معزز صارفین ہماری ویب سائٹ اپ ڈیٹ ہو رہی ہے۔ اگر آپ کو ویب سائٹ دیکھنے میں دشواری پیش آرہی ہے تو ہمیں اپنی رائے سے آگاہ کریں شکریہ

مباحث (44)

  وقت اشاعت: 02 اپریل 2018

برطانیہ میں بہار اور بنگال کے ہزاروں لوگ برسوں سے رہائش پزیر ہیں۔ جس کی ایک وجہ ہندوستان کا بٹوارہ تھا، جب لاکھوں بہاری اور بنگالی ہندوستان کو چھوڑکر بنگلہ دیش اور پاکستان جانے کے بعد برطانیہ آکر بس گئے۔ ان میں کچھ پروفیشنل ہیں تو بہتوں نے مختلف کارخانوں میں کام کر کے اپنی روزی روٹی کا بندوبست کیا۔ تاہم ان بنگالیوں اور بہاریوں کے دلوں میں اب بھی اپنی اپنی جائے پیدائش کی یاد اور محبت زندہ ہیں۔ لیکن وہیں کافی لوگ مجھ سے اب بھی ایسے سوالات پوچھتے ہیں جس کا میں جواب اس فخریہ انداز میں دیتا ہوں کہ انہیں بنگال اور بہار واپس جا کر اپنی جائے پیدائش کو دیکھنے اور جاننے کی تمنا جاگ اٹھتی ہے۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 27 مارچ 2018

دو ہفتے قبل میں نے روس کے جاسوس کے حوالے سے ایک کالم لکھا تھا، جس میں برطانیہ اور روس کے درمیان جاسوسی کے تنازعہ پر روشنی ڈالی گئی تھی۔ اسی کالم میں میں نے ایک پیراگراف یہ بھی لکھا تھا کہ حال ہی میں میرا تجربہ فیس بُک کے چند ان لوگوں کے تئیں مشکوک تھا جو چوری چھپے میری پوسٹ پر نظر رکھتے تھے ۔ میرے کئی مدّاحوں نے مجھے اس بات پر بتایا کہ میری بات میں بہت حد تک صداقت  ہے۔ کیونکہ میں نے اپنی بات دلیل کے ساتھ پیش کی تھی۔ تاہم میری پوسٹ اور کالم کو پڑھ کر کئی لوگ چوکنّا بھی ہو گئے۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 20 مارچ 2018

موت ایک ایسی تلخ حقیقت ہے جس سے ہم اور آپ انکار نہیں کر سکتے۔ روزِ اوّل سے انسان چاہے وہ پیغمبر ہو، جادو گر ہو، غیب کی علم جاننے والا ہو، ڈکٹیٹر ہو، بادشاہ ہو، سیاستداں ہو، سائنسداں ہو، مذہبی ہو ، بے دین ہو ،دولت مند ہو یا غریب ہو موت کا مزہ سبھوں نے چکھا ہے۔ ہمارا یقین اور ایمان بھی یہی ہے کہ ’ہر نفس کو موت کا مزہ چکھنا ہے‘۔ دنیا میں جو بھی آتا ہے اسے ایک دن جانا ہی پڑتا ہے۔ یہاں کوئی بھی مستقل طور پر نہ تو رہا ہے اور نہ ہی رہے گا۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 13 مارچ 2018

ابن صفی کے نام سے زیادہ تر لوگ واقف ہیں اور ان کے جاسوسی ناولوں کو دنیا بھر میں پسند کیا جاتا ہے۔ آج بھی ان کی ناولوں کو لوگ کافی دلچسپی سے پڑھتے ہیں۔ جاسوس ایک ایسا پیشہ ہے جو دنیا کے تمام ممالک میں اپنی حفاظت یا دوسرے کے بارے میں جاننے کے لئے استعمال کیا جاتا ہے۔ جاسوسی ہی کے ذریعہ تمام ممالک اپنے اور بیرون ممالک کے حالات پر نظر رکھتے ہیں۔ اس کے علاوہ ان ممالک میں جاسوس کے ذریعہ ایسے معلومات حاصل کئے جاتے ہیں جو ان کے سیکورٹی اور لوگوں کی جان و مال کی حفاظت میں اہم رول ادا کرتا ہے۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 06 مارچ 2018

کسی بھی چیز کی زیادتی سے انسان یا تو گھبرا جاتا ہے یا پھر پریشان ہوجاتا ہے۔ چاہے وہ مادّی ہو یا قدرتی۔ گویا زیادتی کسی چیز کا ہونا پریشانی کا باعث بن ہی جاتا ہے۔ جس کا نتیجہ یہ ہوتا ہے کہ بے طرح انسانی جانیں ضائع ہو جاتی ہیں۔ انسان گھبرا کر اپنے رب کو یاد کرنے لگتا ہے۔ دنیا جب سے قائم ہوئی ہے قدرتی آفتوں کا سلسلہ کبھی بھی تھما نہیں ہے۔ چاہے وہ سمندر ہو، زمین ہو یا ریگستان جب بھی طوفان آیا یا برفباری ہوئی یا برسات ہوئی انسان کچھ پل کے لئے سہم سا جاتا ہے۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 27 فروری 2018

اساتذہ کو بھی بندوق رکھنا ہوگا۔ بھائی یہ میں نہیں کہہ رہا بلکہ یہ بیان دنیا کے سب سے طاقتور ملک امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے دیا ہے۔ ویسے بھی ٹرمپ صاحب اس سے پہلے بھی ایسے اوٹ پٹانگ بیان دے چکے ہیں۔ مثلاً میکسیکو کی سرحد پر دیوار کھڑی کرنے کی بات یا مسلمانوں کو امریکہ آنے پر پابندی یا یروشلم کو اسرائیل کی راجدھانی ماننا۔ اس طرح کے بیان دینے کی ایک وجہ شاید ڈونلڈ ٹرمپ کا دماغ کام نہیں کرتا ہے یا وہ بولنے سے قبل سوچتے نہیں ہیں کہ انہیں کیا بولنا چاہئے اور کیا نہیں بولنا چاہئے۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 20 فروری 2018

پہلی فروری کو کلکتہ پہنچتے ہی ائیر پورٹ پر کئی لوگوں نے میرا والہانہ استقبال کیا۔ کچھ لوگوں سے پہلی بار ملاقات ہوئی تو کچھ شکلیں جانی پہچانی بھی تھیں۔  جس جوش و جذبہ سے میرا استقبال کیا گیا، تھوڑی دیر کے لئے ایسا محسوس ہوا کہ یہ لوگ برسوں سے میرا انتظار کر رہے ہیں۔ گلے لگانے اور ہاتھ ملانے کے بعد اپنے دوست پپّو کی پیلی ٹیکسی میں سوار ہو کر کلکتہ کی مصروف سڑکوں کے بیچ ہم اپنی منزل کی طرف رواں دواں تھے۔ ایسا محسوس ہورہا تھا کہ پپّو کی پیلی ٹیکسی بھی ہمارے آنے کی خوشی میں اپنی سست رفتاری کو بھول کر سڑک کے قوانین کی دھجّیاں اڑانے پر آمادہ ہے۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 30 جنوری 2018

ہالی ڈے یا چھٹّیا ں منانے کا شوق دنیا کے زیادہ تر ممالک کے لوگوں میں پایا جاتا ہے۔ تاہم امیر ترین ممالک میں چھٹّیاں منانا لازمی ہی نہیں ہوتا ہے بلکہ زندگی کی بھاگ دوڑ سے سکون حاصل کرنے کا ایک ذریعہ بھی مانا جاتا ہے۔ یورپ اور امریکہ کے لوگ سال میں ایک یا دو بار چھٹّیوں پر جانا ضروری سمجھتے ہیں۔ جس کی ایک خاص وجہ یہاں کے لوگوں کا ایمانداری سے لمبے وقت تک کام کرنا اور معاشی طور پر فعال ہونا ہے۔ اس کے علاوہ ان ممالک میں موسم کافی سرد ہوتا ہے جس سے لوگ گرم آب و ہوا والی جگہ جانا پسند کرتے ہیں۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 21 جنوری 2018

’یو ایس اے شٹ ڈاؤن ‘ مطلب بند کرو! بھائی یہ میں نہیں کہہ رہا بلکہ ہفتہ 20جنوری کو دنیا کے تمام ٹی وی چینل ، سوشل میڈیا اور اخباروں میں یہی سرخیاں تھیں ’یو ایس اے شرٹ ڈاؤن‘۔ اس سرخی سے ہر عام و خاص میں ایک بے چینی سی پھیل گئی اور وہ اس بات کو جاننے کے لئے بیقرار ہوگئے کہ آخر یو ایس اے شٹ ڈاؤن کا کیا مطلب ہے۔  میں بھی اوروں کی طرح اس خبر کی جانچ پڑتا ل کرنے لگا اور مختلف چینلوں کو دیکھنے بعد اس نتیجے پر پہنچا کہ یہ حضرت باز نہیں آئیں گے۔ یعنی کہ ’حضرتِ بدنام زمانہ جناب ڈونلڈ ٹرمپ، جن کی پالیسی کے خلاف ڈیموکریٹ نے سینٹ میں بجٹ کی حمایت میں ووٹ دینے سے انکار کر دیا ہے۔ پھر کیا تھا ’یو ایس اے شٹ ڈاؤن‘ ہوگیا۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 16 جنوری 2018

آج کل اگر آپ سوشل میڈیا سے نہ جڑے ہوں تو آپ کو قدیم زمانے کا انسان یا ایک بیوقوف آدمی سمجھا جاتا ہے۔ دراصل سوشل میڈیا اور انٹر نیٹ نے پوری دنیا میں اپنا جال ایسا بچھایا ہے کہ انسان نہ نہ کر کے بھی اس سے جڑنا ضروری سمجھنے لگا ہے۔ سوشل میڈیا ہے ہی ایسی بلا کہ اس کے بنا اب انسان دنیا سے اپنے آپ کو الگ تھلگ محسوس کرنے لگتا ہے۔ کیا بچّے ، کیا جوان اور کیا بوڑھے سبھی واٹس اپ، ٹویٹر، میسنجر اور فیس بُک پر دن بھر یا تو پیغام بھیجتے رہتے ہیں یا دوسروں کے پیغامات سے معلومات حاصل کرتے رہتے ہیں۔

مزید پڑھیں

Donald Trump's policy towards Pakistan

Donald Trump's; the president of US war of tweets was a fierce attack on Pakistan, accusing the country of "lies and deceit" and making "fools" of US leaders. Trump decla

Read more

loading...