معزز صارفین ہماری ویب سائٹ اپ ڈیٹ ہو رہی ہے۔ اگر آپ کو ویب سائٹ دیکھنے میں دشواری پیش آرہی ہے تو ہمیں اپنی رائے سے آگاہ کریں شکریہ

اوسلو میں عاصمہ جہانگیر کے لئے تعزیتی ریفرنس

  وقت اشاعت: 19 فروری 2018

رپوٹ و فوٹو: سید سبطین شاہ

ناروے کے دارالحکومت اوسلو میں ایک تعزیتی ریفرنس سے خطاب کرتے ہوئے مقررین نے کہاہے کہ انسانیت کی بالادستی اور انسانی حقوق کے لیے عاصمہ جہانگیر کا مشن جاری رہنا چاہیے۔ تعزیتی ریفرنس کا اہتمام ویژن فورم اور پاکستان فیملی نیٹ ورک ناروے نے اتوارکی شام اوسلو کی فروست لائبریری میں کیا۔ تقریب کی  نظامت ویژن فورم کے سربراہ اور سیاسی کارکن ارشد بٹ نے کی۔

شرکا نے عاصمہ جہانگیر کی مغفرت کے لیے دعا کی اور ان کی جمہوریت، قانون کی بالادستی، آئین کی حکمرانی، انسانی حقوق خصوصاً پسے ہوئے طبقات کے لیے جدوجہد کو سراہا۔ تعزیتی تقریب میں نارویجن پاکستانی سوسائٹی کے مختلف طبقات کے نمائندوں نے شرکت کی۔ مقررین میں رکن نارویجن پارلیمنٹ ڈاکٹر ٹینا شگفتہ، سینئرصحافی سید مجاہد علی، ادبی تنظیم حلقہ ارباب ذوق کے سربراہ آفتاب وڑائچ، دریچہ کے محمد ادریس اور ڈاکٹر سید ندیم حسین، سابق رکن نارویجن پارلیمنٹ اطہرعلی، ریسرچرسید سبطین شاہ، پی پی پی کے سینئر رہنما علی اصغرشاہد اور الیاس کھوکھر، نارویجن ٹی وی کے سینئرصحافی عطا انصاری اور افضل اشرف ملک نے خطاب کیا۔ سماجی شخصیات ملک پرویز مہر، چوہدری فیض علی، محمد اکرم، سید مبارک شاہ، مسلم لیگ(ن) کے چیف آرگنائزر نذیر خالد بٹ کے علاوہ نیلوفر حمید اور شگفتہ انور سمیت متعدد خواتین بھی تقریب میں شریک ہوئیں۔

مقررین نے تقاریر اور اشعار کی صورت عاصمہ جہانگیر کی جدوجہد کو زبردست الفاظ میں قابل ستائش قرار دیا۔ انہوں نے کہا کہ عاصمہ نے معاشرے کے محروم،  مایوس اورغریب لوگوں کے لیے کام کیا اور بلاتفریق رنگ، نسل اور مذہب عوام کے لیے خدمات انجام دیں۔ مقریرین  نے اس بات پر زور دیا کہ پاکستان میں لوگوں کے بنیادی حقوق کے تحفظ کے لیے مرحومہ کے مشن کو جاری رہنا چاہیے۔  مقررین کا کہنا تھا کہ عاصمہ جہانگیر کی انسانی حقوق کے لئے مثالی جدو جہد کی وجہ سے اوورسیز پاکستانی اپنے سر فخر سے بلند کر سکتے ہیں۔

مقررین نے کہا کہ عاصمہ جہانگیر کی معاشرے کے کچلے ہوئے طبقوں کے حقوق کے لئے قانونی اور سیاسی جدو جہد بھی اپنی مثال آپ ہے۔ انہوں نے خواتین کو معاشرے میں مساوی قانونی اور آئینی حقوق دلانے کے لئے کسی قربانی سے دریغ نہ کیا۔ انہیں بنیادی انسانی حقوق کے جدو جہد کی پاداش میں قیدوبند کی صعوبتیں بھی برداشت کرنا پڑیں۔

اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے ارشد بٹ نے کہا کہ ہمیں عاصمہ جہانگیر کے انسانی برابری کے مشن کو ہر گز نہیں بھلانا چاہے۔ ٹینا شگفتہ نے کہا کہ عاصمہ کا نام خواتین کے لئے جرات اور حوصلے کی علامت بن چکا ہے، مقررین کا کہنا تھا کہ پاکستان مظلوموں، دبے کچلے طبقوں کی سب سے مضبوط آواز سے محروم ہو گیا ہے۔

اجلاس میں ایک قرار داد کے ذریعے عاصمہ جہانگیر کی لازوال جدو جہد کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے ان کے پیغام کو عوام تک پہنچانے کا مشن جاری رکھنے کے عزم کا اظہار کیا۔

آپ کا تبصرہ

Donald Trump's policy towards Pakistan

Donald Trump's; the president of US war of tweets was a fierce attack on Pakistan, accusing the country of "lies and deceit" and making "fools" of US leaders. Trump decla

Read more

loading...