فیس بک میں تبدیلی سے لاکھوں افراد پریشان

  وقت اشاعت: 21 2017

گزشتہ دنوں فیس بک نے لاکھوں صارفین کے ہوش اس وقت اڑا دیئے جب اس نے متعدد ڈیسک ٹاپ صارفین کے لیے ڈیلیٹ آپشن کو 'غائب' کردیا۔ فیس بک کی جانب سے اس حوالے سے کوئی بیان جاری نہیں کیا گیا ہے۔

فیس بک صارفین کچھ بھی پوسٹ کرتے ہوئے اس بات سے مطمئن ہوتے ہیں کہ جب دل کرے گا وہ ایک دن، ایک ہفتے، ایک سال یا کئی سال بعد اسے ڈیلیٹ کرنے کی طاقت رکھتے ہیں۔

مگر گزشتہ دنوں فیس بک نے لاکھوں صارفین کے ہوش اس وقت اڑا دیئے جب اس نے متعدد ڈیسک ٹاپ صارفین کے لیے ڈیلیٹ آپشن کو 'غائب' کردیا۔ یہ اچانک اور غیرمتوقع تبدیلی متعدد افراد کو ذہنی طور پر الجھانے کے لیے کافی ثابت ہوئی۔

مختلف رپورٹس میں اس بات کی تصدیق ہوئی کہ ڈیسک ٹاپ صارفین کی محدود تعداد کے لیے ڈیلیٹ آپشن کو فیس بک کی جانب سے ایکٹیویٹی لاگ میں منتقل کردیا گیا ہے۔

اگر ایسے صارفین یہ نہیں جان پاتے کہ ڈیلیٹ بٹن کہاں چلا گیا ہے تو ان کے پاس صرف پوسٹ کو ٹائم لائن سے ہائیڈ کرنے کا آپشن ہی باقی بچتا ہے۔ ویسے بیشتر افراد کے پاس ابھی تک پوسٹس میں ڈیلیٹ کا آپشن موجود ہے۔

یعنی فی الحال یہ فیچر یا تبدیلی کچھ صارفین پر آزمائی جارہی ہے یا جلد ہی ڈیلیٹ آپشن ہر ایک کی پہنچ سے دور ہونے والا ہے اور یہ فیس بک سرور کی کسی غلطی کا نتیجہ بھی ہوسکتا ہے۔ ویسے فیس بک کی جانب سے اکثر اس طرح کی تبدیلیاں ہوتی رہتی ہیں تو یہ حیرت انگیز امر نہیں کہ محدود تعداد میں لوگوں میں اسے آزمایا جارہا ہو۔

فی الحال فیس بک کی جانب سے اس حوالے سے کوئی بیان جاری نہیں کیا گیا ہے۔

آپ کا تبصرہ

Growing dangers of Islamist radicalism on Pakistani politics

Mr Arshad Butt is an insightful observer of the political events in Pakistan. Even though the hallmark of Pakistani political developments and shabby deals defy any commo

Read more

loading...