معزز صارفین ہماری ویب سائٹ اپ ڈیٹ ہو رہی ہے۔ اگر آپ کو ویب سائٹ دیکھنے میں دشواری پیش آرہی ہے تو ہمیں اپنی رائے سے آگاہ کریں شکریہ

شہر شہر


  وقت اشاعت: 15 فروری 2018

پاکستان میں انسانی حقوق کی توانا آواز اور ریاست کے مقتدر اور طاقتور ستونوں کو بے خوفی سے چیلنج کرنے والی عاصمہ جہانگیر بھی اتوار11 فروری کو اُس انجانی دنیا میں چلی گئیں جہاں سے کبھی کوئی لوٹ کر نہیں آیا۔ وہ بغاوت، جرأت اور بے خوف جدوجہد کا استعارہ تھیں۔ یہ تینوں صفات انہیں تیسری نسل میں منتقل ہوئی تھیں۔ انہوں نے نہ صرف اپنے پرکھوں کی ان صفات کی بے جگری کے ساتھ حفاظت کی، بلکہ کسی حد تک یہ ’’جراثیم‘‘ نئی نسل میں منتقل کرنے میں بھی کامیاب رہیں۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 15 فروری 2018

لودھراں کے الیکشن نے ایک عجیب بحث شروع کر دی ہے۔ یہ کس کی جیت ہے۔ ہار تو جہانگیر ترین کی ہے۔ بیچاری تحریک انصاف تو ایسے ہی رگڑے میں آگئی ہے۔ یہ سیٹ نہ کبھی تحریک انصاف کی تھی اور نہ ہو گی۔ یہ جہانگیر ترین کی سیٹ تھی اس لئے ہار جہانگیر ترین کی ہے۔ بہر حال اس ہار نے تحریک انصاف کی سیاسی ساکھ کو ناقابل تلافی نقصان پہنچایا ہے۔ بلکہ ایک ایسا ماحول بنا دیا ہے جس نے تحریک انصاف کی سیاسی بقا پر سوالیہ نشان کھڑے کر دیئے ہیں۔ سوال تو یہ بھی پیدا ہو گیا ہے کہ اگر تحریک انصاف لودھراں کا انتخاب نہیں جیت سکتی تو اگلا انتخاب کیا خاک جیتے گی۔ اور اگر تحریک انصاف کی پنجاب میں یہ حالت تو آگے کیا ہوگا۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 04 فروری 2018

دنیا میں طرز حکمرانی اور عوامی مفادات پر مبنی حکومت کا بحران محض پاکستان تک محدود نہیں بلکہ ہمیں جنوبی ایشیائی ممالک بھی اس مرض میں مبتلا نظر آتے ہیں ۔ یہ ہی وجہ ہے کہ ان تمام ملکوں میں کامیاب طرز حکمرانی  کے تمام تر دعوؤں کے باوجود ہمیں عوام کی ترقی اور خوشحالی کے سماجی ، سیاسی اور اقتصادی اشاریے یعنی اعداد وشمار پر  کافی سنگین نوعیت کے مسائل غالب ہیں ۔ دنیا میں جو بھی ادارے ملکوں کی ترقی کے بارے میں  رپورٹس جاری کرتے ہیں اس میں ان تمام ملکوں کی حکمرانی کے بحران اور عوامی مفادات سے ٹکراؤ کے تضادات کو نمایاں کرتے ہیں ۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 02 فروری 2018

زندگی کے معمولات میں سے اپنی اپنی پسند ڈھونڈنا اور اس سے حظ اٹھانے کا ملکہ بھی ایک طرح کی خوش نصیبی ہے۔ یوں تو محبوب کا ہرجائی ہو جانا کسی بھی چاہنے والے کے لئے قیامت سے کم نہیں لیکن پروین شاکر نے اس میں بھی ایک خوبی ڈھونڈ نکالی:
وہ کہیں بھی گیا لوٹا تو میرے پاس آیا
بس یہی بات اچھی ہے میرے ہرجائی کی

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 29 جنوری 2018

پاکستان میں عدالتی اصلاحات کے حوالہ سے ایک شور ہے۔ شاید پاکستان کی تاریخ میں پہلی بار عدالتی اصلاحات کی کمی محسوس کی جا رہی ہے۔ یہ کہنا بھی غلط نہ ہوگا کہ عدلیہ اس وقت عوام کے کٹہرے میں ہے۔ لوگ عدلیہ پر بات کر رہے ہیں۔ عدلیہ کی کارکردگی پر بات ہو رہی ہے۔ خوشی کی بات تو یہ ہے کہ عدلیہ کے ذمہ داران خود بھی عدالتی اصلاحات پر بات کر رہے ہیں۔ نظر آرہا ہے کہ انہیں بھی احساس ہے کہ عدالتی اصلاحات کے بغیر اب کام نہیں چلے گا۔ بہت ہو گئی۔ عوام کی بھی بس ہو گئی ۔ اب اس نظام کو مزید ایسے نہیں چلا یا جا سکتا۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 28 جنوری 2018

پاکستان بنیادی طور پر اپنی فکری سوچ اور فہم کی تلاش میں سرگرداں ہے ۔ کیونکہ آج کا پاکستان وہ پاکستان نہیں جو عملی طور پر قائد اعظم محمد علی جناح کے ذہن کا خاکہ تھا ۔ قائد اعظم اس پاکستان کو اسلامی ، فلاحی، جمہوری اور قانون کی بالادستی پر مبنی ریاست دیکھنے کے خواہش مند تھے ۔ لیکن آج کا پاکستان عملی طور پر قائد اعظم کی سوچ ، فکر اور افکار کے برعکس چل رہا ہے اور لگتا ایسا ہے کہ ہم ابتدائی طورپر یا قائد اعظم کے بعد اپنی منزل کھو بیٹھے ہیں ۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 27 جنوری 2018

استعفوں کی باز گشت ایک مرتبہ پھر سنائی دے رہی ہے۔ یہ باز گشت بھی عجیب ہے کہ ہے بھی اور نہیں بھی۔ استعفوں ہیں اور نہیں بھی۔ تحریک انصاف ایک عجیب دوراہے پر کھڑی ہے۔ استعفیٰ دیتی ہے تو مرتی ہے نہیں دیتی ہے تو مرتی ہے۔ یہ کچھ اسی قسم کی صورتحال ہے جو دھرنوں میں ہو گئی تھی کہ ایک طرف تحریک انصاف استعفیٰ دینا بھی چاہتی تھی دوسری طرف یہ بھی چاہتی تھی کہ یہ استعفے قبول نہ کئے جائیں۔ قومی اسمبلی سے استعفے دیئے لیکن کے پی کے کی اسمبلی سے استعفے نہیں دیئے۔ یہ دو عملی پہلے بھی تھی اب بھی ہے۔ اب بھی قومی اسمبلی سے استعفی پر تو بات بن رہی ہے لیکن کے پی کے اسمبلی سے استعفیٰ سب سے بڑی رکاوٹ ہیں۔ کل بھی پرویز خٹک کی کابینہ استعفوں کی مخالف تھی آج بھی مخالف ہے۔ کل بھی عمران خان ان کے سامنے بے بس تھے۔ آج بھی بے بس ہیں۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 27 جنوری 2018

زینب کے قتل نے اس ریاست کے ساتھ ساتھ سماج کی اصلیت کو جس طرح بے نقاب کیا ہے، اس نے یقیناً لوگوں کو اس حقیقت کے مزید قریب کردیا ہوگا کہ اگر ایک طرف یہ ریاست عالمی اور اندرونی سیاسی معاملات میں خودمختار فیصلے کرنے کی حتمی طاقت نہیں رکھتی تو اسی کے ساتھ اس ریاست کے پاس قاتلوں اور مجرموں کو اپنی گرفت میں لینے کی طاقت بھی ماند پڑتی جا رہی ہے۔ زینب کا قاتل اس سے پہلے اسی طرح آٹھ بچیوں کے ساتھ بربریت اور ان کا قتل کرچکا ہے۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 25 جنوری 2018

آپ مانیں یا نہ مانیں لیکن شہباز شریف کو دیوار سے لگانے کی کوشش ہو رہی ہے۔ شہباز شریف کو بطور خاص ٹارگٹ کیا جا رہا ہے۔ لیکن ہمیں یہ بات سمجھنی ہو گی کہ شہباز شریف کو ٹارگٹ کرنے کی حکمت عملی کا کوئی فائدہ نہیں ہوگا بلکہ نقصان ہی نقصان ہوگا۔ پہلے ہی نواز شریف کی نا اہلی ایک بے لذت گناہ ثابت ہو رہی ہے۔ ایسے میں سمجھ نہیں آرہی کہ شہباز شریف کو ٹارگٹ کرنے والے کیا حاصل کرنا چاہتے ہیں۔ دوستوں کو یہ بات سمجھنی ہوگی کہ شہباز شریف کو بے وجہ ٹار گٹ کرنے کی حکمت عملی کا نہ تو پہلے فائدہ ہوا ہے اور نہ ہی اب ہوگا۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 25 جنوری 2018

اگرچہ منو بھائی کے انتقال سے بہت سے لوگوں کی طرح دل اداس ہے لیکن خوشی اس بات کی بھی ہے کہ وہ ایک بھرپور اور بامعنی زندگی گزار کر اللہ کے حضور پیش ہوئے ہیں ۔ وہ محض ایک صحافی، کالم نگار، ڈرامہ نگار، ادیب، مصنف، دانشور ہی نہیں تھے بلکہ ایک اعلی کردار کی بڑی شخصیت اوراپنی ذات میں انجمن کی حیثیت رکھتے تھے ۔

مزید پڑھیں

Donald Trump's policy towards Pakistan

Donald Trump's; the president of US war of tweets was a fierce attack on Pakistan, accusing the country of "lies and deceit" and making "fools" of US leaders. Trump decla

Read more

loading...