بیورو کریسی کو سیاسی دباؤ سے آزاد کیا جائے گا: وزیراعظم

اسلام آباد: وزیر اعظم عمران خان نے بیوروکریسی کو سیاسی دباؤ سے آزاد کرانے کے عزم کا اظہار کیا ہے۔ ریڈیو پاکستان کی رپورٹ کے مطابق اسلام آباد میں سول سروس ریفارمز ٹاسک فورس کی صدارت کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ گزشتہ 10 برس میں سول سروس کو سیاسی مقاصد کے لیے استعمال کیا گیا جس وجہ سے اس کی کارکردگی میں کمی آئی اور بیوروکریٹس کے درمیان خوف پیدا ہوا ہے۔
انہوں نے کہا کہ حکومت کامشن ہے کہ بیوروکریسی کوسیاسی مداخلت سے بچایا جائے۔ ان کا کہنا تھا کہ بیوروکریسی کو سیاست سے پاک کیا جائے گا۔ وزیراعظم نے کہا کہ موجودہ حکومت نجی سیکٹر سے مقابلہ نہیں کرسکتی جہاں میرٹ کی بنیاد پر عہدے کا تعین کیا جاتا ہے۔
انہوں نے مزید کہا کہ حکومت کا مشن ہے کہ صرف میرٹ کی بنیاد پر ملازمت دی جائے، کوئی بھی نظام احتساب اور میرٹ کے بغیر مستحکم نہیں ہوسکتا۔ عمران خان نے کہا کہ اسپیشلائزیشن کا دور ہے۔ ہر شعبے میں ماہر افراد ہی کام کرسکتے ہیں۔ انہوں نے بیوروکریسی میں بہتری کے لیے اصلاحات لانے پر بھی زور دیا۔
وزیراعظم نے کہا کہ بیوروکریٹس کی پوسٹ پر مدت ملازمت کو تحفظ فراہم کیا جائے گا تاکہ وہ حکومت کے وژن کو حقیقت میں ڈھالنے میں کردار ادا کریں۔ عمران خان نے کہا کہ ہمارے ملک میں قابلیت کی کمی نہیں صرف نظام کی وجہ سے قابل لوگ سامنے نہیں آتے۔ انہوں نے ذہین افراد کو ملک کی خدمت کرنے پر زور دیا۔
انہوں نے کہا کہ بدلتے وقت کے ساتھ سیاستدانوں کو بھی تربیت دینے کی ضرورت ہے۔ وزیراعظم نے وسائل کے ضیاع کے خاتمے پر زور دیا۔ انہوں نے کہا کہ ہم ایسا ماڈل لارہے ہیں جس کے تحت مقامی حکومت کے نمائندے عوامی فلاح و بہبود کے لیے کام کرسکیں گے۔

Comments:- User is solely responsible for his/her words