نگر نگر


  وقت اشاعت: 1 دن پہلے 

یوں تو پوری دنیا میں سیاسی، سماجی اور معاشی سوچ میں تیزی سے اتاراور چڑھاؤ دیکھا جارہا ہے۔ لیکن پچھلے کچھ سالوں سے پوری دنیا کی سیاست میں ایک بھونچال سا آیا ہوا ہے اور جو تھمنے کا نام ہی نہیں لے رہا۔ کہیں ایسے لوگ لیڈر چنے جارہے ہیں جو اپنی مفاد اور بنیاد پرستی کے لئے مقبول ہیں تو کہیں دھاندلی کے لئے بدنام ہیں۔ اگر دیکھا جائے تو براہ راست یا بالواسطہ طور پر ان لیڈروں کو ان کے ملک کے لوگ ہی منتخب کر رہے ہیں یا پھر وہ لوگوں کی جذبات سے کھیل کر انہیں بیوقوف بنا رہے ہیں۔ اب مسئلہ یہ ہے کہ الزام کسے دیا جائے۔ ان لوگوں کو جو ایک سرپھرے انسان کو اپنا لیڈر چن رہے ہیں یا ملک کے اس سسٹم کو کہ  لوگ جس میں مجبور ہیں۔ اس صورت حال نے  آج دنیا بھر میں پریشانی اور خوف کا ماحول پیدا کیا ہے۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 12 جنوری 2017

ذہنی خرابی اور دماغی صحت وغیرہ ایسے امراض ہیں جن کی گرفت میں آنے کے بعد انسان اپنے آپ میں پریشان اور دوسروں سے الگ تھلگ ہو جاتا ہے۔ اس کے علاوہ بہت سارے لوگ اس مرض کو سمجھنے سے قاصر ہوتے ہیں جس سے وہ مزید پریشانیوں میں الجھ جاتے ہیں۔ اس لئے متعدد معاشروں میں اسے  سماجی برائی قرار دیا جاتا ہے۔ یوں اس مرض کا شکار لوگوں کے لئے  زندگی یا تو عذاب بن جاتی ہے یا وہ تنگ آکرخود کشی کرلیتے ہیں۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 05 جنوری 2017

2016  کئی معنوں میں ایک پریشان کن اور مایوس کن سال کہا جارہا ہے۔ اور 2017 کی آمد پر لوگوں میں ایک امید کی کرن بھی جاگی ہے۔ اگر دیکھا جائے تو 2016 میں پوری دنیا میں کئی ایسے حادثات اور واقعات ہوئے ہیں جس کے اثرات سے ہر آدمی کہیں نہ کہیں دوچار ہوا ہے۔ مثلاً برطانیہ کے لوگوں کا ریفرینڈم میں یورپ سے باہر ہونے کا فیصلہ، شام کی خانہ جنگی اور باغیوں کی شکست، ڈوناڈ ٹرمپ کا امریکی صدر کا الیکشن جیتنا،  روس اور امریکہ میں بڑھتی ہوئی کشیدگی، پاناما پیپرز کے انکشافات، ترکی میں فوجی بغاوت کی کوشش، ہندوستان میں نوٹ بندی، عظیم باکسر محمد علی کا انتقال، کیوبا کے انقلابی لیڈر فیدل کاسترو کی موت ، ملکہ برطانیہ کی 90 ویں سالگر ہ وغیرہ۔ 2016  کافی اہم خبریں لے کر آیا تھا۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 30 2016

کرسمس کے موقع پربرطانیہ میں دو روز کی چھٹّیاں ملتی ہیں۔ ان سے فائدہ اٹھا کر زیادہ تر لوگ سیر و تفریح کے لئے دوسرے ممالک چلے جاتے ہیں۔ پچھلے دنوں میں نے بھی اس کا فائدہ اٹھا کر چار دنوں کے لئے چھٹّی گزارنے کی غرض سے( Amsterdam) ایمسٹرڈیم چلا گیا۔ یوں بھی ایمسٹرڈیم جانے کے لئے میں کچھ ہفتے سے کافی پر جوش تھا کیونکہ لندن کی تیز رفتار اور مصروف زندگی سے راحت پانے کے لئے اس سے بہتر اور کوئی راستہ نہیں تھا۔ ویسے بھی انگریز اور یورپ کے دیگر ممالک کے لوگ چھٹّیاں گزارنے اور دنیا کے مختلف مقام پر جانے کے لئے ہمیشہ پر جوش ہوتے ہیں۔ یہ لوگ اپنی چھٹّیوں کے ذریعہ دوسرے ملکوں کی ثقافت کو جاننے کے شوقین ہوتے ہیں۔ اس کے علاو ہ وہاں کی آب و ہوا اور کھانے پینے کا بھی کافی لطف لیتے ہیں۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 22 2016

انتظار حسین نے ٹی ہاؤس کے ساتھ ناصر کاظمی کے قریبی تعلق کا تذکرہ بہت خوبی کے ساتھ اپنی یادوں کی کتاب ’چراغوں کا دھواں‘ میں کردیا ہے۔ لیکن پاک ٹی ہاؤس کے ساتھ انہوں نے بھی پورا انصاف نہیں کیا۔ بلکہ ان کی کتاب پڑھنے کے بعد جب میں نے اس جانب توجہ دلائی کہ آپ نے سراج صاحب کا ذکر نہیں کیا تو ذرا سا جِز بز ہوکے انہوں نے کہا کہ کس کس کا ذکر کرتا میں آخر؟

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 22 2016

نوآبادیت Colonialism بنیادی طور پر طاقتور سامراجی قوتوں کا کمزور اقوام اور وسائل پر قبضے کا وہ رجحان ہے جس کی تاریخ صدیوں پر محیط ہے۔ تاہم اس کی شدت سولہویں صدی سے بیسویں صدی کے وسط تک پوری دنیا میں آشکار ہوئی  جس میں یورپ سے فرانس، سپین، پرتگال، اٹلی اور برطانیہ وغیرہ جیسی سامراجی قوتوں نے توسیع پسندی کے تحت براعظم امریکہ ،  افریقہ، آسٹریلیا اور ایشیا تک پھیلی ہوئی انسانی آبادی اور ان کے سیاسی و معاشی وسائل پر قبضہ کرتے ہوئے ان کو نوآبادیات میں تبدیل کر دیا اور استحصال کا ہر حربہ آزمایا گیا۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 20 2016

کرسمس کا تہوار دنیا کے لگ بھگ تمام ملکوں میں منایا جاتا ہے۔ کہیں یہ تہوار مذہبی طور پر تو کہیں لوگ روایتی طور پر مناتے ہیں۔ زیادہ تر عیسائی مذہب کے ماننے والوں کا عقیدہ ہے کہ یسوع مسیح 25 دسمبر کو پیدا ہوئے تھے۔ لیکن عیسائی مذہب کے مقدّس کتاب بائبل میں یسوع مسیح کی ولادت کی تاریخ کا کوئی ذکر نہیں پایا جاتا ہے۔  انسائیکلو بریٹینیکا کے مطابق رومن کے دور میں 25 دسمبر کو سورج کی پیدائش کی سالگرہ منائی جاتی تھی۔  اسی لئے شاید گرجا گھروں کے رہنماؤں نے اس دن کو یسوع مسیح کی ولادت کا دن مان لیا جو اب بھی بر قرار ہے۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 16 2016

جب سے طیب اردگان ترکی کے صدر منتخب ہوئے ہیں تب سے ہی ترکی آفتوں میں گھِرا ہؤا ہے۔ کبھی کرد گروپ کا خود کش حملہ تو کبھی داعش کا خوف۔ کبھی فوجی بغاوت تو کبھی اپوزیشن  کی سازش۔ اور تو اور شام کی خانہ جنگی کی وجہ سے ترکی پر مسلسل جنگ کے بادل منڈلا رہے ہیں۔ اب تو امریکہ سمیت مغربی ممالک نے بھی ترکی سے دھیرے دھیرے دوریاں پیدا کرنا شروع کردی ہیں ۔ کہا جاتا ہے کہ اس کی ایک وجہ طیب اردگان کی اسلامی اقدار پر اصرار اور عوامی مقبولیت ہے۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 07 2016

ربیع الاول کا مہینہ آتے ہی مسلمانوں میں خوشی کی لہر دوڑ جاتی ہے کیونکہ اسی مہینے میں حضرت محمد ﷺ دنیا میں تشریف لائے تھے۔ مختلف ممالک میں مسلمان جلسے کرتے ہیں اور جلوس نکالتے ہیں ۔  اگر دیکھا جائے تو اسلام  میں جشنِ سالگرہ اور اس سے منسلک رسومات کو نہ  تو ترجیح دیا گئی ہے اور نہ ہی اس کے متعلق کوئی حدیث پائی جاتی ہے۔ تاہم بہت سے مسلمان اس موقع پر خوشی منانا درست سمجھتے ہیں اور وہ یہ سمجھتے ہیں کہ حضرت محمد ﷺ کو خراجِ عقیدت پیش کرنے کا یہ بہترین موقع ہے۔ لیکن بہت سارے مسلمان اس موقع پر جلوس نکالنا ، موسیقی بجانا، خوشی منانا اور کیک کاٹنا اسلامی عقائد کے خلاف مانتے ہیں ۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 01 2016

25 نومبر کو فیڈل کاسترو کا انتقال ہوگیا۔ اس کے بعد کیوبا کے لوگوں میں غم و افسوس کی لہر دوڑ گئی اور حکومت نے9 دن تک ملک میں سوگ منانے کا اعلان کیا ہے۔ فیڈل کاسترو ایک انقلابی اور متنازعہ شخصیت تھے جس کی وجہ سے دنیا کے لیڈر اور تاریخ دان ان کے بارے میں ملی جلی رائے رکھتے ہیں۔ فیڈل کاسترو کے حامیوں کا ماننا ہے کہ وہ کیوبا میں استحکام لائے۔ جبکہ فیڈل کاسترو کے مخالفین کا کہنا ہے کہ انہوں نے ایک جابرانہ حکومت کو بدل کر دوسری آمرانہ حکومت  قائم کی۔

مزید پڑھیں

Threat is from inside

Army Chief General Raheel Sharif assured the nation that country’s borders are secure and the army is aware of threats and intrigues of the enemies. Speaking at an even

Read more