معزز صارفین ہماری ویب سائٹ اپ ڈیٹ ہو رہی ہے۔ اگر آپ کو ویب سائٹ دیکھنے میں دشواری پیش آرہی ہے تو ہمیں اپنی رائے سے آگاہ کریں شکریہ

مباحث (205)

  وقت اشاعت: 12 مارچ 2018

بزرگوں کا کہنا ہے جیسا بوؤ گے ویسا کاٹو گے۔ ہم نے تشدد کی فصل بوئی ہے تو امن کے پھول کیسے کھلیں گے۔ معاشرے میں عدم تشدد کی فضا جو پچھلی کئی دہائیوں سے طاری ہے اسی کے ثمرات ہیں جو ہم آج ان ذلت آمیز واقعات سے دوچار ہیں۔ کہتے ہیں سیاست ایک گندا کھیل ہے لیکن جمہوریت ایک بہترین طرز حکومت، عوام کے ووٹوں سے منتخب ہونے والے سیاست دان اسمبلیوں میں پہنچ کر بھول ہی جاتے ہیں کہ عوام کے لیے کام کرنا ہے۔ وہ اپنی مرضی کے فیصلے کرتے ہیں اپنا مفاد مقدم رکھتے ہیں۔ کسی کے ذاتی خزانے میں اضافہ ہوتا ہے، کسی کی آف شور کمپنیاں جنم لیتی ہیں، کوئی اپنے اثاثے بیرون ملک پہنچا دیتا ہے اور ان سب کاموں کے ہوتے عوام کی خدمت کا غلغلہ مچانا ایسا ہی ہے جیسے عوام کو جوتا مارنا۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 10 مارچ 2018

کیا ہم خواتین کا عالمی دن منانے کے اہل ہیں، قطعی نہیں ہم زبانی تو بہت شور شرابا کرتے ہیں، عورتوں کے حقوق کے بارے میں لیکن ہمارا طرز عمل اس کے برعکس ہے۔ کونسا میدان ہے جہاں عورت کو عزت دی ہ۔و اس کی حوصلہ افزائی کی ہو۔ جہاں بھی خواتین نے ترقی کی، آگے قدم بڑھایا اپنی ہمت کے بل بوتے پر ورنہ مردوں کے اس معاشرے میں عورت کو ہمیشہ نیچا دکھانے کی کوشش ہی کی گئی ہے۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 06 مارچ 2018

موت ایک ایسی اٹل حقیقت ہے جس سے کسی کو مفر نہیں۔ ہم اخلاق کے کس درجے پر ہیں کہ کسی کی موت پر بھی عجیب بحث کرنے لگتے ہیں۔ اس کی سزا جزا کا فیصلہ کرنے میں لمحوں کی دیر نہیں کرتے بلکہ روزِ جزا کا انتظار کیے بغیر جہنمی بھی قرار دے دیتے ہیں۔ پچھلے دنوں نامور خاتون وکیل عاصمہ جہانگیر کی موت سے لے کر نمازِ جنازہ پڑھنے تک ہر طرح کی آرا پڑھنے اور سننے کو ملیں۔ وہ کون تھیں، کیا تھیں انتقال کے بعد ان کا اور اللہ کا معاملہ ہے ، جن کے لیے انہوں نے فلاح کے کام کیے وہ تعریف کررہے تھے۔ لیکن کچھ ایسے بھی تھے جو مرنے والی کو کانٹوں میں گھسیٹ رہے تھے۔ وقت گزرا معاملہ ٹھنڈا ہوگیا۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 05 2017

ہم سب منفی پراپیگنڈے کے اتنے عادی ہوچکے ہیں کہ کسی بھی چیز کا منفی پہلو پہلے دیکھتے ہیں، چاہے یہ کسی شخص یا کسی جگہ کے بارے میں ہو۔ سندھ کے ضلع تھر کے بارے میں تو اتنی منفی باتیں پتہ چلیں کہ ہم اس طرف جانے کا سوچ بھی نہیں سکتے تھے ۔ سندھ کا دور افتادہ صحرا جہاں بھوک، قحط، پانی کی کمی، بیماری سے مرتے بچے ، جانوروں کی اموات۔ تھر کول پراجیکٹ 2 کے دورے نے ان منفی تاثرات کو زائل ہی نہیں کیا بلکہ ختم کردیا۔ جی ہاں پی ایف سی سی کی طرف سے ہم اینگرو کمپنی کے مہمان تھے جس میں تھر کول پاور پراجیکٹ 2 کا تفصیلی دورہ اور ننگر پارکر کی سیر شامل تھی۔

مزید پڑھیں

Donald Trump's policy towards Pakistan

Donald Trump's; the president of US war of tweets was a fierce attack on Pakistan, accusing the country of "lies and deceit" and making "fools" of US leaders. Trump decla

Read more

loading...