معزز صارفین ہماری ویب سائٹ اپ ڈیٹ ہو رہی ہے۔ اگر آپ کو ویب سائٹ دیکھنے میں دشواری پیش آرہی ہے تو ہمیں اپنی رائے سے آگاہ کریں شکریہ

مباحث (71)

  وقت اشاعت: 06 اپریل 2018

وقت اور سیاست کے دامن میں حیرانیوں کی کبھی کمی نہیں رہی۔ عالمی سطح پر آج کل انہی حیرانیوں کا دور چل رہا ہے۔ امریکی صدارتی الیکشن ہوا تو پہلی بار روس کے کردار کی بازگشت سنائی دی۔ یہ بازگشت الیکشن کے بعد باقاعدہ تحقیقات میں بدل گئی۔ پہلی بار ایک امریکی صدر کی زبان سے روس کے بارے میں خیر سگالی کے جذبات سنے۔ پھر یوں ہوا کہ امریکہ نے برطانیہ کی یک جہتی میں درجنوں روسی سفارت کاروں کو ملک بدر کرنے کا فیصلہ کر لیا۔ نہ صرف امریکہ بلکہ یورپ کے اس کے اتحادی ممالک نے بھی یہی طرز اختیار کیا۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 30 مارچ 2018

چند ہفتے قبل تک ہمارا خیال تھا کہ اکونومی ایک پیچیدہ موضوع ہے، اس لئے اس کے خال خال جاننے والے ہی اس پر لکھتے اور بولتے ہیں لیکن ہماری یہ غلط فہمی اب دور ہو چکی ہے۔ ہمیں نہیں معلوم کیوں اور کیسے لیکن کوئی ہوا ایسی چلی ہے کہ دیکھتے ہی دیکھتے ہر پہلا شخص ماہرِ معیشت بن گیا ہے۔ اسکول کے زمانے کی پڑھی نظم یاد آئی کہ پل کی پل میں کیا ماجرا ہو گیا، کہ جنگل کا جنگل کا ہرا ہو گیا۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 23 مارچ 2018

امریکہ کے شہر اٹلانٹا کے بارے میں گزشتہ کالم پر وہاں کے ایک پرانے رہائشی نوجوان نے شکوہ کیا کہ آپ نے اٹلانٹا شہر کے زندگی سے بھرپور پہلوؤں کو نظر انداز کرکے ایک ہی پہلو پر زورِ قلم صرف کر دیا۔ آج ان ہی چند دلچسپ پہلوؤں کا ذکر ہے جن کا ہمیں اپنے قیام کے دوران براہِ راست مشاہدہ ہوا۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 16 مارچ 2018

ہوئی تاخیر تو کچھ باعثِ تاخیر بھی تھا، کے مصداق گزشتہ دو ہفتے کالم کی غیر حاضری ایک اہم ذاتی مصروفیت کے باعث ہوئی۔ ایک خوشگوار خانگی فریضہ تھا، اللہ کا احسان کہ خوش اسلوبی سے انجام پایا۔ امریکہ پہلے بھی کئی بار جا چکے لیکن مشرقی اور مغربی ساحلی شہروں میں، نیو یارک، واشنگٹن ڈی سی ، لاس اینجلز، سان فرانسسکو وغیرہ ۔ اب کی بار اسی فریضے کے لئے جنوبی علاقے کی ایک اہم ریاست جارجیا کا قصد تھا۔ اس ریاست کے صدر مقام اور سب سے بڑے شہر اٹلانٹا کا۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 23 فروری 2018

ابھی کل ہی کی بات ہے کہ ملک میں ایک ہی ٹی وی چینل ہوتا تھا۔ خبروں، حالات حاضرہ، ڈرامے اور دیگر پروگراموں کا واحد ذریعہ۔ سرکاری کنٹرول میں رہتے ہوئے اس کے حالات حاضرہ کے پروگراموں اور خبروں کی پیش کاری کے بارے میں یہ تاثر اور ناقدین کا گلہ عام رہا کہ سرکار دربار کا ہی ذکر اور فکر چھایا رہتا ہے۔ البتہ ڈراموں و دیگر پروگراموں کا معاملہ بالکل مختلف رہا ، ایک سے ایک کلاسیک ڈرامے، ایک سے ایک یادگار میوزک پروگرام اور عالمی معیار کے دستاویزی پروگرام اسی زمانے میں تخلیق ہوئے۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 16 فروری 2018

با خبر تو پہلے سے جانتے تھے لیکن ہم ایسے بے خبروں کو بھی حکومت کی پر اسرار پھرتیوں اور پے در پے اقدامات سے کچھ کچھ انداز ہ ہو رہا تھا کہ پس پردہ کچھ ہلچل سی ہے۔ اب بات کھلی تو تفصیلات بھی سامنے آگئیں کہ پاکستان کو عالمی سطح پر منی لانڈرنگ اور دہشت گردی کی فنانسنگ پر نظر رکھنے کے لئے قائم ادارے FATF کی طرف سے دوبارہ واچ لسٹ میں شام کئے جانے کے امکان کا سامنا ہے۔ سو حکومت نے چند ہفتے قبل قومی سلامتی کونسل کے ایک اعلیٰ سطحی میں کئی اقدامات کی منظوری دی جن کی روشنی میں اقوامِ متحدہ کی جانب سے کالعدم قرار دی جانے تنطیموں پر پاکستان نے بھی بالآخر پابندی لگا دی۔ نہ صرف یہ بلکہ ان تنظیموں کے دفاتر، اداروں اور دیگر سہو لیات کا کنٹرول بھی صوبائی حکومت نے سنبھال لیا ہے۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 09 فروری 2018

غالب کے ہم طرفدار بھی ہیں اور قدر دان بھی۔ گزرتے وقت کے ساتھ غالب کی بڑھتی ہوئی پسندیدگی اس امر کی غماض ہے کہ غالب کی شعر گوئی اور خیال آرائی میں کوئی تو ایسی بات ہے کہ وقت کی گرد نے بھی اسے لوگوں کے حافظے سے دھندلایا نہیں۔ اکثر اشعار ایسے حسبِ حال کہ یوں لگتا ہے کہ آج ہی کہے گئے ہیں لیکن کبھی کبھی لگتا ہے کہ کچھ اشعار زمانے سے یگانگت سے دور ہو گئے ہیں۔ مثلاٌ ہمارا ایک پسندیدہ شعر کچھ یوں ہے:
ہوئے مر کے ہم جو رسوا ہوئے کیوں نہ غرقِ دریا
نہ کہیں جنازہ اٹھتا نہ کہیں مزار ہوتا

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 02 فروری 2018

زندگی کے معمولات میں سے اپنی اپنی پسند ڈھونڈنا اور اس سے حظ اٹھانے کا ملکہ بھی ایک طرح کی خوش نصیبی ہے۔ یوں تو محبوب کا ہرجائی ہو جانا کسی بھی چاہنے والے کے لئے قیامت سے کم نہیں لیکن پروین شاکر نے اس میں بھی ایک خوبی ڈھونڈ نکالی:
وہ کہیں بھی گیا لوٹا تو میرے پاس آیا
بس یہی بات اچھی ہے میرے ہرجائی کی

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 26 جنوری 2018

ڈرامے کی حد تک بات ہوتی تو مضائقہ نہ تھا لیکن یہ بات تو ہر دوسرے گھر کی کہانی بن کر ذہن سے چپک گئی ہے۔ اسّی اور نوے کی دِہائی میں بھی پی ٹی وی اپنے ڈرامے کی روایت میں عروج کی طرف گامزن رہا۔ ایک سے ایک عمدہ اور حقیقت پسند ڈرامے۔ لکھاری بھی ایک سے ایک اعلیٰ، لکھنے والوں کی ایک کہکشاں تھی، فاطمہ ثریا بجیا، حمید کاشمیری، حسینہ معین، قدسیہ بانو، اشفاق احمد اور ایسے ہی کئی نامور نام۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 19 جنوری 2018

گرمیِ بازارِ سیاست ہی کچھ اس قدر ہے کہ سیاست دانوں کی باتیں ہی ہر جگہ زیرِ بحث ہیں۔ عوامی تحریک کے سربراہ نے 17 جنوری کو ایک فیصلہ کن راؤنڈ کا اعلان کیا تو بات سے باتیں نکلتی گئیں۔ ایک دوسرے کو برا بھلا کہنے والے اور ایک دوسرے کو دیکھنے کے روادار نہ ہونے والے دیکھتے ہی دیکھتے ایک نکتے پر جمع ہو گئے۔ لاہور کے جلسے کی ہوا کچھ ایسی باندھی گئی یا بندھ گئی کہ جیسے اس جلسے کے ساتھ ہی حکومت لرز جائے گی لیکن جلسے کے شرکاء کی تعداد اور اسٹیج پر ٓصف علی زرداری اور عمران خان کے علیحدہ علیحدہ آنے نے اس ہوا کا زور کچھ کمزور کر دیا۔ اب آنے والے دن بتائیں گے کہ یہ تحریک کیا رخ اختیار کرے گی اور سیاست کا اونٹ کس کروٹ بیٹھے گا۔

مزید پڑھیں

Donald Trump's policy towards Pakistan

Donald Trump's; the president of US war of tweets was a fierce attack on Pakistan, accusing the country of "lies and deceit" and making "fools" of US leaders. Trump decla

Read more

loading...