زینب قتل کیس کے ملزم پر فرد جرم عائد

  وقت اشاعت: 12 فروری 2018

لاہور: انسداد دہشت گردی عدالت (اے ٹی سی) نے پنجاب کے ضلع قصور میں گزشتہ ماہ ریپ کے بعد قتل ہونے والی 7 سالہ زینب کے ملزم پر فرد جرم عائد کردی ہے۔ لاہور کے کوٹ لکھپت جیل میں سخت سیکیورٹی میں سماعت ہوئی اور ملزم پر فرد جرم عائد کردی گئی جبکہ گواہوں کو منگل کے روز پیش کیا جائے گا۔

وکیل صفائی مہر شکیل ملتانی کا کہنا تھا کہ 24 سالہ عمران علی نے زینب کے قتل اور ریپ الزامات سے انکار کیا ہے۔ اے ایف پی سے بات کرتے ہوئے  وکیل صفائی نے کہا کہ 'پولیس نے میرے موکل کے خلاف بے بنیاد اور جھوٹے الزامات عائد کیے ہیں'۔  قصور میں 4 جنوری کو لاپتہ ہونے والی 7 سالہ زینب کی لاش 9 جنوری کو ایک کچرا کنڈی سے ملی تھی جس کے بعد ملک بھر میں احتجاج اور غم و غصے کا اظہار کیا گیا تھا۔ چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے واقعہ کا نوٹس لیا تھا جبکہ وزیراعلیٰ پنجاب نے بھی واقعہ کا نوٹس لیتے ہوئے پولیس کو ملزم کی فوری گرفتاری کی ہدایات جاری کی تھیں۔ پولیس نے 13 جنوری کو ڈی این اے کے ذریعے ملزم کی نشاندہی کی تھی اور ملزم کو گرفتار کرنے کے بعد وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف نے لاہور میں زینب کے والد کی موجودگی میں پریس کانفرنس کی تھی۔

9 فروری کو عدالت نے گرفتار ملزم عمران علی کو 14 روزہ جوڈیشل ریمانڈ پر جیل منتقل کردیا تھا۔ ڈپٹی پراسیکیوٹر جنرل نے عدالت کو بتایا  کہ ملزم عمران کو زینب قتل کیس میں ڈی این اے میچ ہونے کے بعد گرفتار کیا گیا تھا اور ملزم عمران کا زینب قتل کیس میں 16 روزہ جسمانی ریمانڈ مکمل ہو چکا ہے۔ انہوں نے کہا  کہ ملزم کے خلاف دیگر 8 مقدمات میں تین روزہ جسمانی ریمانڈ بھی مکمل ہو چکا ہے اور قصور میں پہلے زیادتی اور قتل کے آٹھ مقدمات میں بھی ملزم ملوث پایا گیا ہے جبکہ ملزم عمران نے دوران تفتیش اپنے جرم کا اعتراف بھی کرلیا تھا۔

ڈپٹی پراسیکیوٹر جنرل نے عدالت کو بتایا کہ ملزم سے مقدمات کی تفتیش مکمل کر لی گئی ہے۔  

آپ کا تبصرہ

Donald Trump's policy towards Pakistan

Donald Trump's; the president of US war of tweets was a fierce attack on Pakistan, accusing the country of "lies and deceit" and making "fools" of US leaders. Trump decla

Read more

loading...