شرمناک سوچ

تحریر: آصف عباس   وقت اشاعت: 12 اگست 2017

سابق وزیراعظم نااہلی کے بعد ایوان سے عوام میں آ گئے ۔ سیاست میں مخالفین کو لعنت ملامت کرنا عام بات ہے مگر نواز شریف کا عدلیہ کے خلاف بھی لہجہ سخت سے سخت تر ہو رہا ہے۔ سیاسی مخالفت اور مخالفانہ رائے رکھنے والوں پر تنقید ایک طرف، نواز شریف کے قافلے میں شامل گاڑی کی ٹکر سے بچے کی ہلاکت کے بعد شروع ہونے والے بیان بازی اور رائے افسوسناک اور شرمناک ہے۔ حادثے کے حوالے سے عینی شاہدین نے بتایا کہ 12 سالہ حامد سڑک کنارے کھڑا تھا کہ نوازشریف کے اسکواڈ میں شامل ایلیٹ فورس کی گاڑی نے اسے ٹکر مار دی اور برق رفتاری سے آگے کی جانب نکل گئی جبکہ قافلے میں شامل کسی بھی گاڑی یا اہلکار نے بچے کو اٹھانے کی زحمت گوارہ نہیں کی۔ عوام نے اپنی مدد آپ کے تحت بچے کو قریبی اسپتال پہنچایا تاہم وہ جانبر نہ ہوسکا۔ کمسن بچے کی ہلاکت پر اظہار افسوس انتہائی مناسب مگر واقعہ کو سیاسی دکان چمکانے کیلئے استعمال کرنے کو صرف اور صرف شرمناک ہی کہا جا سکتا ہے۔

سیاسی میلہ دیکھنے کیلئے آنے والے بچے کی ہلاکت کے بعد خصوصاً مسلم لیگ ن کے رہنماؤں کے بیانات انتہائی غیر ذمہ دارانہ تھے۔ نواز شریف کے داما کیپٹن صفدر نے واقعے پر بیان دیتے ہوئے کہا کہ نواز شریف کی ریلی پاکستان بچانے کی ریلی ہے اور پاکستان کیلئے لاکھوں انسانوں نے اپنی جانوں کی قربانی دی۔ یہ بچہ بھی پاکستان کیلئے قربان ہوا ہے۔ اللہ اس کے درجات بلند کرے۔ وزیر ریلوے سعد رفیق کا کہنا ہے تھا معصوم بچہ جدوجہد کے راستے کا پہلا شہید ہے۔ ن لیگ کے شعلہ بیان وزیر رانا ثنا اللہ نے حادثے کی ذمہ داری قبول کرنے سے ہی انکار ہو گئے۔ ان کا کہنا تھا حامد کی ہلاکت حادثے میں میاں نواز شریف کے قافلے میں شامل کسی گاڑی سے نہیں ہوئی۔ نواز شریف کی صاحبزادی مریم نواز نے بھی ٹوئٹر کے ذریعے بچے کی ہلاکت کے واقعے پر افسوس پر اکتفا کیا۔
 
مسلم لیگ ن کی صف اول کی قیادت کا حال تو سبھی نے ملاحظہ کیا مگر اس سے بھی سوا تین بار ملک کے وزیراعظم رہنے والے نواز شریف کا رویہ ہے۔ نواز شریف صاحب نے اس معصوم بچے کو جسے شاید یہ بھی علم نہ ہو کہ سیاست کس بلا کا نام ہے اور نواز شریف کس طرح کے انسان۔۔۔۔۔۔۔ ریلی کا پہلا شہید قرار دیا۔ اس قدر بے تکی بات کرتے ہوئے بھی نواز شریف کے لہجے میں بلا کا اعتماد تھا اور یہی لہجہ یہ ثابت کرتا ہے کہ ان کی نظر میں انسان سے زیادہ سیاست اور عہدے کی اہمیت ہے۔ بچے کو پہلا شہید قرار دینے سے مراد یہ بھی لی جا سکتی ہے کہ وہ مزید شہادتوں کے خواہاں ہیں اور اگر ایسا ہوتا ہے تو حالات کا اونٹ کس کروٹ بیٹھے گا اسے سمجھنا کوئی بہت بڑی سائنس نہیں ہے۔ مسلم لیگ ن اور نواز شریف کی اس سوچ کو صرف اور صرف شرمناک ہی قرار دیا جا سکتا ہے۔
آپ کا تبصرہ

Growing dangers of Islamist radicalism on Pakistani politics

Mr Arshad Butt is an insightful observer of the political events in Pakistan. Even though the hallmark of Pakistani political developments and shabby deals defy any commo

Read more

loading...