’یہ بے عزتی منظور نہیں‘ نواز شریف نے انقلاب کا نعرہ بلند کر دیا

  وقت اشاعت: 12 اگست 2017

سابق وزیر اعظم میاں نواز شریف نے مرید کے میں کارکنوں سے خطاب کرتے ہوئے یہ جیت آپ کی ہے۔ ہار اس کی ہے جس نے قوم کو 70 سالوں سے یرغمال بنایا ہوا تھا۔

نوازشریف کا کہنا تھا پاکستان کے 20 کروڑ عوام ملک کے اصلی مالک ہیں۔ چند لوگ پاکستان کے مالک نہیں ہو سکتے۔ انہوں نے عوام کو مخاطب کرتے ہوئے کہا وزیراعظم کو رسوا کر کے تذلیل کر کے نکال دیا گیا، کیا آپ کو قبول ہے؟۔ نواز شریف نے کہا ہمیں یہ بے عزتی منظور نہیں، یہ خوددار قوم ہے، مریدکے والو! آپ کا جذبہ انقلاب اور تبدیلی کا پیش خیمہ ہے۔ انہوں نے کہا نوازشریف نے ایک پائی کی کرپشن بھی کی ہوتی تو کان سے پکڑ کر نکال دیتے، میرے خلاف کوئی کرپشن، کمیشن اور ہیرا پھیری نہیں ہے، سرکاری فنڈ میں بھی کوئی خرد برد نہیں ہوئی، بیٹے سے تنخواہ نہ لینے پر وزیراعظم کو نکال دیا گیا۔ سابق وزیراعظم نے عوام کو مخاطب کرتے ہوئے کہا آپ کے ووٹ کی پرچی کی کیا حیثیت ہے، اس ملک کو بدلنا ہو گا۔ پاکستان کے ساتھ 70 سالوں سے مذاق ہو رہا ہے، کیا پاکستان کے علاوہ کسی اور ملک میں یہ کھیل تماشا ہو رہا ہے؟۔انہوں نے عوام سے سوال کیا کہ اس ملک میں ایک انقلاب ہونا چاہیے یا نہیں، کیا انقلاب کے لیے تیار ہوِ؟۔

انہوں نے کہا بجلی پہلے سے بہتر ہو رہی ہے، دن رات ملک کی خدمت کر رہا تھا، بلوچستان کی ترقی ہو رہی تھی اور بے روزگار نوجوانوں کو روزگار ملنا شروع ہو گیا تھا۔ انہوں نے کہا ترقی کی سپیڈ جاری رہتی تو اگلے 3 سالوں میں پاکستان سے بے روزگاری کا خاتمہ ہو جاتا۔

میاں نواز شریف نے کہا پاکستان کے ساتھ 70 سالوں سے مذاق ہو رہا ہے، کیا پاکستان کے علاوہ کسی اور ملک میں یہ کھیل تماشا ہو رہا ہے؟۔انہوں نے عوام سے سوال کیا کہ اس ملک میں ایک انقلاب ہونا چاہیے یا نہیں، کیا انقلاب کے لیے تیار ہوِ؟۔ میاں نواز شریف نے کہا پاکستان دنیا میں رسوا ہو رہا ہے، ہم نے ملک میں تبدیلی اور انقلاب لانا ہے، کیا مرید کے لوگ نوازشریف کا ساتھ دیں گے؟۔  

 
آپ کا تبصرہ

Growing dangers of Islamist radicalism on Pakistani politics

Mr Arshad Butt is an insightful observer of the political events in Pakistan. Even though the hallmark of Pakistani political developments and shabby deals defy any commo

Read more

loading...