے کی جو تصویر ہندوستانی فلمیں پیش کر رہی ہیں، وہ اس بدفعلی اور جرم کی واردات سے مختلف نہیں۔ آئیے پہلے ہندوستانی فلمیں اور ان میں پیش کی جانے والی معاشرتی تصویر کا تجزیہ کرتے ہیں۔

مزید پڑھیں

Praise and prayers for the great people of Turkey

One year ago, this day, the people of Turkey set an example by defending their elected government and President Recep Tayyip Erdogan against military rebels.

Read more

loading...