معزز صارفین ہماری ویب سائٹ اپ ڈیٹ ہو رہی ہے۔ اگر آپ کو ویب سائٹ دیکھنے میں دشواری پیش آرہی ہے تو ہمیں اپنی رائے سے آگاہ کریں شکریہ

مباحث (25)

  وقت اشاعت: 31 مارچ 2018

بسنت کے تہوار پر تو پابندی لگ گئی اور افسوس کے ساتھ لکھنا پڑ رہا ہے کہ یہ پابندی جمہوری دور میں لگی۔ بسنت کا تہوار صدیوں سے زندہ دلان لاہور مناتے آرہے ہیں لیکن خونی ڈور کی وجہ سے بسنت کے تہوار کو پابندی کا سامنا کرنا پڑا۔ ہونا تو یہ چاہیے تھا کہ خونی ڈور کی تیاری پر پابندی لگتی اور ایسی ڈور تیار کرنے والوں کو پابند سلاسل کیا جاتا، لیکن وطن عزیز میں الٹی گنگا بہنے کا رواج زور پکڑ گیا ہے اس لیے بسنت کا تہوار پابندی کی زد میں آگیا۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 20 مارچ 2018

شاید اس نام کے اور بھی ہوں گے لیکن جہاں تک میری معلومات کا تعلق ہے، ایسا ایک ہی ہے جس کے نام کا آغاز اور انجام رضی پر ہوتا ہے ۔ جی ہاں ، آپ سہی سمجھے میں ذکر کررہا ہوں رضی الدین رضی کا ۔ میرا رضی سے تعلق نہ تو قدیم ہے اور نہ میں رضی کی قربت یا قرابت دارہونے کا دعویدار ہوں ۔ شاید رضی کے جاننے والوں میں سے میں ہی ہوں جو رضی کو بہت کم جانتا ہے  لیکن رضی کی شخصیت کے اتنے پہلو اور پرتیں ہیں کہ ایک معمولی سا تعلق دار بھی اُ س پر لکھنے کی جسارت کررہا ہے۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 20 فروری 2018

مشہور و مقبول مقولہ ہے۔ ’’ہر کامیاب مرد کے پیچھے ایک عورت کا ہاتھ ہوتا ہے۔“ اس مقولے کو کبھی دل نے تسلیم نہیں کیا کیونکہ اس مقولے سے یہ تاثر پیدا ہوتا ہے، گویا کہ ہر ناکام مرد کے پیچھے ایک یا ایک سے زائدعورتوں کا ہاتھ ہوتا ہے۔ یہ خواتین کے ساتھ زیادتی ہے کیونکہ ہر ناکام مرد کے پیچھے اس کی ناقص حکمت عملی اور کرتوت ہوتے ہیں نہ کہ ایک یا اس سے زائد عورتیں۔ اسی لیے اس مقولے سے تعصب اور صنفی امتیاز کی بو آتی ہے۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 26 جولائی 2017

پڑوسی ہوتے ہوئے بھی حالیہ دوریوں کو کم کرنے کے لیے کابل اور اسلام آباد ثالث  تلاش کرتے رہے لیکن اب دونوں کو یہ سمجھنا ہوگا کہ راستہ براہ راست بات چیت ہی سے نکل سکتا ہے۔ خیبر ایجنسی کی دور افتادہ اور دشوار گزار وادی راجگال میں دہشت گردوں کے خلاف پاکستانی فوج نے ‘خیبر فور’ کے نام سے ایک بڑی کارروائی شروع کر رکھی ہے۔ لگ بھگ 250 مربع کلو میٹر پر پھیلی وادی راجگال کا شمار اُن علاقوں میں ہوتا ہے جہاں اب بھی دہشت گردوں کی پناہ گاہیں ہیں، جن کے خاتمے کے لیے فوج کے ‘اسپیشل سروسز گروپ’ کے اہلکار مختلف اطراف سے پیش قدمی کررہے  ہیں۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 10 جولائی 2017

پاکستان اور افغانستان طویل عرصے سے ایک دوسرے کے ہاں دہشت گردوں کی محفوظ پناہ گاہوں کی موجودگی کا الزام لگاتے رہے ہیں اور یہی معاملہ دو پڑوسی ممالک کے درمیان بداعتمادی و دوریوں کا سبب بھی بنا۔ باوجود اس کے کہ پاکستان نے دہشت گردوں کی پناہ گاہوں کے خاتمے میں نمایاں کامیابی حاصل کی ہے اور ظاہری طور پر موجود عسکریت پسندوں کے ڈھانچے کو توڑا دیا گیا، لیکن اب بھی پڑوسی ملک اور امریکہ خوش نہیں ہیں۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 26 جون 2017

بیس جون 2017 ! یہ دنیا بھر میں مہاجروں اور پناہ گزینوں کا عالمی دن تھا، گزرگیا۔ یعنی عالمی یومِ مہاجرت۔ اِس دن جنگوں سے، سیاسی دباؤ سے، مذہبی عصبیت اورنسلی تعصبات سے، اقتصادی بحرانوں سے، امتیازی سلوک سے، ماردھاڑسے، پکڑدھکڑ سے، بھوک اور پیاس سے، تشدد اور قتل عام سے مختصراً تمام تر ظلم اور ظالموں سے رہائی حاصل کرنے کے لیے اپنے گھر بار، اپنے رشتہ دار، اپنے دوست یار، اپنے شہر اور بلکہ اپنے وطن سے دُور ہونے پر مجبور ہونے والے کروڑوں معصوموں کی روزمرہ کی تکالیف اور مشکلات سے آگاہی فراہم کرنے اور اجتماعی شعور پیدا کرنے کے لیے منایا جانے والا ایک دن ہے۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 17 جون 2017

اتحاد و ہم آہنگی کی بات آئے تو مجھے فطرت کی  مثال بار بار پیش کرنے میں بڑی خوشی ہوتی ہے کیونکہ فطرت ہمیں ایسی بے نظیر اور سبق آموز مثالیں فراہم کر دیتی ہے کہ اگر ہم سبق حاصل کرنے والے ہوں تو واقعی ہماری زندگیاں بہتری کی جانب قدم زن ہوں گی۔ مگر ہم نوعِ بشر ہیں فطرت کی بات پر کب توجہ دیتے ہیں اور بالخصوص ہم مسلمان جوکہ قرآن مجید کو پڑھنے کے باوجود فرمانِ الٰہی کو نہ سمجھنے کے لیے ہزار کوشش کرتے ہیں۔ کیا فطرت کی مثالوں سے سبق حاصل کرسکتے ہیں بھلا۔ شاید۔ یا شاید نہیں۔ معلوم نہیں۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 10 جون 2017

آج میں اپنی ادارت میں استنبول سے شائع ہونے والے اردو مجلہ ارتباط۔  کے پرانے شماروں کی ورق گردانی کررہا تھا کہ میری نظر شمارہ نمبر 2 سن 2009 میں میرے اپنے اداریہ پر پڑی۔ مَیں نے اُسے پھر سے پڑھا تو اچانک دِل میں ایک عجیب سی غم و اَلم کی لہر اُبھرنے لگی۔ مَیں نے اُس اداریہ کو بھی رمضان کے مبارک مہینے میں غم و اَلم کے عالم میں قلم بند کیا تھا۔ اور آج بھی رمضان کا مبارک ماہ ہے۔ اُس دن بھی نہ صرف عالمِ اسلام بلکہ تمام عالمِ نوع بشر آگ کے بگولے میں لپٹا ہوا تھا اور دنیا کہ مختلف ممالک میں بالخصوص مسلمان ممالک میں معصوموں کا خون رائیگاں بہہ رہا تھا، آج بھی وہی حالت بلکہ تمام تر شدّت کے ساتھ جاری ہے۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 08 جون 2017

قرہ فاطمہ ترک تاریخ کی اُن بہادر خواتین میں سے ہیں جن کی نڈر شخصیت، ملک و قوم سے محبت اور روز و شب جد و جہد نے ترک قوم اور ملک کو آزاد اور سرخرو کرنے میں اہم کردار ادا کیا۔ قرہ فاطمہ نے بلقان کی جنگوں، قفقاز کے محاذ، پہلی جنگ عظیم اور ترکی کی جنگ آزادی میں شرکت کی۔ اُنہوں نے جنگ آزادی کے دوران مختلف محاذوں پر نہ صرف بنفس نفیس شرکت کی بلکہ سپاہیوں پر مشتمل ایک فوجی دستے کی کمان بھی سنبھال لی۔ یونانیوں سے جنگ کرتے ہوئے وہ گرفتار بھی ہوئیں مگر جلد ہی فرار ہوکر اپنے دستے کے ساتھ بورسہ شہر پر ترکی فوج کی فتح اور یونانیوں کو شکست دینے میں پیش پیش  رہیں۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 28 مئی 2017

آج یعنی 23 مئی 2017 کو فیکلٹی کی جانب روانہ ہوا تو بس میں بیٹھے بوریت کی وجہ سے ریڈیو سننے لگا۔ اتفاق کی بات ہے کہ ایک انگریزی ریڈیو چینل سے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ اور اسرائیلی وزیر اعظم بین یامین نیتن یاہو کی پریس کانفرنس براہ راست نشر ہورہی تھی۔ دونوں قائد اپنے اپنے ملکوں کی امن پسندی اور دنیا میں پھیلنے والی دہشتگردی سے دونوں ملکوں کی یکجہتی اور اتحاد سے نمٹنے کی بڑی اچھی باتیں کررہے تھے اور دونوں دیرنہ محبوب ایک دوسرے کے حق میں اپنی اپنی جانب سے انتہائی پیار و محبت کا اعلان کررہے تھے۔

مزید پڑھیں

Donald Trump's policy towards Pakistan

Donald Trump's; the president of US war of tweets was a fierce attack on Pakistan, accusing the country of "lies and deceit" and making "fools" of US leaders. Trump decla

Read more

loading...