شہر شہر


  وقت اشاعت: 1 دن پہلے 

پاکستان اس وقت بطور ریاست انتہا پسندی جیسے موذی مرض کا مقابلہ کرنے کی کوشش کررہا ہے ۔ لیکن جس مضبوط حکمت عملی سے پاکستان کو بطور ریاست ، حکومت ، اداروں اور معاشرہ اور وہ طبقات جو رائے عامہ کی تشکیل کرتے ہیں، کام کرنا چاہیے تھا ، وہ نہیں کیا جاسکا ۔ اس ضمن میں ہم نے انتہا پسندی اور دہشت گردی سے نمٹنے کے لیے 20 نکاتی نیشنل ایکشن پلان بھی ترتیب دیا لیکن اس پر بھی وفاقی اور صوبائی حکومتوں کی سطح پر کوئی ٹھوس کام دیکھنے کو نہیں ملا۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 2 دن پہلے 

سنہ 1980  کے لگ بھگ کی بات ہے جب مولانا امین احسن اصلاحی  کی تفسیر تدبر قرآن مکمل ہو چکی تھی۔ ان دنوں ہمدم دیرینہ جاوید احمد  (غامدی، ان دنوں انہوں نے ابھی اپنے نام کے ساتھ یہ اضافہ نہیں کیا تھا) نے مولانا محترم کو اس بات پر قائل کر لیا کہ ادارہ تدبر قرآن و حدیث کے نام سے علم و تحقیق کا ایک ادارہ قائم کیا جائے۔ اس کے دستور کی تشکیل کے لیے ہونے والے اجلاسوں میں مجھے بھی شرکت کی دعوت دی جاتی تھی۔ یہ اجلاس ہمارے بزرگ دوست ڈاکٹر فرخ ملک  کے دفتر واقع ٹیمپل روڈ پر منعقد ہوتے تھے۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 3 دن پہلے 

ہم اہل پنجاب کا شین قاف درست نہیں ہوتا۔ حروف پر مبنی زبانوں میں اصوات کا اختلاف پایا جاتا ہے۔ بچہ والدین اور ارد گرد کے افراد سے خود بخود آوازیں سیکھ لیتا ہے۔ متعلقہ منطقے میں جو آوازیں موجود نہیں ہوتیں ، ان کی تحصیل کار دارد ہوتی ہیں۔ یہ سامنے کی بات تھی جسے عرب و عجم کا جھگڑا بنا دیا گیا۔ دلی اور لکھنو کے دبستان وجود میں آئے۔ نیاز مندان لاہور میں پطرس، تاثیر، سالک ، حفیظ اور مہر جیسے جدید علوم کے شناور شامل تھے مگر گومتی کے پار سے یہی پیغام آیا کہ اقبال جوش کی ’جی ہاں‘ کے جواب میں ’ہاں جی‘ کہتے رہے۔

مزید پڑھیں

loading...

  وقت اشاعت: 3 دن پہلے 

بچپن سے ہی جن ممالک کو دیکھنے کی خواہش ہوئی، اُن میں لبنان بھی شامل تھا۔ اور پھر یہ خواہش بے تابی میں اس وقت بدل گئی جب لبنان خانہ جنگی کا شکار ہوا۔ عالمی اور علاقائی طاقتوں نے اس خانہ جنگی میں بلاواسطہ اور بلواسطہ اپنا اپنا حصہ ڈالا۔ امریکہ، اسرائیل، شام، ایران، لیبیا اور دیگر ممالک سمیت۔ اردن میں قیام کے دوران جب یاسر عرفات کی قیادت میں فلسطینی ، اسرائیل کو شکست دینے کے قریب ہوگئے تو عرب حکمرانوں کی سازشوں نے اس فلسطینی فتح کو شکست میں بدل دیا۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 4 دن پہلے 

یہ ظلم ہے ، زیادتی ہے میرے ملک سے میرے عوام سے ۔۔۔۔۔ اسے بند کرو ، اس کا سدباب کرو، ہم کیا اتنے گئے گزرے ہیں جو چاہے ہمیں اپنے ایئر رپورٹ پر روک لے، ہماری جامہ تلاشی کے بہانے ہماری عزتیں اچھالے، ہمیں دہشت گرد قوم کا طعنہ دے ، ہماری قوم کو دھوکہ باز، بے ایمان کہے۔ یہ ظلم ہے ، زیادتی ہے میرے ملک سے، میرے عوام سے ۔۔۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 4 دن پہلے 

سالانہ بجٹ کب آئے گا، اس کا اندازہ یوں تو کیلنڈر سے ہو جاتا ہے لیکن اس کے کچھ آثار کیلنڈر دیکھنے کی زحمت سے بھی بچا لیتے ہیں۔ بجٹ کی آمد سے قبل دو انتہائی شناسا معمولات شروع ہو جاتے ہیں۔ حکومتی دعوے اور کاروباری تنظیموں کی داد فریاد۔ حکومتی وزراء کی گفتگو کا لبِ لباب یہ ہوتا ہے کہ اس سال ریکارڈ بنانے والوں کو دگنا کام کرنا پڑے گا کیونکہ گزشتہ سال کے تمام ریکارڈ ٹوٹنے والے ہیں۔ شرح نمو، افراطِ زر، محاصل کی وصولیابی، ترقیاتی بجٹ وغیرہ وغیرہ میں ریکارڈ اضافہ، اتنا کہ مخالفین کے مونہہ بند اور زبانیں گنگ ہو جائیں گی۔ خوشحالی کے ایک چھوڑ درجنوں باب کھلنے والے ہیں۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 5 دن پہلے 

پاکستان کو ایک مضبوط جمہوری ، قانونی او رمہذہب معاشرہ بنانے کے لئے ملک میں اداروں کا مضبوط ہونا بہت ضروری ہے۔  دنیا کے مختلف ملکوں میں تمام ادارے  ملک یا ریاستوں کی بہتری کے لئے دو بنیادی نکتوں پر توجہ دیتے ہیں۔ اول ریاست میں ادارے کس حد تک مضبوط ، خود مختار، شفاف، جوابدہ اور لوگوں کی معاونت یا خدمت پر آمادہ ہوتے ہیں ۔ دیکھا یہ جاتا ہے کہ کیا ادارے اپنی ساکھ اور صلاحیت سمیت ادارہ جاتی میکنیزم میں لوگوں کے مفادات  کو پورا کرتے ہیں۔  یا وہ ایک مخصوص طبقہ کے مفادات کے گرد گھومتے ہیں۔ دوئم اداروں اور لوگوں کے درمیان اعتماد سازی اور بھروسہ کس حد تک موجود ہے اور کیا وہ سمجھتے ہیں کہ اداروں تک ان کی رسائی و انصاف کا عمل ممکن ہے ۔ کیونکہ یہی وہ دو بنیادی باتیں ہیں جو ہمیں ملکوں یا ریاست کے نظام میں اداروں کی ساکھ اور صلاحیت کو سمجھنے میں مدد فراہم کرتی ہیں ۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 6 دن پہلے 

امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے 24 گھنٹوں کے دوران ملک کی دو بڑی سیاسی جماعتوں کے سربراہوں سے ملاقات کی ہے جو سیاسی حلقوں میں تاحال زیربحث ہے۔ خصوصاً پیپلزپارٹی کے سربراہ آصف علی زرداری کے ساتھ اُن کی ملاقات کو سیاسی حلقے بہت زیادہ اہمیت دے رہے ہیں۔ اگرچہ نتائج کے اعتبار سے اُن کی زیادہ اہم ملاقات جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ سے ہوئی ہے۔ یہ دونوں ملاقاتیں انتخابی اصلاحات کے حوالے سے ہیں جس کے لیے جناب سراج الحق ملک کی تمام سیاسی جماعتوں کو ایک پیج(Page) پر لا نے کی کوشش کر رہے ہیں لیکن ملک کی ہیجانی سیاست اور سر پر آئے ہوئے انتخابات کی وجہ سے یہ ملاقاتیں زیادہ اہمیت اختیار کر گئی ہیں۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 6 دن پہلے 

خدا جانے اتفاق تھا یا مکار ٹائمنگ، بلوچستان میں یکے بعد دیگرے دہشت گردی کے دو واقعات عین اس وقت ہوئے جب بیجنگ میں چین نے نئے سلک روڈ منصوبے کے لیے سربراہ کانفرنس کا انعقاد کیا۔ عین جس روز وزیر اعظم کا وفد چین پہنچا، مستونگ میں سینیٹ کے ڈپٹی چیئرمین مولانا عبدالغفور حیدری کے قافلے پر دہشت گرد حملے میں 26 لوگ جان سے گئے۔ اس سے اگلے روز گوادر میں ایک رابطہ سڑک تعمیر کرنے پر مامور مزدوروں پر فائرنگ کرکے دس سے زائد افراد کو دہشت گردی کی بھینٹ چڑھا دیا گیا۔ یہ ہفتے کا وہی دن تھا جب پاکستان اور چین نے بیجنگ میں چھ منصوبوں پر پانچ سو ملین ڈالرز کی سرمایہ کاری کے ایم او یوز پر دستخط کیے۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 7 دن پہلے 

وقتاً فوقتاً یہ خبر پھیلتی ہے کہ بلاول بھٹو زرداری اور فاطمہ بھٹو کے ذریعے بھٹو خاندان میں پھیلی خلیج کم ہونے لگی ہے اور اس حوالے سے یہ خبر بھی پھیلائی جاتی ہے کہ دونوں شاید رشتۂ ازدواج میں بندھنے والے ہیں۔ کئی لوگ تو بڑے وثوق سے یہ بات کہتے ہیں۔ جن لوگوں کو بھٹو خاندان کے تنازع کی شدت کا تصور یا یقین نہیں، وہ اس خبر یا افواہ کو فوراً مان لیتے ہیں اور خصوصاً ذوالفقار علی بھٹو کے مداحین۔

مزید پڑھیں

Islamic Council Norway Fails Muslims and the Society

By hiring Nikab-wearing Leyla Hasic, Islamic Council Norway has taken a clear stand in a controversial debate. Norwegian Muslims neither are represented nor served with t

Read more

loading...