افغانستان: ہلمند میں طالبان کا خودکش حملہ، 5 افراد ہلاک

  وقت اشاعت: 23 اگست 2017

قندھار: افغانستان کے جنوبی صوبے ہلمند میں ایک خودکش حملے میں 5 افراد ہلاک اور 25 سے زائد زخمی ہوگئے۔ دھماکے کی ذمہ داری طالبان نے قبول کی ہے۔

فرانسیسی خبر رساں ادارے اے ایف پی کی رپورٹ کے مطابق گورنر صوبہ ہلمند کے ترجمان عمر زواک کا کہنا تھا کہ لشکر گاہ کے علاقے میں قائم پولیس ہیڈکوارٹر کے قریب ایک پارکنگ میں بارود سے بھری کار کو دھماکے سے اڑایا گیا۔ ان کا کہنا تھا کہ دھماکے میں 5 افراد ہلاک اور 25 سے زائد زخمی ہوئے۔ انہوں نے دعویٰ کیا کہ ہلاک ہونے والوں میں خواتین اور بچے بھی شامل ہیں جس کی ذمہ داری طالبان نے قبول کی ہے۔

ادھر غیر ملکی خبر رساں ادارے ایسوسی ایٹڈ پریس (اے پی) کے مطابق صوبائی ترجمان نے حملے میں مزید ہلاکتوں کا خدشہ ظاہر کرتے ہوئے بتایا کہ واقعے میں 2 سپاہی بھی ہلاک ہوئے۔ رپورٹ میں کہا گیا کہ طالبان کے ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے ٹوئٹ میں مذکورہ دھماکے کی ذمہ داری قبول کرلی۔

افغان میڈیا پر نشر ہونے والی ویڈیو کے مطابق حملے میں افغان فوج کے زیر استعمال متعدد فوجی بکتر بند گاڑیاں تباہ ہوئی ہیں۔

خیال رہے کہ گذشتہ روز امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے نئی افغان پالیسی کے بارے میں تقریر کے دوران اعلان کیا تھا کہ طالبان کے خلاف لڑائی کے لیے افغانستان میں امریکی فوج میں اضافہ کیا جائے گا۔ انہوں نے اپنی تقریر میں دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پاکستان کے کردار پر تنقید کرتے ہوئے خبردار کیا تھا کہ وہ دہشت گردوں کو محفوظ پناہ گاہیں فراہم کرنے کا عمل بند کرے۔

ڈونلڈ ٹرمپ کے مذکورہ بیان پر طالبان ترجمان ذبیح اللہ مجاہد نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر ایک جاری بیان میں کہا تھا کہ اگر امریکہ افغان سرزمین سے اپنے فوجیوں کا انخلا نہیں کرتا تو ’افغانستان کو امریکی افواج کا قبرستان‘ بنا دیا جائے گا۔

آپ کا تبصرہ

Praise and prayers for the great people of Turkey

One year ago, this day, the people of Turkey set an example by defending their elected government and President Recep Tayyip Erdogan against military rebels.

Read more

loading...