فوری تبصرہ


  وقت اشاعت: 1 دن پہلے 

برطانیہ کے شہر کینٹ میں ایک مسجد کے باہر برہنہ ہوکر مسلمانوں کے خلاف دشنام طرازی کرنے والے ایک شخص کو گرفتار کیا گیا ہے۔ اس واقعہ سے مسجد میں آنے والے نمازیوں میں خوف و ہراس پیدا ہؤا اور وہ اس وقت تک مسجد میں بند رہنے پر مجبور ہو گئے جب تک پولیس نے آکر اس برہنہ شخص کو گرفتار نہیں کرلیا ۔ یہ واقعہ اگرچہ اپنی نوعیت کا پہلا واقعہ ہے جس میں کسی شخص نے برہنہ ہوکر ایک مسجد کے احاطے میں مسلمانوں کو ہراساں کرنے کی کوشش کی ہے لیکن گزشتہ چند ہفتوں کے دوران برطانیہ میں مساجد اور مسلمانوں کے خلاف پیش آنے والے واقعات کی وجہ سے لندن اور برطانیہ کے دیگر شہروں میں مقیم مسلمانوں میں خوف کی فضا پیدا ہوئی ہے۔ بی بی سی کی اطلاع کے مطابق مسلمانوں میں پائے جانے والے خوف میں خاص طور سے چہروں پر تیزاب پھینکنے کے واقعات کے بعد اضافہ ہؤا ہے۔ گزشتہ کچھ عرصہ کے دوران درجنوں افراد کے چہروں پر تیزاب پھینکنے یا پھینکنے کی کوشش کرنے کے واقعات رپورٹ ہوئے ہیں۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 1 دن پہلے 

امریکہ کی وزارت خارجہ نے دہشت گردی کے حوالے سے پاکستان کو بدستور اہم لیکن ناقابل اعتبار ملک قرار دیا ہے۔ 2016 کی صورت حال کے بارے میں جاری ہونے والی سالانہ رپورٹ میں امریکی وزارت خارجہ نے پاکستان پر ایک بار پھر یہ الزام عائد کیا ہے کہ وہ افغانستان میں سرگرم حقانی نیٹ ورک کے علاوہ لشکر طیبہ اور جیش محمد کے خلاف بھی کارروائی کرنے میں کامیاب نہیں ہؤا۔ رپورٹ کے مطابق یہ تنظیمیں دوسرے ملکوں میں حملوں کی ذمہ دار ہیں لیکن ان کے ٹھکانے پاکستان میں ہیں۔ امریکہ کے نمائیندے افغانستان میں طالبان پر دباؤ ڈالنے کے لئے پاکستان سے مطالبہ کرتے رہتے ہیں کہ وہ حقانی نیٹ ورک کے خلاف کارروائی کرے جو بقول ان کے پاکستانی علاقوں سے افغانستان میں دہشت گردی کے حملوں میں ملوث ہے۔ تاہم پاک فوج کی طرف سے ان الزامات کی ہمیشہ تردید کی گئی ہے اور کہا جاتا ہے کہ اس نے دہشت گردی کے خلاف مختلف آپریشن کرتے ہوئے بلا تخصیص ہر قسم کے گروہ کے خلاف کارروائی کی ہے۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 2 دن پہلے 

ایران کی پارلیمنٹ نے ملک کے میزائل پروگرام اور فوج کے لئے اضافی وسائل فراہم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ یہ فیصلہ امریکی وزارت خارجہ کی طرف سے ایران پر نئی پابندیاں لگانے کا اعلان سامنے آنے کے بعد کیا گیا ہے۔ امریکہ نے نئی پابندیوں کے تحت ایران کے 18 افراد اور کمپنیوں کو نشانہ بنایا ہے۔ یہ پابندی عائد کرتے ہوئے امریکی وزارت خارجہ نے اگرچہ تسلیم کیا ہے کہ ایران 2015 میں طے پانے والے جوہری معاہدہ پر عمل کررہاہے لیکن میزائل پروگرام جاری رکھنے کی وجہ سے اس پر نئی پابندیاں عائد کی جارہی ہیں۔ ایرانی پارلیمنٹ نے اس فیصلہ کے فوری بعد ہی اس امریکی اقدام کی مذمت کرنے کے لئے اپنے میزائل پروگرام کے لئے پہلے سے مختص 260 ملین ڈالر کے علاوہ اضافی فنڈز فراہم کرنے کا اعلان کیا ہے۔ اس طرح امریکہ کو واضح جواب دیاگیا ہے کہ اس کا جارحانہ رویہ ایران کی حکمت عملی پر اثر انداز نہیں ہو سکتا۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 3 دن پہلے 

آزاد کشمیر اور مقبوضہ کشمیر میں لائن آف کنٹرول پر بھارت کی بڑھتی ہوئی اشتعال انگیزی اور سیز فائر کی خلاف ورزی کرتے ہوئے بلا اشتعال فائرنگ کے واقعات پر پاکستان نے بھارت کو سخت تنبیہ کی ہے۔ پاکستان کے ڈائریکٹر جنرل ملٹری آپریشنز میجر جنرل ساحر شمشاد مرزا نے ہاٹ لائن پر بھارتی ہم منصب سے گزشتہ روزبھارتی فائر میں چار پاکستانی فوجیوں کی شہادت پر سخت احتجاج کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگر یہ سلسلہ جاری رہا تو پاکستان اس قسم کے حملوں کا سخت جواب دینے پر مجبور ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ ہم صورت حال بگاڑنا نہیں چاہتے اور نہ ہی ایک دوسرے کی سپلائی لائن کو نشانہ بناناچاہتے ہیں لیکن بھارت لائن آف کنٹرول پر متفقہ طریقہ کا ر کی خلاف ورزیاں کررہاہے جنہیں کسی صورت برداشت نہیں کیا جائے گا۔ اب اگر فوجیوں پر حملہ کا مزید کوئی ناخوشگوار واقعہ پیش آیا تو اس سے حالات بگڑ سکتے ہیں اور خطے میں امن و استحکام کو اندیشہ لاحق ہو سکتا ہے۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 4 دن پہلے 

امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی طرف سے چھ مسلمان ملکوں کے شہریوں پر امریکہ داخلے پر پابندی کا معاملہ سپریم کورٹ کے فیصلہ کے باوجود حل ہونے کا نام نہیں لیتا۔ حالانکہ گزشتہ ماہ سپریم کورٹ نے اس سال مارچ میں جاری ہونے والے صدارتی حکم کے بارے میں جو فیصلہ دیا تھا ، اسے ٹرمپ حکومت نے اپنی کامیابی قرار دیا تھا۔ تاہم اس وقت بھی یہ بات واضح تھی کہ سپریم کورٹ نے عبوری حکم میں اگرچہ صدر ٹرمپ کے حکم نامہ کو جزوی طور پر قبول کرلیا تھا تاہم اس عدالتی حکم میں بھی یہ واضح کردیا گیا تھا کہ حکومت ایسے لوگوں کے اہل خانہ اور رشتہ داروں کو امریکہ داخل ہونے سے نہیں روک سکتی جو امریکہ میں مقیم ہیں یا اس ملک سے ان کا تعلق ہے۔ گزشتہ ہفتہ کے دوران ہوائی کی ایک عدالت نے سپریم کورٹ کے اس حکم کی وضاحت کرتے ہوئے امریکی شہریوں کے والدین اور دادا دادی یا نانا نانی کو بھی قریبی عزیزوں میں شامل کرنے کی رولنگ دی ہے۔ اب وزارت انصاف اس حکم کے خلاف بھی سپریم کورٹ سے رجوع کررہی ہے۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 6 دن پہلے 

امریکی ایوان نمائیندگان نے کل 621 ڈالر کادفاعی بجٹ منظور کرتے ہوئے ، اس میں ایک قرار داد کا اضافہ کیا ہے جس میں وزارت دفاع سے کہا گیا ہے کہ وہ وزارت خارجہ کے ساتھ مل کر 180 روز کے اندر بھارت کے ساتھ دفاعی شعبہ میں تعاون کو فروغ دینے کے لئے منصوبہ تیار کرے۔ دونوں ملکوں کے درمیان پہلے ہی ایک دوسرے کے فوجی اڈے استعمال کرنے، ہتھیاروں کی فروخت اور انٹیلی جنس کے تبادلہ کے حوالے سے معاہدے موجود ہیں۔ امریکہ نے سابق صدر باراک اوباما کے دور سے بھارت کی طرف جھکاؤ کا آغاز کردیا تھا۔ اس کی بنیادی وجہ بھارت کی وسیع منڈیوں میں امریکی مصنوعات کے لئے دسترس حاصل کرنا تھا ۔ اس کے علاوہ امریکہ بحر ہند اور بحر جنوبی چین میں چین کی نقل و حرکت پر کنٹرول کرنا چاہتا ہے۔ ڈونلڈ ٹرمپ کے صدر بننے کے بعد اس پالیسی میں تبدیلی رونما نہیں ہوئی حالانکہ ماحولیات اور تجارتی خسارے کے سوال پر ٹرمپ اور بھارتی حکومت کے درمیان اختلاف رائے موجود ہے۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 6 دن پہلے 

بھارت میں اقلیتوں اور خاص طور سے مسلمانوں کے ساتھ تشدد اور زیادتی کا ایک نیا واقعہ پیش آیا ہے۔ ریاست اتر پردیش کے علاقے منی پور سے موصول ہونے والی ایک اطلاع کے مطابق ٹرین میں سفر کرنے والے ایک خاندان پر حملہ کرکے انہیں زد و کوب کیا گیا اور خواتین کے ساتھ زیادتی بھی کی گئی۔ اس کے علاوہ بیس سے زائد افراد کا یہ گروہ اہل خاندان سے نقد رقم اور زیورات لوٹ کر فرار ہو گیا۔  یہ واقعہ اپنی نوعیت کا پہلا واقعہ نہیں ہے بلکہ گزشتہ چند برس کے دوران تسلسل سے ان میں اضافہ ہو رہا ہے۔ یوں تو ملک کی سب اقلیتیں انتہا پسند ہندو گروہوں کا نشانہ بنتی ہیں لیکن یہ گروہ خاص طور سے مسلمانوں کو تاک کر ان پر حملے کرتے ہیں ۔ عام طور سے ایسا حملہ کرتے ہوئے یہ دعویٰ کیا جاتا ہے کہ یہ لوگ گائے کا گوشت کھاتے ہیں یا ان کے پاس گائے کا گوشت موجود تھا۔ اس مقصد کے لئے متعدد ہندو گروہوں نے گؤ رکھشا گروپ بنائے ہوئے ہیں۔ حکومت ان گروہوں کے خلاف کوئی کارروائی کرنے میں ناکام ہے۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 14 جولائی 2017

بھارت نے کل چین کی طرف سے پاکستان اور بھارت کے درمیان تعلقات کی بحالی میں تعاون فراہم کرنے کی پیش کش کو اپنی روائیتی ہٹ دھرمی سے مسترد کرتے ہوئے دعویٰ کیا ہے کہ پاکستان کے ساتھ معاملات دو طرفہ بات چیت کے ذریعے ہی حل ہو سکتے ہیں۔ تاہم پاکستان کی طرف سے مذاکرات کی بار بار پیش کش کے باوجود بھارت بات چیت کے لئے تیار نہیں ہے۔ بھارت مسلسل پاکستان کے لئے خطرہ بنا ہؤا ہے اور امریکہ کے ساتھ تعلقات میں پیش رفت کے ساتھ وہ یہ باور کرنے لگا ہے کہ دنیا کی سپر پاور کے ساتھ مل کر وہ پاکستان کو تنہا کرنے اور بنیادی اہم وسائل سے محروم کرنے میں کامیاب ہو سکتا ہے۔ اس دوران آج اسلام آباد میں منعقد ہونے والے ایک سیمینار میں ماہرین نے بھارت کی طرف سے پاکستان کے حصہ کے پانی کو روکنے کی کوششوں کو پانی کی دہشت گردی سے تعبیر کیا ہے۔ ماہرین پہلے بھی متنبہ کرتے رہے ہیں کہ دونوں ملکوں کے درمیان پانی کا تنازعہ سنگین ہؤا تو اس کے نتیجے میں جنگ ہونا لازمی امر ہوگا۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 13 جولائی 2017

یوں تو یہ بات عجیب لگتی ہے کہ پاکستان اور بھارت کے درمیان مفاہمت کے لئے چین کوئی مثبت کردار ادا کرے لیکن چین نے جس طرح تصادم سے گریز اور تعمیر و ترقی اور تجارت کے فروغ پر توجہ مبذول کرکے ایک مثال پیش کی ہے ، وہ برصغیر کے ایٹمی صلاحیت سے مالامال دونوں ملکوں کے لئے سبق آموز ہونی چاہئے۔ چین کے اس کردار اور پالیسی کو پیش نظر رکھا جائے اور تصادم سے گریز کی پالیسی کو بنیادی اصول کے طور پر اختیار کیا جائے تو پاکستان اور بھارت اس پورے خطے میں ترقی اور خوشحالی کے ایک نئے باب کا اضافہ کرسکتے ہیں۔ چین کی وزارت خارجہ کے ترجمان گینگ شو آنگ نے آج میڈیا بریفنگ کے دوران ایک صحافی کے سوال کا جواب دیتے ہوئے اسی حقیقت کی طرف اشارہ کرنے کی کوشش کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ چین ان دونوں ملکوں کے درمیان مفاہمت کے لئے مثبت رول ادا کرنے کے لئے تیار ہے۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 13 جولائی 2017

امریکی وزیر خارجہ ریکس ٹلرسن چار عرب ممالک کی طرف سے قطر کا بائیکاٹ ختم کروانے کی کوششوں کے سلسلہ میں اس وقت مشرق وسطیٰ کا دورہ کررہے ہیں۔ وہ پہلے کویت گئے تھے جہاں انہوں نے کویت کے امیر شیخ صباح الاحمد الصباح کے ساتھ ملاقات کی اوران سے قطر اور اس کے ہمسایہ چار ملکوں کے درمیان تعلقات بحال کروانے کی مصالحتی کوششوں کے بارے میں معلومات حاصل کیں۔ کویت کے امیر جون کے شروع میں اس بحران کا آغاز ہونے کے بعد سے سعودی عرب اور اس کے حلیف ملکوں اور قطر کے درمیان شٹل ڈپلومیسی میں مصروف رہے ہیں۔ اگرچہ فریقین نے انہیں ثالث تسلیم کیا ہے لیکن ابھی تک ان کے توسط سے بحران کے خاتمہ کے لئے کوئی پیش رفت نہیں ہوسکی ۔ اسی لئے اب امریکی وزیر خارجہ خود اپنے قریب ترین حلیفوں کے درمیان جھگڑے کو ختم کروانے کی کوشش کرنے مشرق وسطیٰ پہنچے ہیں۔

مزید پڑھیں

Praise and prayers for the great people of Turkey

One year ago, this day, the people of Turkey set an example by defending their elected government and President Recep Tayyip Erdogan against military rebels.

Read more

loading...