مباحث (103)

  وقت اشاعت: 31 2017

جنرل ضیاء الحق کے دور میں پراپرٹی بزنس کو فروغ ہوا۔ جب کسی ملک کی آبادی بڑھ جاتی ہے تو یقیناً اس کی رہائشی ضروریات میں بھی اضافہ ہوتا ہے۔ حکومت کا کام ہے کہ درمیانے طبقے اور سرکاری ملازمین کے لئے کم لاگت والے فلیٹ اور مکانات تعمیر کرکے قسطوں پر فروخت کرے۔ اس کام میں نجی شعبہ کے بینکوں کو بھی شریک کیا جاتا ہے۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 27 2017

یونی ورسٹی میں مطالعہ میں مصروف تھا کہ عظمت ملک نے معروف صحافی احمد نورانی پر حملہ کی اطلاع دی۔ معروف صحافی انصار عباسی نے بھی بذریعہ ٹوئیٹر تصدیق کی ۔ احمد نورانی مشہور و معروف صحافی رحمت علی رازی کے بھتیجے ہیں۔ بہاولپور سے تعلق رکھتے ہیں اور بین الاقوامی اسلامی یونیورسٹی سے فارغ التحصیل ہیں ۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 20 2017

قائدِ اعظم یونیورسٹی میری مادر علمی ہے۔ ایک وقت تھا کہ اعلیٰ بیوروکریسی، عسکری افسران اور سیاستدانوں کے بچے اس سرکاری یونیورسٹی میں علمی منازل طے کرتے۔ ڈاکٹر کنیز یوسف پاکستان کی پہلی خاتون وی سی نے ایک ماں کی طرح اس ادارے کی نگہداشت کی۔ طلبہ کے ہوسٹل میں کھانے کا معیار چیک کرتیں۔ اگر  پھول مرجھائے ہوئے ہوتے تو باغبانی کے شعبہ سے باز پرس کی جاتی۔ پاکستان کے مختلف کالجز میں سے روشن خیال اور ترقی پسند فکر کے استاتذہ کو قائل کرتیں کہ آپ کی جگہ کالج نہیں یونی ورسٹی ہے ۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 24 ستمبر 2017

یہ  کسی خاص سکول کی کہانی نہیں آج پاکستان میں ہر پرائیویٹ سکول کو عوام کی جیبوں پر ڈاکہ ڈالنے کی کھلی چھٹی ہے۔ زیر نظر تصویر نرسری کلاس کے بچے کے سکول داخلہ کا فیس چلان ہے جو کہ مبلغ ڈیڑھ لاکھ روپے ہے۔ داخلہ فیس کے علاؤہ جنریٹر چارجز، سیکورٹی چارجز، رجسڑیشن چارجز، ریسورس چارجز اور دیگر غیر ضروری چارجز اس چلان کا حصہ ہیں۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 06 ستمبر 2017

چند سالوں سے پاکستان میں دہشتگردی کے  واقعات میں پاکستانی یونیورسٹیوں کے طلباء اور اساتذہ کے ملوث ہونے کے انکشافات نے قوم کو حیرانی میں مبتلا کردیا ہے۔  وہ ایم کیو ایم کے خواجہ اظہار الحسن پر حملہ ہو یا  صفورا گوٹھ میں ہونے والا دہشتگردی کا واقعہ ہو یا مردان یونیورسٹی کے طالبِ علم مشعال کا بہیمانہ قتل ان واقعات میں یونیورسٹی طلبہ اور پروفیسرز کا ملوث ہونا ایک بہت بڑا لمحہ فکریہ ہے ۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 04 ستمبر 2017

محمد یوسف بھی دنیا سے رخصت ہوگئے۔ دو ہفتے قبل ملاقات ہوئی تو زندگی میں پہلی دفعہ متفکر پایا۔ یوسف پرامید اور رجائیت پسند انسان تھے۔ شوگر کی وجہ سے بینائی متاثر ہوئی، پھر ٹانگ سے محروم ہوئے، بیماریوں سے نبرد آزما رہے لیکن کبھی مایوس دکھائی نہ دیئے۔ لیکن اس روز کہنے لگے اب میرے لئے دعا کریں کہ میں دنیا سے پردہ کر جاؤں۔ گردوں کے مرض کا شکار ہونے کے بعد ان کی ہمت جواب دے گئی تھی۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 29 اگست 2017

ایک مدت بعد پیپلز پارٹی کا روائتی جوش و خروش والا جلسہ دیکھنے کو ملا۔ ایسے میں  معظم بھٹی اکرام اور ڈاکٹر بشیر شاہ کی ہمراہی میسر ہو تو لطف دوبالا ہو جاتا ہے۔ پیپلز پارٹی کا روائتی سپورٹر اپنے کپڑوں اور جوتوں سے پہچانا جاتا ہے۔ یہ لوئر مڈل کلاس  اور  دیہاتی اور شہری پس منظر رکھتے ہیں۔ ملازمت پیشہ نچلے طبقے کے سرکاری ملازمین، مزدور اور کسان جبکہ اس کی قیادت نوے کی دہائی میں مختلف سماجی اور معاشی پس منظر رکھتی تھی۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 23 اگست 2017

ایک مشنری سکول سے شروع ہونے والے گارڈن کالج کی ابتدا 1903 میں ہوئی۔ وسیع و عریض رقبہ پہ مشتمل اس کالج میں خوبصورت لان اور باغات، کالج کا آڈیٹوریم اور لائبریری دیکھنے سے تعلق رکھتے تھے۔ کالج کے پرنسپل پروفیسر سٹیورٹ نے اپنی کتابوں کا ذاتی ذخیرہ  لائیبریری کو عطیہ کیا۔ آج بھی بہت سے نادر مخطوطات اور کتب کالج لائیبریری میں محفوظ ہیں۔ البتہ آڈیٹوریم کی حالت ناگفتہ بہ ہے۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 11 اگست 2017

امریکہ کے صدر رچرڈ نکسن اپنی مقبولیت کے عروج پر تھے کہ ایک امریکی صحافی نے تہلکہ خیز خبر شائع کی کہ صدر نکسن کے احکامات پر اپوزیشن راہنماوں کے ٹیلی فون ٹیپ کئے جا رہے ہیں۔ اس خبر کا شائع ہونا تھا کہ امریکہ کی سیاست میں بھونچال آگیا۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 07 اگست 2017

احسن اقبال درمیانے طبقے سے تعلق رکھنے والے ان معدودے چند سیاستدانوں میں سے  ہیں جن کا خمیر طلبہ سیاست سے اٹھا ہے۔ ان کی والدہ آپا نثار فاطمہ جماعت اسلامی سے وابستہ تھیں۔ جنرل ضیاء الحق کی مجلس شوریٰ کی رکن نامزد ہوئیں۔ احسن اقبال امریکہ کے وارٹن بزنس سکول سے تعلیم یافتہ ہیں۔ زمانہ طالب علمی میں انہوں نے ایک کامیاب یوتھ کنونشن کا انعقاد کروایا۔ اسلامی جمعیت طلبہ کی تربیت نے ان کی تحریر و تقریر میں نکھار پیدا کیا۔

مزید پڑھیں

Praise and prayers for the great people of Turkey

One year ago, this day, the people of Turkey set an example by defending their elected government and President Recep Tayyip Erdogan against military rebels.

Read more

loading...