معزز صارفین ہماری ویب سائٹ اپ ڈیٹ ہو رہی ہے۔ اگر آپ کو ویب سائٹ دیکھنے میں دشواری پیش آرہی ہے تو ہمیں اپنی رائے سے آگاہ کریں شکریہ

سینیٹ نے سر عام پھانسی کی تجویز مسترد کردی

  وقت اشاعت: 08 مارچ 2018

اسلام آباد: سینیٹ کمیٹی نے بچوں سے زیادتی کے ملزمان کو سرعام پھانسی دینے کے لئے قانون میں تبدیلی کی تجویز مسترد کردی ہے۔ 

سینیٹ کی قانون و انصاف کمیٹی کے چیئرمین جاوید عباسی کی صدارت میں ہونے والے اجلاس میں بچوں سے زیادتی کے ملزمان کو سرعام پھانسی دینے کے لئے پاکستان پینل کوڈ میں ترمیم پر غور کیا گیا۔ سینیٹ کمیٹی نے قانون میں ترمیم کی مخالفت کرتے ہوئے اسے مسترد کردیا۔

اس سے قبل 24 جنوری 2018 کو چیئرمین سینیٹ رضا ربانی نے سینیٹ میں زینب کے قاتل کو سرعام پھانسی دینے کے لیے قانون سازی پر عدم اتفاق کے بعد سینیٹ کمیٹی برائے قانون و انصاف کو داخلہ کمیٹی کی ترامیم کا جائزہ لے کر حتمی رپورٹ ایوان میں پیش کرنے کی ہدایت کی تھی۔ اسی روز سابق وزیر داخلہ اور چیئرمین قائمہ کمیٹی برائے داخلہ سینیٹر رحمٰن ملک نے مطالبہ کیا تھا کہ پاکستان پینل کوڈ میں ترمیم کرکے بچوں کا جنسی استحصال کرنے والوں کو سرعام پھانسی دی جائے۔ کمیٹی نے ترمیم کریمنل لا 2018 کے نام سے بل میں اپنی سفارشات میں کہا تھا کہ پاکستان پینل کوڈ 1860 کے سیکشن 364-اے میں فوری طور پر ترمیم کرکے سرعام پھانسی کے الفاظ شامل کیے جائیں۔

خیال رہے کہ یکم فروری 2018 کو قومی اسمبلی کی انسانی حقوق کی کمیٹی نے پاکستان پینل کوڈ (پی پی سی) میں بچوں کے ساتھ جنسی ہراساں کرنے والے مجرمان کو عوامی سطح پر پھانسی دینے کے لیے قانون میں ترمیم کے معاملے کی مخالفت کی تھی، اس ترمیم کا معاملہ قصور میں 6 سالہ بچی زینب امین کے ساتھ زیادتی اور قتل کے معاملے کے بعد سامنے آیا تھا۔

آپ کا تبصرہ

Donald Trump's policy towards Pakistan

Donald Trump's; the president of US war of tweets was a fierce attack on Pakistan, accusing the country of "lies and deceit" and making "fools" of US leaders. Trump decla

Read more

loading...