تبصرے تجزئیے

  • حکومت کے خلاف اے پی سی، ناکام؟

    مختلف حکومتی ترجمان ببانگ دہل یہ دعویٰ کررہے ہیں کہ بدھ کو مولانا فضل الرحمن کی دعوت پر ہونے والی آل پارٹیز کانفرنس یکسر ناکام رہی۔ یہ کہہ کرنہ جانے نمبر بنا رہے ہیں یا اپنے سیاسی آقاؤں کو خوش کر رہے ہیں کہ یہ تو محض نشستند گفتند و برخاستند تھی۔ یہ بات درست ہے کہ مولانا فضل [..]مزید پڑھیں

  • امیر قطر پاکستان کیوں آئے؟

    12 مئی کو خلیج عمان میں سعودی اور اماراتی تیل ٹینکروں پر مبینہ حملے کے بعد مشرق وسطیٰ میں پائی جانے والی کشیدگی انتہا کو پہنچ گئی۔ ٹھیک ایک ماہ بعد 12 جون کو ناروے اور جاپان کے ٹینکر سمندری مائنز کی زد میں آئے۔ امریکہ، سعودی عرب اور عرب امارات نے الزام ایران پر دھرا۔ 18 جون کو ایر [..]مزید پڑھیں

  • مولانا فضل الرحمان کی ازخود چلائی ’عوامی تحریک‘

    مذہب کے نام پر سیاست کرنے والی جماعتوں سے خوف آتا ہے۔ مولانا فضل الرحمن کی سیاسی بصیرت کا مگر دل سے معتقد ہوں۔ بہت کم لوگوں کو اس حقیقت کا احساس ہے کہ وہ مزاحمت کی اس سیاست کے جانشین ہیں جو برطانوی استعمار کے عروج کے دنوں میں ہمارے علمائے کرام کے ایک گروہ نے انتہائی ثابت قدمی سے [..]مزید پڑھیں

loading...
  • اب مریم نے کیا کردیا؟

    ہفتے کے روز مریم نواز کی پریس کانفرنس نے ایک لحظے کے اندر ہی سیاسی گفتگو کا رُخ بدل دیا اور ہر کسی کی توجہ اس جانب تھی کہ انہوں نے کیا کہا ہے اور کیا نہیں، اور کیا کہنا چاہا اور کیا نہیں۔ ویسے مریم نواز کو آج کل اپنے والد کی آواز کے ساتھ ساتھ ان کی وارث بھی تسلیم کیا جارہا ہے۔ ی [..]مزید پڑھیں

  • بجٹ عوام دوست، مگر نادان دوست

    بجٹ آگیا! اب آپ کہیں گے کہ بجٹ ہم ہی پر آکر گرا ہے اور یہ ہمیں یوں بتا رہا ہے جیسے خبر دے رہا ہو۔ نہیں صاحب ایسا نہیں، یوں سمجھیں ہم نے ویسا ہی بیان کیا ہے جیسے کوئی میت ہوتے ہی لواحقین کرتے ہیں ’ارے ابّا چلے گئے ے ے ے ے‘۔ یہاں اہل خانہ، اہل محلہ اور خود ابّا مرحوم کو بتانا مق [..]مزید پڑھیں

  • تجزیے کا تجزیہ

    ہمارا تجزیہ خام کیوں ہے؟ گزشتہ دنوں سیگمنڈ فرائیڈ کے چند مضامین پڑھے۔ وہی فرائیڈ، جسے بابائے نفسیات کہا گیا ہے۔ ایرک فرام کی ‘خرد مند معاشرہ، (The Sane Society) کو بھی ایک بار پھر دیکھا۔ فرائیڈ نے ‘پاپولزم‘ کو موضوع بنایا جو عہدِ حاضرکی سیاست کا بھی اہم مسئلہ ہے۔ قضیے کی بن [..]مزید پڑھیں

  • سر باجوہ، نہ کریں!

    سپہ سالار جنرل قمر باجوہ کی ریٹائرمنٹ میں ابھی کئی مہینے باقی ہیں لیکن اسلام آباد کی اقتدار کی غلام گردشوں سے اندر کی خبر ڈھونڈ لانے والے چیتے رپورٹر اور سارے ستارہ شناس تجزیہ نگار مصر ہیں کہ ایکسٹینشن پکی۔ سپہ سالار کے مزاج اور ان کی باجوہ ڈاکٹرائن سے واقف دفاعی تجزیہ نگار ی [..]مزید پڑھیں

  • ’ہم زمانے میں خدا جانے کہاں موجود ہیں‘

    تصوف کے حوالے سے رویم کہتے ہیں کہ تصوف کا مطلب نفس کو  اللہ کی مرضی پر چھوڑ دینا ہے۔ ،شبلیؒ نے کہا کہ صوفی وہ ہوتا ہے جو دونوں جہاں میں بجز اللہ عزوجل کے اور کسی کو نہ دیکھے۔ذوالنون مصری نے لکھا کہ صوفی وہ لوگ ہیں جنہوں نے سب کچھ چھوڑ کر خدا کو اپنا لیا۔ تصوف کو کسی دانشور نے ن [..]مزید پڑھیں

  • ’احترام عمران آرڈی ننس‘

    جو کام بہت پہلے ہوجانا چاہیے تھا بہت تاخیر سے ہوا۔ المیہ یہی ہے کہ ہم قومی اہمیت کے فیصلے بھی وقت پر نہیں کرتے لیکن اگر ہم ہرکام وقت پر کرنے لگیں تو پھر ’دیر آید درست آید والا محاورہ کون استعمال کرے گا۔ سو ہم جمہوریت کے ساتھ ساتھ فی زمانہ شاید محاوروں کے بقا کی جنگ بھی لڑ رہے [..]مزید پڑھیں

  • ابن بطوطہ کے مولد سے

    کوئی چوبیس سال بعد دانے پانی کی کشش نے پھر سے بحر اوقیانوس کے کنارے پر لا پٹکا ہے۔ اس سے پہلے اس سمندر کی، جسے اہلِ عرب ”اطلس“ کے نام سے پکارتے ہیں، زیارت مغربی افریقہ کے سواحل پر ہوئی تھی۔ اس بار اس خادم کا ہفتے بھر کا قیام شمالی افریقہ کے ملک مراکش کے شہر طنجہ میں ہے۔   [..]مزید پڑھیں