مباحث (32)

  وقت اشاعت: 16 2017

سولہ دسمبر ہماری تاریخ کے منحوس ترین دنوں میں سے ہے۔ ہمارے سے پچھلی نسل نے اس تاریخ کو قائد اعظم کا پاکستان دو لخت ہوتے دیکھا تھا۔ سنا ہے کہ ایک طویل عرصے تک وہ غمزدہ رہے تھے۔ سولہ دسمبر کے بعد انہیں نارمل ہونے میں بہت وقت لگا تھا۔ ہماری نسل نے اس تاریخ کو آرمی پبلک سکول کا قتل عام دیکھا۔ ہم بھی کئی دن شدید غم کی لپیٹ میں رہے۔ کئی دن ٹھیک سے کھا پی اور سوچ تک نہ سکے۔ یہ تصور کرنا ہی محال تھا کہ کیسے کوئی انسان ننھے بچوں کے پاس جا جا کر ان کے سروں میں گولیاں مارتا رہا ہوگا۔ بچوں کی لاشوں کو دیکھنا پڑا۔ ان لاشوں کو اٹھانے والوں سے جب ان کی حالت کے بارے میں سنا تو دل تھم تھم گیا۔ تین برس ہو گئے ہیں مگر آج بھی شدید صدمہ ہے۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 03 ستمبر 2017

روایت ہے کہ ایک جنگل میں کچی پکی جمہوریت آ گئی۔ ووٹروں کی اکثریت نے فیصلہ کیا کہ اگلے پانچ برس جنگل کا بادشاہ ایک بندر ہوگا۔ بندر بادشاہ نے ابھی تخت سنبھالا ہی تھا کہ ایک ہرنی فریاد کرتی ہوئی آ گئی۔ کہنے لگی کہ ”بادشاہ سلامت! آپ کے راج میں شیر میرے میاں کو اٹھا کر لے گیا ہے، بادشاہ سلامت اس کی جان بچائیں“۔ بندر یہ سنتے ہی شدید غضبناک ہو کر خوخیاتے ہوئے ایک ڈال سے دوسری پر چھلانگیں مارنے لگا۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 11 جولائی 2017

جے آئی ٹی نے نوٹ کیا کہ عدالت کو مس مریم صفدر نے کمپنیوں نیسکول اینڈ نیلسن لمیٹڈ اور کومبر انکارپوریٹڈ کی جو ٹرسٹ ڈیکلریشن فراہم کیں ان فوٹوکاپیوں پر بظاہر یہ دکھائی دے رہا تھا کہ تاریخوں میں رد و بدل کیا گیا ہے (لفظ کٹنگ استعمال کیا گیا ہے)۔ جے آئی ٹی نے لندن کی ”دا ریڈلے فارینسک ڈاکیومنٹ لیبارٹری“ سے رابطہ کیا جو کہ تحریر اور دستاویزات کی چھان بین کے ماہر ہیں۔ مریم صفدر کی فراہم کی گئی اوریجنل دستاویزات بھی ریڈلے کو بھیجی گئیں۔ رابرٹ ریڈلے کی دستخط شدہ رپورٹ موصول ہوئی جس کا خلاصہ کچھ یوں بیان کیا گیا ہے:

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 01 جولائی 2017

یہود و نصاری کی جانب سے یہ ظاہر کرنے کی کوشش کی جاتی ہے کہ ایک پاکستانی خواہ ان پڑھ ہو یا پی ایچ ڈی، عمومی معاشرتی رویے میں وہ جہالت کا مظاہرہ کرنے سے نہیں چوکتا ہے۔ صیہونی میڈیا کے زیر اثر ٹی وی پر دکھایا جا رہا ہے کہ سڑک پر مہنگی ترین گاڑی بھی اسی بدنظمی سے چلتی ہے جس طرح پیدل شخص اور اپنے تین سیکنڈ بچانے کی دھن میں دوسرے کا راستہ ایسے روکتے ہیں کہ تین گھنٹے کے لئے ٹریفک جام کر ڈالتے ہیں۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 29 جون 2017

یہود و ہنود یہ خبریں پھیلاتے ہیں کہ مملکت خداداد میں معمولی کلرک سے لے کر انتہائی اوپر تک رشوت لی جاتی ہے۔ تھانے بکتے ہیں۔ پولیس والے پیسے کھاتے ہیں۔ رشوت لے کر ناجائز ترین کام بھی کر دیے جاتے ہیں۔ ہم آپ کو یقین دلاتے ہیں کہ ایسا کچھ نہیں ہوتا ہے اور یہ سب جھوٹے الزامات ہیں۔ یہ سرکاری اہلکار تو اتنی محبت اور خوشدلی سے عوام کے کام کرتے ہیں کہ وہ اپنا احساس تشکر دکھانے کی خاطر ان اہلکاروں کو کچھ رقم زبردستی تھما دیتے ہیں۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 06 فروری 2017

تعلیم ایک ہتھیار ہے، ایک طاقت ہے ، ایک حوصلہ ہے جوظالم کے ظلم کے خلاف لڑنے کے لئے مظلوم کو عطا ہوا ہے ۔ جب جہالت اور گمراہی کے اندھیرے حد سے بڑھ گئے تو تب اللہ رب العزت نے اس جہالت اور بربریت کا توڑ کرنے کے لئے عرش بریں سے پیغام اتارا کہ ’اقراء ‘ یعنی ’پڑھ ‘ اپنے رب کے نام سے جس سے بڑی اور کوئی طاقت نہیں۔ پھر نبی آخرالزمان کی شفاعت سے لے کر ابن ہیثم کی تحقیقات تک، بوعلی سینا کی ایجادات سے لے کر ابوحنیفہ کے تفکرات تک، سب اس بات کا بین ثبوت ہے کہ اللہ نے مسلمانوں کو جو پہلا پیغام دیا تھا وہ پیغام ہر دور میں مسلمانوں کی اولین ترجیح رہی ۔ اس کی بدولت ہی مسلمانوں نے نہ صرف دنیا کو جہالت کے اندھیروں سے نکالا بلکہ خود بھی ہر دور میں سرخرو ہوئے۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 03 2016

اکتوبر 1999کی ایک چمکتی صبح گاؤں سے شہر جانے کے لئے تانگہ پر بیٹھ کر عازم سفر ہوا۔ راستے میں ساتھ بیٹھے شخص نے بڑی خوشی سے بتایا کہ رات کو جنرل پرویز مشرف نے حکومت پر قبضہ کر لیا اور نواز شریف کو گرفتار کر لیا ہے۔ اس وقت باقی لوگوں کی طرح میں بھی خوش ہوا۔ ہمارے گھرمیں اس وقت ٹیلی ویژن نہیں تھا۔ میری تمام معلومات کا انحصار اخبارات  یا لوگوں سے سنی سنائی باتیں تھیں۔ میں نے ذوالفقار علی بھٹو کا دور نہیں دیکھا اور بے نظیر ونوازشریف کا دور یاد نہی۔ اس لئے ان ادوار کی خوبیوں اور خامیوں سے صرف نظر کروں گا۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 26 2016

وطن صرف میدانوں، پہاڑوں، دریاؤں اور صحراؤں کا مجموعہ ہی نہیں ہوتا بلکہ یہ انسانوں کے اس مسکن کا نام ہے جہاں آزادی کی ہوائیں چلتی ہیں، جہاں عدل و انصاف کے چشمے ابلتے ہیں اور جہاں انسانیت ظالموں اور مظلوموں کے گروہوں میں تقسیم نہیں ہوتی۔ ہمارا پیارا وطن پاکستان قدرت کی ہر ایک نعمت سے مالامال ہے۔ کسی بھی ملک میں اتنی وافر معدنیات نہیں جتنی ہمارے ملک میں ہیں۔ ہمارے پاس بہترین دریا، اونچے پہاڑ، سرسبز میدان اور خوبصورت صحرا ہیں۔ لیکن ان سب کے باوجود ہمارے ملک میں انسانیت ظالم اور مظلوم دو طبقوں میں تقسیم ہے۔ عدل و انصاف کے ادارے تو موجود ہیں لیکن وہاں عدل وانصاف کے معیار مختلف ہیں۔ ظالم کو مظلوم کا حق دے دیا جاتا ہے اورمظلوم کو اس کے حق سے محروم کر دیا جاتا ہے۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 11 ستمبر 2016

ہندوستانی بہت مفاد پرست ہیں۔ رشوت انڈیا کے کلچر کا حصہ ہے۔ بھارتیوں کو کرپشن میں کوئی خاص برائی دکھائی نہیں دیتی ہے۔ یہ ہر جگہ نظر آتی ہے۔ ہندوستانی کرپٹ افراد کو ٹھیک کرنے کی بجائے ان کو برداشت کرتے ہیں۔ کوئی قوم بھی فطری طور پر کرپٹ نہیں ہوتی ہے۔ لیکن کیا ایک قوم اپنے کلچر کی وجہ سے کرپٹ ہو سکتی ہے؟ یہ جاننے کے لیے کہ ہندوستانی اتنے کرپٹ کیوں ہیں، ان کے رسوم و رواج پر ایک نظر ڈالتے ہیں۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 15 مئی 2016

ستر کی دہائی میں ایک گورے لیڈر کا بیان بہت مشہور ہوا تھا کہ ’میں چور نہیں ہوں‘۔ بعد میں چوری پکڑے جانے پر اسے استعفی دینے پر مجبور ہونا پڑا تھا۔ کتنی بھد اڑی تھی اس کی۔ آج تک اس کی قوم کو یہ طعنے دیے جاتے ہیں کہ تمہارا لیڈر کہتا تھا کہ میں چور نہیں ہوں، اور بعد میں وہ پکڑا گیا۔ آپ خود ہی انصاف سے بتائیں کہ جو پکڑا جائے، وہ لیڈر کاہے کا ہوا؟

مزید پڑھیں

Donald Trump's policy towards Pakistan

Donald Trump's; the president of US war of tweets was a fierce attack on Pakistan, accusing the country of "lies and deceit" and making "fools" of US leaders. Trump decla

Read more

loading...