معزز صارفین ہماری ویب سائٹ اپ ڈیٹ ہو رہی ہے۔ اگر آپ کو ویب سائٹ دیکھنے میں دشواری پیش آرہی ہے تو ہمیں اپنی رائے سے آگاہ کریں شکریہ

سعودی ولی عہد اور اسرائیل

  وقت اشاعت: 03 اپریل 2018

واشنگٹنِ: سعودی عرب کے ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان نے کہا ہے کہ اسرائیل کو اپنی سرزمین کا حق حاصل ہے۔ یہ پہلا موقع ہے کہ کسی سعودی حکمران نے اسرائیل کے بطور ریاست حق کو تسلیم کرنے کا اعلان کیا ہے۔ سعودی عرب اور اسرائیل کے درمیان  سفارتی تعلقات نہیں ہیں اور سعودی حکومت سرکاری طور پر اسرائیل کو تسلیم بھی نہیں کرتی۔ تاہم دونوں ممالک کے درمیان تعلقات میں گزذشتہ چند سالوں میں بہتری آئی ہے۔

دونوں ممالک  ایرا کون دشمن اور امریکہ کو حلیف اور  اتحادی ملک سمجھتے ہیں۔  دونوں ممالک کو مسلح اسلامی شدت پسندی سے بھی خطرہ لاحق ہے۔ تاہم دونوں ممالک کے درمیان بہتر تعلقات میں سب سے بڑی رکاوٹ  فلسطین کا مسئلہ ہے کیونکہ سعودی عرب  ایک خودمختاد فلسطینی ریاست کا حامی ہے۔ بی بی سی اردو کی رپورٹ کے مطابق امریکی  جریدے دی اٹلانٹک سے بات کرتے ہوئے شہزادہ سلمان بن محمد نے  متنازع خطے پر اسرائیلی اور فلسطینی دعوؤں کو برابر قرار دیا ہے۔

جب ان سے پوچھا گیا کہ کیا یہودیوں کو اپنے قدیمی آبائی علاقوں میں  جزوی طور پر ایک خودمختار ریاست کا حق ہے تو ان کا کہنا تھا کہ ’میرا ماننا ہے کہ تمام لوگوں کو یہ حق حاصل ہے کہ وہ ایک پرامن ریاست میں رہیں۔‘ ان کا مزید کہنا تھا کہ ’میرا ماننا ہے کہ فلسطینیوں اور اسرائیلیوں کو اپنی اپنی زمین کا حق حاصل ہے۔ مگر ہمیں نارمل تعلقات اور سب کے لیے استحکام کے لیے ایک امن معاہدے کو یقینی بنانا ہوگا۔‘

2002 سے سعودی عرب مشرق وسطی میں امن کا وسیع معاہدہ کروانے کی کوششیں کرتا رہا ہے۔ اسی منصوبے کے تحت اسرائیل اور فلسطین کے مسئلہ کو حل کرنے کے لئے دو ریاستی حل پر زور دیا جاتا رہا ہے۔ تاہم وزیر اعظم نیتین یاہو کی حکومت خود مختار فلسطینی ریاست کی راہ میں رکاوٹیں کھڑی کرتی رہی ہے۔ واضح رہے اب تک کسی بھی سینیئر سعودی اہلکار نے اسرائیل کے وجود کا حق تسلیم نہیں کیا تھا۔

شہزادہ محمد بن  سلمان اپنے والد کے بعد سعودی تخت سنبھالتے ہیں تو وہ اسلام کے دو اہم ترین شہروں مکہ اور مدینہ  کے محافظ بھی بن جائیں گے۔ اور خادم حرمین شریف کہلائیں گے۔ امریکی جریدے کو  انٹرویو میں انہوں نے کہا کہ انہیں اسرائیلیوں اور فلسطینیوں کے ساتھ ساتھ رہنے پر کوئی مذہبی اعتراض نہیں تاہم بیت المقدس میں واقع  مسجد القدس محفوظ رہنی چاہئے۔ 
 

آپ کا تبصرہ

Donald Trump's policy towards Pakistan

Donald Trump's; the president of US war of tweets was a fierce attack on Pakistan, accusing the country of "lies and deceit" and making "fools" of US leaders. Trump decla

Read more

loading...