نگر نگر


  وقت اشاعت: 2 دن پہلے 

امریکہ سپر پاور سہی مگر وہ اس وقت معاشی طور پر 3 کھرب ڈالر کا مقروض ہے۔ اس نے افغانستان پر حملہ کرنے کیلئے تین کھرب پینتالیس ارب ڈالر کا بجٹ منظور کیا تھا اور آج ہی کی ایک خبر میں کہا گیا ہے کہ واشنگٹن کے ایک ریسرچ گروپ کے مطابق افغانستان میں امریکی فوجی کارروائی پر 800 ملین ڈالر سے ایک بلین ڈالر ماہانہ تک خرچ ہو رہا ہے۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 21 مارچ 2017

پاکستانی معاشرے میں جو پیچیدگیاں اور غلط روایات در آئی ہیں بدقسمتی سے ان پر کم توجہ دی گئی ہے مثال کے طور پر آپ نقاب یا پردے کے مفہوم کو لیجئے کہ آج کل پورے معاشرے اور حکومتی ایوانوں میں یہ مسئلہ موضوع بحث بنا ہوا ہے، اسے پوری طرح سلجھانا تو خیر ایک طرف،  بہت کم اہل علم ایسے ہیں جنہوں نے اس گتھی کو سلجھانے کی کوشش کی ہے۔ کسی چیز کا جائز یا ناجائز کہہ کر الگ ہو جانا تو صرف فتویٰ ہے مگر آج کے دور میں کام صرف فتوات سے نہیں چلتا، ضرورت ہے مشکلات اور مسائل کے حل تلاش کرنے کی۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 14 مارچ 2017

میرے ایک گزشتہ ایک کالم  کی اشاعت کے بعد  بہت سے قارئین کے ٹیلی فون موصول ہوئے جس میں انہوں نے اس معلوماتی کالم کی مبارکباد کے علاوہ اس موضوع پر مزید جاننے کی خواہش کا اظہار کیا۔ ان افراد کی گفتگو سے جہاں تک میں نے اندازہ لگایا ہے وہ اس دریافت اور نوع انسانی کی کامیابی کے بارے میں یہ جاننا چاہتے ہیں کہ انسانی کلوننگ کی جانب سائنس کا سفر کس تیز رفتاری سے جاری ہے۔ اس لئے اس موضوع پر کچھ مزید معتوضات پیش کروں گا۔ میرا یہ کالم آپ گزشتہ سے پیوستہ سمجھ لیجئے۔

مزید پڑھیں

loading...

  وقت اشاعت: 07 مارچ 2017

یہ واقعہ ان دنوں کا ہے جب میں بحیثیت اسسٹنٹ فلم ڈائریکٹر ”ناگ منی“ کا بیک گراﺅنڈ میوزک کمپوز کروا رہا تھا اور نثار بزمی فلم کے میوزک ڈائریکٹر تھے۔ وہ صبح سے شام تک ناگ منی کے ایک ایک فریم پر اپنے فن کے جوہر دکھا رہے تھے، جب آدھی سے زیادہ فلم کا بیک گراﺅنڈ میوزک بن چکا تو اچانک ایک دن انہوں نے ایورنیو اسٹوڈیو کے تھیٹر ہال میں مجھ سے پوچھا۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 28 فروری 2017

ایک تحقیق کے مطابق گزشتہ برس برطانیہ میں سامی مخالف حملے ریکارڈ سطح پر پہنچ گئے ہیں۔ نسلی منافرت کے واقعات (جن میں قتل کی دھمکیوں سے لے کر جسمانی حملے شامل ہیں) میں 30 فیصد اضافہ کے بعد ان کی تعداد 600 تک پہنچ گئی ہے۔ برطانیہ میں یہودیوں کو حفاظت کے معاملے پر مشورہ دینے والے کمیونٹی سیکورٹی ٹرسٹ کے مارک گارڈنر کا کہنا تھا کہ گزشتہ 25 برس (جب سے ایسے واقعات کی مانیٹرنگ کی جا رہی ہے) کے دوران یہ بدترین اعدادوشمار ہیں، اس کا کہنا ہے کہ بین الاقوامی تناؤ کا الزام برطانوی یہودیوں کو دیا جاتا ہے اور بعض اوقات ان پر حملے کئے جاتے ہیں جب کہ اس حوالے سے ان پر کوئی ذمہ داری عائد نہیں ہوتی۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 24 جنوری 2017

جرمنی کے دارالحکومت برلن میں قائم دنیا کی آبادی سے متعلق فاؤنڈیشن نے دنیا کی آبادی کے بارے میں اقوام متحدہ کی تازہ ترین پیش گوئی پر مشتمل ایک رپورٹ شائع کی ہے اس میں 2100 سال تک دنیا کی آبادی کی صورتحال کا احاطہ کیا گیا ہے۔ یہ  اہل دنیا اور ’’زمین داروں‘‘ کیلئے کوئی خاص اطمینان بخش نہیں ہے، خام مال کی کمی، زمینی درجہ حرارت میں مسلسل اضافہ اور دنیا کی بڑھتی ہوئی تیزی سے آبادی کی تکون نے اہل دنیا کیلئے اسے بری خبر سے تعبیر کیا ہے۔ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ رواں سال میں دنیا کی آبادی ساڑھے سات ارب تک پہنچنے کی امید ہے۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 17 جنوری 2017

وہ جو غالب نے کہا تھا کہ
قطرہ میں دجلہ دکھائی دے اور جز میں کل
کھیل لڑکوں کا  ہوا  دیدہ  بینا نہ ہوا
’’دیدہ بینا‘‘ جس کو عطا ہو جائے اس کیلئے دشواریاں ہی دشواریاں پیدا ہو جاتی ہیں۔  زندگی کے ہر موڑ پر دیدہ بینا جراحتوں کے سامان فراہم کرتا رہتا ہے۔ اصل معاملہ یہ ہے کہ زیست کی تہہ در تہہ معنویت کی تلاش بہت مہنگا سودا ثابت ہوتی ہے۔ ہر عہد میں وہ لوگ جن کو یہ نعمت عطا ہوتی ہے صلیب و دار کی منزلوں سے گزرتے رہتے ہیں ان کے پیرایہ اظہار میں وہ تیکھا پن ہوتا ہے کہ اسے ملمع سازوں، دنیا پرستوں اور جاہ پرستوں کی ظاہرداری برداشت ہی نہیں ہو سکتی۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 10 جنوری 2017

غالباً 1932 کا واقعہ ہے۔ ڈی اے وی کالج لاہور میں تاریخ کے استاد لالہ ابلاغ رائے نے ایک مقالہ شائع کیا۔ یہ مقالہ ہندوستان کے مشہور اخبار ٹربیون میں شائع ہوا اس میں انہوں نے اپنی تحقیقات پیش کرتے ہوئے یہ ثابت کیا کہ جنوبی امریکہ کی دریافت کرنے والے ایک ہندو مذہبی رہنما تھے جن کا نام ارجن دیو تھا اور یہ جو ملک ارجنٹینا ہے انہی ارجن دیو کے نام پر ہے اور جیسا کہ آپ جانتے ہیں ارجنٹینا جنوبی امریکہ کا ایک ساحلی ملک ہے ۔۔۔۔۔ لالہ ابلاغ رائے کا یہ مقالہ شائع ہوا تو مسلمانوں میں کھلبلی مچ گئی۔ یہ کھلبلی یہاں تک بڑھی کہ مسلمانوں کو یوں نظر آنے لگا جیسے ہندو ان سے بازی لے گئے۔ ان حالات میں مولانا ظفر علی خان اٹھے اور انہوں نے مسلمانوں کے جذبات کی تسکین کا سامان فراہم کیا۔ مولانا ظفر علی خان نے اپنے اخبار ’’زمیندار‘‘ میں ایک مضمون شائع کیا جس میں انہوں نے یہ ثابت کیا کہ جنوبی امریکہ کی دریافت ایک مسلم درویش حضرت شیخ چلی رحمتہ اللہ علیہ نے کی تھی۔ چنانچہ جنوبی امریکہ کا ایک ملک آج تک انہیں کے نام پر منسوب چلا آ رہا ہے۔ اس ملک کا نام ’چلی‘ ہے۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 03 جنوری 2017

ہم نے گزشتہ ستر (70) سال میں عجیب عجیب دور دیکھے ہیں۔ وہ دور بھی دیکھا ہے جب اقتدار بہرہ تھا اور کسی کی بات سنتا ہی نہ تھا۔ وہ دور بھی آیا جس میں اقتدار کان تو رکھتا تھا مگر عقل و ہوش سے بے بہرہ تھا۔ پھر وہ حکمران بھی آئے جنہوں نے انسانوں کو ذلیل کرنے کا نام انسانی عظمت رکھ دیا اور اہل وطن کیلئے وہ قہر الٰہی بن گئے اور پھر وہ دور بھی آیا جس میں پاکستان کے اصل مسائل کا چرچا ہوا لیکن یہ سورج بھی زیادہ دیر تک چمک نہ سکا اور آج ہم ایک ایسے دور میں داخل ہو چکے ہیں جو سیاسی، سماجی، اقتصادی، صحافتی اور جمہوری آزادیوں کے اعتبار سے..... گزشتہ ہفتے کی ایک خبر کے مطابق پاکستان کے ایک سابق وزیراعظم یوسف رضا گیلانی نے انٹرویو دیتے ہوئے کہا ہے کہ ’’پاکستان میں مجموعی قومی آمدنی کا صرف 2 فیصد تعلیم پر خرچ کیا جاتا ہے جو ایشیا میں سب سے کم ہے‘‘۔ ہمارے ملک کے مسائل میں سے تعلیم ایک بنیادی مسئلہ ہے جس کے ساتھ باقی کے مسائل بھی جڑے ہوئے ہیں جیسا کہ سیاسی، سماجی، اقتصادی، جمہوری اورصحافتی۔ آج کا کالم صحافت کے حوالے سے سپرد قلم کر رہا ہوں۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 27 2016

لیجئے ! ایک نئی تحقیق سامنے آئی ہے۔
جو مرد تیس سال سے پہلے ہی گنجے پن کا شکار ہو جاتے ہیں ان کو عارضہ قلب ہونے کا زیادہ خطرہ ہوتا ہے۔ یہ بات برطانوی پریس کی ایک رپورٹ میں کہی گئی ہے۔ لندن کے اخبار انڈیپینڈنٹ کی ایک حالیہ اشاعت میں اس نئی رپورٹ کے حوالے سے کہا گیا ہے کہ جلد کے امراض کے ماہرین کی تحقیق سے پتہ چلا ہے کہ تیس برس کی عمر سے پہلے بالوں کے گرنے اور بعد کی عمر میں دل کا دورہ اور انجائنا کا آپس میں گہرا اور واضح تعلق ہے۔ دوسرے لوگوں کے مقابلے میں جلد گنجے ہونے والے افراد کے دل کی شریانوں میں رکاوٹ کا زیادہ خطرہ رہتا ہے۔ ان ماہرین کے خیال میں اس تعلق کا سبب مردوں کے ہارمون کا بڑھنا ہو سکتا ہے اور یہ کہ مردوں کے ہارمون بالوں کو متاثر کر سکتے ہیں۔ اس سے بال چھوٹے اور کمزور ہوتے جاتے ہیں اور پھر گنجا پن غالب آ جاتا ہے۔ نئی تحقیق بتاتی ہے کہ انہی ہارمون کے بڑھنے سے ہائی بلڈ پریشر اور ہائی کولیسٹرول بھی ہو جاتا ہے۔

مزید پڑھیں

Threat is from inside

Army Chief General Raheel Sharif assured the nation that country’s borders are secure and the army is aware of threats and intrigues of the enemies. Speaking at an even

Read more

loading...