تبصرے تجزئیے

  • عمران فاروق کی کہانی

    یہ غالباً ستمبر 1999کی بات ہے جب ایک صاحب جن کا پاسپورٹ پر نام کچھ اور درج تھا، ہیتھرو ایئرپورٹ پر اترے۔ وہاں پہلے سے لندن پولیس اور امیگریشن حکام کو اطلاع تھی کہ یہ کسی دوسرے نام سے سفر کررہے ہیں اور یہاں سیاسی پناہ کے لئے آ رہے ہیں۔ ان کے کچھ ساتھی اور وکیل بھی پہلے سے موجود تھ [..]مزید پڑھیں

loading...
  • ان پر نہیں، خود پر ترس کھائیے

    تھرپارکر کے ایک گاؤں میں دونوں بازؤں سے محروم ایک مڈل پاس لڑکی اپنی جھونپڑی میں تیس بچوں اور تیس بچیوں کا اسکول تنِ تنہا چلا رہی ہے۔ اس کا نام حسینہ ہے۔ واقعی یہ کام کرنے والی حسینہ سے بڑھ کے دنیا میں اور کون حسین ہوسکتا ہے۔ ہم سے بیشتر افراد جسمانی معذوروں کے لیے ایک لمحاتی [..]مزید پڑھیں

  • ہمارا انتخابی نیلام گھر

    وزیر اعظم عمران خان کی سیاسی دانشوری بےمثال ہے۔ وہ پاکستان میں ہر آنے والے مہمان کو یہاں سے الیکشن جیتنے کی خوش خبری سنا دیتے ہیں۔ کچھ عرصہ پہلے بھارتی شہری نوجوت سدھو کو کچھ ایسا کہہ کر متاثر کر رہے تھے کہ وہ پاکستان میں کتنے مقبول ہیں۔ سدھو کے بارے میں شاید یہ کہنا اس وجہ [..]مزید پڑھیں

  • ہمارے وزیر اعظم بہت اچھے ہیں

    آپ کو بتانا تھا کہ درویش نے عمران خان صاحب کے بارے میں اپنی رائے بدل لی ہے۔ خدا وزیر اعظم کی حفاظت فرمائے اور ان کی حکومت کو دوام بخشے۔ فطری کاہلی آڑے آئی ورنہ اصولی طور پر تو تحریک انصاف کی حکومت قائم ہوتے ہی اطاعت کا اعلان واجب تھا کہ یہی ہماری روایت ہے اور بزرگوں کا بتایا ہوا ا [..]مزید پڑھیں

  • ’غداروں‘ کی تاریخ

    کتنے افسوس کی بات ہے کہ ہم آج تک جنرل پرویز مشرف کو ہی غدار سمجھتے تھے۔ اور اس لیے سمجھتے تھے کہ اس نے ایک منتخب حکومت کاتختہ الٹا تھا، منتخب وزیراعظم کو اقتدار سے الگ کیا، اسے حراست میں لیا اور جلاوطنی پر مجبور کیا۔ جنرل پرویز مشرف کے دیگر جرائم ہیں کہ انہوں نے انسانی حقوق پام [..]مزید پڑھیں

  • طاقت کے مراکز میں ایک نیا مکالمہ

    پاکستان کا مسئلہ ایک اچھی طرز حکمرانی ہے۔ ایسی حکمرانی جو منصفانہ اور شفاف بھی ہو اور لوگوں کی بنیادی ضرورتوں کو پورا کرتے ہوئے اس کی ساکھ اور صلاحیت بھی بہتر ہو۔ ہم عمومی طور پر حکمران طبقات پر حکومت یا نظام کی ناکامی پر بہت زیادہ  تنقید کرتے ہیں۔لیکن ہمیں یہ بھی سمجھنا ہو [..]مزید پڑھیں

  • مسئلہ کشمیرپر ہندوستان کی ہٹ دھرمی

    ترکی کے صدر طیب ارد گان کے پاکستان کی حمایت اور مسئلہ کشمیر کے پرامن حل کے بیان پر ہندوستان نے حسب معمول پریشانی کا اظہار کرتے ہوئے کشمیر کو اپنا اندرونی معاملہ قرار دینے کی کوشش کی ہے۔ کانگریس کی حکومتوں کے وقت انڈیا کے سرکاری بیانات میں کشمیر کے حوالے سے اٹوٹ انگ کا لفظ اکثر ا [..]مزید پڑھیں

  • سیاست، ایک غلیظ کھیل کیوں بن گیا؟

    گزشتہ چند ہفتوں کے دوران پیش آنے والے بدنما واقعات نے ایک بار پھر اس بات کی طرف توجہ دلائی کہ جمہوری مزاج کو فروغ دیتے ہوئے جلد از جلد نمائندہ حکمرانی کو مضبوط بنایا جائے۔ شروع کرتے ہیں اس واقعے سے جس میں ایک وفاقی وزیر ٹی وی شو کے دوران میز پر فوجی بوٹ رکھتے ہوئے حزبِ اختلاف [..]مزید پڑھیں