مباحث


  وقت اشاعت: 1 دن پہلے 

وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے گلہ کیا ہے کہ ملک میں عوامی مینڈیٹ کو تسلیم نہیں کیا جا رہا۔ یہ بات انہوں نے کسی اخباری پریس کانفرنس، کسی صحافی سے انٹرویو، کسی اخباری بیان میں نہیں کی بلکہ نوشہرو فیروز (سندھ) میں غلام مرتضیٰ خان جتوئی کے گھر پر ایک جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ انہوں نے اس موقع پر یہ بھی کہا کہ سیاسی فیصلے، عدالتوں اور سڑکوں پر نہیں ہوتے، یہ فیصلے پولنگ سٹیشنوں پر ہوں گے۔ انہوں نے یہ انکشاف بھی کیا کہ حکومت نے 28 جولائی کا عدالتی فیصلہ تسلیم کیا ہے۔ اس موقع پر یہ بھی کہا کہ میثاقِ جمہوریت پر عمل نہ کرنے سے سیاست اور سیاست دان بدنام ہو رہے ہیں۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 1 دن پہلے 

آج کل پاکستانی وزیر خارجہ آصف کے بیان پہلے گھر کی صفائی، کے حوالے سے میڈیا اور سرمایہ دارانہ سیاست میں ہیجان خیز صورت حال برپا ہے۔ صفائی توگھر کی ہونی چاہیے مگر ہمارے علاقائی ممالک بھارت اور افغانستان کی سیاست سماجیت اور اخلاقی غلاظت نے ان کے معاشروں کو تعفن زدہ بنادیا ہے۔ بھارت جو کہ سیکولرازم کا علمبردار تھا اور ماضی میں غیر وابستہ تحریک سے منسلک رہا ہے، نے بے پناہ فوجی ظاقت حاصل کی۔ اس کے علاوہ گزشتہ دہائیوں میں  تجارتی مفادات کے لئے  حکمران طبقے نے  مذہب کو بطور خاص  استعمال کیا ہے۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 1 دن پہلے 

یورپ کے بیشتر ممالک میں اسلامو فوبیا  اور دہشتگردی کی آڑ میں نت نئے قوانین و ضوابط  لاگو کرکے شہریوں کو یہ احساس دلانے کی کوششیں کی جارہی ہے کہ وہ محفوظ ہیں۔ اور انہیں ہر طرح کا تحفظ مہیا کرنے میں کسی قسم کی کوئی کمی نہیں رہنے دی جائے گی ۔ انہی کوششوں کے تحت یورپی یونین کے  بڑے اور اہم ترین ملک فرانس نے  جو اقدامات لیے ہیں وہ بظاہر تو دہشتگردی  و انتہا پسندی کے خاتمے کے لیے ہیں لیکن مبصرین کے نزدیک یہ نئے قوانین شہری آزادیوں پر قدغن لگانے یا انہیں محدود کرنے کے مترادف ہیں اور ان سے  غیر جمہوری آمرانہ قوّت کے استعمال کی بو بھی آتی ہے ۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 1 دن پہلے 

سیاست ایک بے رحم کھیل ہے۔ یہ تخت اور تختہ کا کھیل ہے۔ اس میں ہونے کو آئیں تو سو غلطیاں بھی معاف ہو جاتی ہیں اور پکڑی جائیں تو ایک غلطی بھی تخت کو تختہ میں بدل دیتی ہے۔ اس لیے یہ جوش نہیں ہوش کا کھیل ہے۔ یہ جذبات کا نہیں عقل و دانش کا کھیل ہے۔ یہ نہ سچ ہے نہ جھوٹ ۔ نہ مکمل سچ چل سکتا ہے نہ مکمل جھوٹ چل سکتا ہے۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 1 دن پہلے 

اچھے جمہوری معاشروں کی بنیادی خوبی یہ ہوتی ہے کہ وہ سیاسی ، سماجی ، معاشی ، قانونی ، انتظامی اور دیگر اصلاحات کے ساتھ آگے بڑھتے ہیں ۔ کیونکہ جمہوری نظام کی کنجی اصلاحات کا عمل ہی ہوتا ہے ۔ جمہوریت پر مبنی نظام میں فوری انقلاب نہیں آتے بلکہ وہ اصلاحات کو بنیاد بنا کراپنے لیے بہتر اور خوشحالی کا راستہ اختیار کرتے ہیں ۔ اصلاحات کا عمل جتنا زیادہ  مؤثر اور مضبوط  ہوگا،  اتنا ہی اس کی  ساکھ بھی قائم ہوگی ۔ لوگ عمومی طور پر ایسی اصلاحات کے ساتھ کھڑے ہوتے ہیں جن سے ان کے مفادات وابستہ ہوتے ہیں ۔  وہ ان ملکیت کو بھی قبول کرتے ہیں ۔ لیکن ہمارا مسئلہ یہ ہے کہ اصلاحات  پر ہمارا  یقین کمزور ہوتا ہے۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 2 دن پہلے 

1917 کے ماہ اکتوبر کا انقلاب انسانی تاریخ کا سب سے اہم واقعہ تھا جس میں پہلی دفعہ محنت کش محروم اور صدیوں سے ظلم و ستم اور استحصال کے شکار اکثریت نے براہ راست اقتدار پر قبضہ کیا۔ اور محنت کشوں کی ریاست کی تشکیل دی۔ عوام کے بنیادی وسائل روٹی کپڑا مکان علاج اور تعلیم کا حل کرنے کی عملی کوشش کی گئی۔ اس کے ساتھ روس میں ایجادات اور تحقیقات کے دور کا آغاز ہوا جس میں پہلی دفعہ کوئی شخص اس کرہ ارض کی حدود سے نکل کر خلاء میں داخل ہوا۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 2 دن پہلے 

تقسیم ہند سے قبل جموں کشمیر کی عوامی تحریک اور جنوبی افریقہ میں سیاہ فام عوام کی تحریک میں کافی مماثلت پائی جاتی تھی۔ جموں کشمیر کے عوام کی اکثریت مسلمانوں کی تھی لیکن حکمران خاندان غیر مسلم تھا جس نے بیس فی صد غیر مسلموں کواسی فی صد مسلمانوں پر مسلط کر رکھا تھا۔ لہذا مہاراجہ کی شخصی حکومت کے خلاف مسلمان اکثریت کی اپنے بنیادی انسانی و جمہوری حقوق کے لیے جد و جہد سو فی صد جائز تھی۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 2 دن پہلے 

آسٹریا میں کرائے گئے پارلیمانی انتخابات کے نتیجے میں ملک کی دائیں بازو کی دو انتہا پسند جماعتوں کی زبردست کامیابی نے جہاں ملک میں  غیر ملکیوں اور بالخصوص مسلمانوں کے خلاف تعصب و نفرت کو مزید بڑھا دیا ہے وہاں یورپ بھر میں اعتدال پسند سیاسی و عوامی حلقوں میں بھی ہلچل مچا دی ہے۔ یورپ کے دوسرے ملکوں میں بھی قیاس آرائیاں کی جا رہی ہیں کہ  اُن کے ہاں بھی اسی طرح کی انتہا پسندی عود نہ کرجائے ۔ 

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 2 دن پہلے 

17اکتوبر کو دنیا کے بیشتر ممالک میں’ سر سید ڈے‘ دھوم دھام سے منایا جاتا ہے۔ اس کی دو وجوہات ہیں۔ ایک تو سر سید احمد خان کی پیدائش 17اکتوبر 1817  کو ہوئی تھی اور دوسراسر سید احمد خان نے دنیا کی معروف یونیورسٹی علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کی تعمیر کراوئی تھی۔ دنیا بھر میں بسے علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کے سابق طا لب علم اپنے اپنے شہر میں علی گڑھ مسلم یونیورسٹی الومنی یا اولڈ بوائز یا تنظیم اور انجمن کے نام سے ادارے قائم کر رکھے ہیں۔ جس کے بینر تلے وہ ہر سال سر سید کی پیدائش کے موقع پر ’سر سید ڈے‘ منا کر ان کو خراج  عقیدت پیش کرتے ہیں۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 2 دن پہلے 

تیل کی بڑھتی ہوئی قیمتوں کے باعث دنیا بھر میں متبادل توانائی کے ذرائع ’’بائیو فیول‘‘ کو ایندھن کے طور پر استعمال کے فروغ کیلئے کوششیں تیز ہوگئی ہیں۔ ہالینڈ کے انرجی ریسرچ کے ڈائریکٹر اور توانائی کے امور کے ڈچ ماہرٹون ہاف نے دنیا کو وارننگ دی ہے کہ تیل اور توانائی کے دوسرے معدنی مسائل بڑھتے جارہے ہیں جس سے وسائل کے متبادل کی تلاش میں سست روی سے وقت ختم ہوتا جارہا ہے۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 3 دن پہلے 

ملک میں جہاں جمہوریت کے حوالے سے سوالات خدشات موجود ہیں۔ وہاں سیاسی قیادت بھی شدید خدشات اور غیر یقینی کی صوتحال سے دو چار ہے۔ میاں نواز شریف نا اہل ہو چکے ہیں۔ انہوں نے اپنی نا اہلی کے بعد اپنی و اپسی کے لیے بہت کوشش کی ہے لیکن شدید کوشش کے باوجود واپسی کے راستے نہیں کھل رہے۔ وہ اپنی جماعت کے دوبارہ سربراہ تو بن گئے ہیں لیکن پھر بھی معاملات پر ہر گزرتے دن کے ساتھ ان کا کنٹرول کمزور ہو تا جا رہا ہے۔ وہ اپنے آپ کو گیم میں ان رکھنے کی جتنی بھی کوشش کر رہے ہیں، اس کے منفی نتائج ہی سامنے آرہے ہیں۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 3 دن پہلے 

ہمارے ہاں اردو کے نفاذ کا معاملہ برصغیر کی آزادی کے ساتھ ہی شروع ہوگیا اور آغاز بھی تلخ ہوا۔ مشرقی پاکستان میں علیحدگی کے بیج اسی مہم کے سبب پنپنا شروع ہوئے۔ اردو کو برصغیر میں مسلمانوں کی شناخت کے طور پر پیش کیا جاتا ہے۔ یہ ایک نہایت کمزور دلیل ہے۔ اگر اردو مسلمانوں کی زبان ہے تو پشتو، پنجابی، سندھی، بلوچی، بنگالی اور شمالی علاقوں میں بولی جانے والی زبانیں کس کی ہیں۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 3 دن پہلے 

ایک عوامی پارلیمان کے اندر مسلم لیگ (ن) کے ایک سرکردہ ممبر پارلیمنٹ نے دس اکتوبر کو جس طرح کی جنونیت اور نفرت سے بھرپور تقریر کی تھی اس کے نتیجہ میں احمدیہ کمیونٹی ایک بار پھر بدترین خطرات میں گھری دکھائی دیتی ہے۔ اس تقریر کے مندرجات ایسے ہیں جو کہ واضع طور پر ملکی قوانین کی خلاف ورزی کی زد میں آتے ہیں۔  ملکی قانون نافذ کرنے والے اداروں اور عدلیہ سے فوری کاروائی کا تقاضہ کرتے ہیں۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 3 دن پہلے 

مفکرِ اسلام اور مصورِ پاکستان علامہ اقبال نے جہاں مروجہ جمہوریت کو جمہوری تماشا سے تعبیر کیا ہے وہاں سچے اور کھرے جمہوری نظام کو روحانی جمہوریت کا عنوان بخشا ہے۔ پاکستان میں ہماری سیاست دائرے میں گردش کرتی چلی آ رہی ہے- ہرچند برس بعد ہم گھوم پھر کر اُسی مقام پر آ پہنچتے ہیں جہاں سے چلے تھے- اس لاحاصل پاکوبی کا سب سے بڑا سبب خود ہمارے اپنے بالادست طبقات ہیں- جب تک اقتدار ان طبقات کے مخصوص مفادات کے نگہبانوں کی گرفت میں رہے گا، عوام کے دیدہ و دل کی نجات کی گھڑی مسلسل دور سے دور ہوتی چلی جائے گی- اقبال نے سچ کہا تھا:
مجلسِ ملت ہو یا پرویز کا دربار ہو
ہے وہ سلطاں غیر کی کھیتی پہ ہو جس کی نظر
جلالِ پادشاہی ہو کہ جمہوری تماشا ہو
جُدا ہو دیں سیاست سے تو رہ جاتی ہے چنگیزی

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 4 دن پہلے 

اسلام نے فرد کی اصلاح ہی کی فکر نہیں کی بلکہ معاشرے کی تعمیر اور ریاست کی اسلامی خطوط پر تشکیل کی بات بھی کہی ہے۔ اس لحاظ سے امت مسلمہ کی ذمہ داری ہے کہ وہ اپنی سرگرمیاں اِن تین نکات پر انفرادی واجتماعی ہر دو سطح پر جاری رکھیں۔ اِس سے قطع نظر کہ وہ کسی جماعت سے وابستہ ہیں یا نہیں۔ سب سے پہلے فرد خود اپنی ذات کے لیے فکرمندہو۔ اُس کے اندر یہ احساس جاگزیں ہونا چاہیے کہ وہ اسلامی تعلیمات و ہدایات کی روشنی میں اپنے شب و روز کے معاملات کو پروان چڑھائے گا۔

مزید پڑھیں

Praise and prayers for the great people of Turkey

One year ago, this day, the people of Turkey set an example by defending their elected government and President Recep Tayyip Erdogan against military rebels.

Read more

loading...