نگر نگر


  وقت اشاعت: 5 دن پہلے 

جواہر لعل نہرو یونیورسٹی ، نئی دہلی کے ہندوستانی زبانوں کے مرکز، اسکول آف لینگویجز، لٹریچر اینڈ کلچر اسٹڈیز  میں مہاراشٹر صوبہ کے کھام گاؤں ضلع بلڈانہ میں مقیم ڈاکٹر محمد راغب  دیشمکھ (صدر شعبۂ اردو ) جی ایس سائنس ، آرٹس اینڈ کامرس پی جی کالج کھام گاؤں ضلع بلڈانہ (ودربھ) امراؤتی یونیورسٹی امراؤتی ، ڈاکٹر محمد عاقب  (صدر شعبۂ اردو ) شریمتی کیشر بائی لاہوٹی آرٹس اینڈ کامرس پی جی کالج امراؤتی ضلع امراؤتی ، امراؤتی یونیورسٹی امراؤتی، اور مسٹر پانڈے مقیم امریکہ (اردو زبان کے سچے عاشق اور شیدائی) کا شعبۂ اردو میں پرتپاک استقبال کیا گیا۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 20 مارچ 2017

انسان کی فطرت ہے کہ وہ اپنے مستقبل کے لیے بڑا فکر مند رہتا ہے ۔ ہروقت وہ اس خیال میں مبتلا رہتا ہے کہ آنے والے وقت میں وہ کسی بھی قسم کی پریشانی میں مبتلا نہ ہو۔ اس کے لیے  وہ خود بھی فکر مندرہتا ہے اور متعلقین کو بھی اس جانب ابھارتا ہے۔ انسان کی یہ فکر مندی لائق تحسین ہے ۔ اس کے باوجود وہ نہیں جانتا ہے کہ آنے والا کل، آج ہی پر منحصر ہے۔ یعنی وہ آج جن سرگرمیوں میں مصروف عمل ہے یہی سرگرمیاں کل اس کو یا تو کامیاب بنائیں گی یا پھر ناکامی سے دوچار کریں گی۔ لیکن انسان کی عملی زندگی میں غفلت ، سرد مہری، لاپرواہی اور بے توجہی کو ترک نہیں کر پاتا۔ 

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 19 مارچ 2017

ایک طویل عرصہ کے بعد جامعہ عثمانیہ دوبارہ خبروں میں آرہی ہے لیکن اس مرتبہ کوئی منفی بات نہیں بلکہ عثمانیہ یونیورسٹی کے قیام کے سو برس کی تکمیل ہے۔ انگریزی اخبار دکن کرانیکل نے 9 مارچ کو ESL Narsimhan to enter Osmania University Campus after 7 years کی سرخی کے تحت خبر دی کہ ماضی میں عثمانیہ یونیورسٹی کے 78 ویں کانوکیشن میں ریاستی گورنر نے شرکت کی تھی۔ عثمانیہ یونیورسٹی گزشتہ سات برسوں کے دوران اور خاص طور پر علیحدہ تلنگانہ تحریک کے دوران زبردست سیاسی ہلچل کا مرکز رہی تھی ۔ تشکیل تلنگانہ کے بعد اب ریاستی گورنر پہلی مرتبہ جامعہ عثمانیہ جارہے ہیں۔

مزید پڑھیں

loading...

  وقت اشاعت: 15 مارچ 2017

ملک کی پانچ ریاستوں میں ہونے والے اسمبلی انتخابات کا مر حلہ اس وقت پورا ہو گیا جب کہ 11مارچ کو اس کے نتائج کا اعلان کیا گیا۔ ان نتائج کا سبھی کو بے صبری سے انتظار تھا۔ اس میں عام لوگ بھی شامل تھے اور وہ سیاسی جماعتیں بھی جو اپنی سیاسی بساط کے پھیلاؤ ، اس کے استحکام یا پہلے سے حاصل شدہ دائرہ کو برقرار رکھنا چاہتی تھیں۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 13 مارچ 2017

 8 فروری چہارشنبہ کا دن دوپہر کے ڈھائی بجے کا وقت تھا، ٹینک بنڈ پر ایک خاتون بظاہر چہل قدمی کرتی دکھائی دیتی ہے ۔ ٹریفک کا اژدھام ہے ، ہر کوئی اپنی اپنی منزل کی طرف رواں ہیں، ایسے میں وہ خاتون جو بظاہر چہل قدمی کر رہی تھی ٹینک بنڈ کی اس ریلنگ پر چڑھنے لگتی ہے ، جس کی دوسری جانب گہرا پانی ہے ۔ چلتے لوگ اس منظر کو دیکھنے کیلئے ٹھہر جاتے ہیں جیسے کوئی تماشہ شروع ہونے کو ہے اور ہوتا بھی ایسے ہی کہ دیکھتے دیکھتے وہاں ٹریفک جام ہونا شروع ہوتی ہے اور منٹوں میں یہ خبر لیک (Lake) پولیس کی پٹرولنگ پارٹی کو مل جاتی ہے اور پولیس جوان خاتون عملے کے ساتھ اس خاتون کو پکڑ لیتے ہیں جو خودکشی کے ارادے سے ٹینک بنڈ پہونچ کر چھلانگ لگانے جارہی تھی۔ یہ کوئی نئی بات اور تعجب کی خبر نہیں ۔ ہر سال سینکڑوں لوگ حسین ساگر کے پانی میں کودنے کیلئے ٹینک بنڈ کا رخ کرتے ہیں۔ گزشتہ سال ہی (222) لوگوں نے حسین ساگر میں کود کر خودکشی کرنے کی کوشش کی تھی جن میں سے لیک پولیس نے (180) لوگوں کی جان بچالی اور ان کی کونسلنگ کر کے انہیں گھر بھیج دیا۔ 

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 10 مارچ 2017

تبصرہ
نام کتاب :  حیدرآباد میں اردو ذرائع ترسیل و ابلاغ بیسویں صدی کی آخری دہائی میں
نام مصنف : مصطفی علی سروری
نام مبصر : ڈاکٹر محمد اسلم فاروقی
ابلاغیات اپنی بات دوسروں تک پہنچانے کا عمل ہے ۔ اور موجودہ زمانے میں اس کے لئے پرنٹ و الیکٹرانک میڈیا انٹرنیٹ اور سوشیل میڈیا کو استعمال کیا جارہا ہے ۔ ابلاغیات کا  ذریعہ صحافت بھی ہے ۔ صحافت ملک کا چوتھا ستون ملک کے عوام کی ذہن سازی کرتا  ہے۔ ایک ایسے دور میں جب کہ صحافت پر الزام ہے کہ وہ کاروباری ہوتی جارہی ہے اور اپنے اصل مقصد خبروں کی ترسیل کی راہ سے بھٹکتی جارہی ہے حیدرآبادی اردو صحافت کو ہم اس لحاظ سے عالمی سطح کی معیاری اور مقبول صحافت قرار دے سکتے ہیں کہ اکیسویں صدی کی دوسری دہائی میں یہاں سے عالمی سطح کے مقبول عام اردو اخبارات نکلتے ہیں۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 07 مارچ 2017

موجودہ زمانے میں لڑکیوں کے سامنے کئی مسائل ہیں۔ انہیں اعلیٰ تعلیم سے روکا جاتا ہے اور انہیں سماج میں کچھ خدمت کا موقع نہیں دیا جاتا۔ ایسے میں لڑکیوں کے لئے ضروری ہے کہ وہ اپنے والدین اور سماج کو ہم خیال بنائیں۔ دستیاب وسائل سے اعلیٰ تعلیم حاصل کریں اور تدریس طب اور دیگر شعبوں میں اپنی خدمات پیش کریں۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 27 فروری 2017

ہندوستان میں سیاسی، معاشی اورمعاشرتی بنیادوں پر بے شمار مسائل موجود ہیں اور بعض اوقات یہ مسائل اس قدر گہرا رنگ اختیار کر لیتے ہیں کہ ان سے نکل پانا خارج از امکان محسوس ہوتاہے۔ اس کے باوجود آئین میں لچک موجود ہے۔ ساتھ ہی  چہار طرفہ پھیلے مسائل  کا حل بھی بہت حد تک فراہم کیا گیا ہے۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 23 فروری 2017

اردو عالمی سطح پر مقبول زبان ہے اور اکیسویں صدی میں یہ دیگر زبانوں کے ساتھ انفارمیشن ٹیکنالوجی سے ہم آہنگ ہو کر زمانے کے تقاضوں کی تکمیل کر رہی ہے۔ اردو کی نئی نسل کو اردو زبان اور اس کے رسم الخط سے جوڑے رکھنا وقت کی اہم ضرورت ہے۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 13 فروری 2017

یہ بات بارہا کہی جا چکی ہے کہ ہندوستان میں بیشتر ایسے مقامات ہیں جہاں مسلمان اور سماج کے کمزور طبقات کے ووٹ حد درجہ اہمیت رکھتے ہیں۔ اس کے باوجود آغاز ہی سے مسلمانوں کی ایک بڑی کمزوری یہ ہے کہ وہ کسی بھی الیکشن میں اپنے مطالبات، حقائق پر نہیں رکھتے۔ حقائق سے مراد مخصوص علاقہ اور مقام پر جن مسائل سے وہ دوچار ہیں، سیاسی جماعتیں اور ان کے نمائندوں کے ذریعہ انجام دی جانے والی سرگرمی اور نتائج کے اعدادوشمار، ریاستی اسکیمیوں اور ان سے مستفید ہونے والے افراد کا تقابل اور قانون نے جو خصوصی و عمومی اختیارات فراہم کیے ہیں، انہیں اِن منتخب نمائندوں نےکس طرح نظر انداز کیا ، وغیرہ۔ ان کی بنیاد پر فراہم کیے جانے والے حقائق ۔

مزید پڑھیں

Threat is from inside

Army Chief General Raheel Sharif assured the nation that country’s borders are secure and the army is aware of threats and intrigues of the enemies. Speaking at an even

Read more

loading...