شہر شہر


  وقت اشاعت: 2 دن پہلے 

تقسیم ہند سے قبل جموں کشمیر کی عوامی تحریک اور جنوبی افریقہ میں سیاہ فام عوام کی تحریک میں کافی مماثلت پائی جاتی تھی۔ جموں کشمیر کے عوام کی اکثریت مسلمانوں کی تھی لیکن حکمران خاندان غیر مسلم تھا جس نے بیس فی صد غیر مسلموں کواسی فی صد مسلمانوں پر مسلط کر رکھا تھا۔ لہذا مہاراجہ کی شخصی حکومت کے خلاف مسلمان اکثریت کی اپنے بنیادی انسانی و جمہوری حقوق کے لیے جد و جہد سو فی صد جائز تھی۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 06 2017

ایک مقبول حدیث کے مطابق مزدور کا پسینہ خشک ہونے سے پہلے اس کی مزدوری ادا کر دینی چائیے۔ نبی کریم نے کسی شخص سے مفت کام کروانے کے عمل کو سخت ناپسند فرمایا اور غلاموں کی آزادی کو صرف پسند نہیں کیا بلکہ ان کی کوششوں سے کئی غلام آزاد ہوئے۔ سب سے بڑی مثال مشہور صحابی حضرت بلال حبشی کی ہے جنہیں حضرت ابو بکر صدیق نے پیسے دے کر آزاد کروایا ۔ حضرت عثمان غنی نے بھی نبی کریم کی ہدایت پر متعدد غلاموں کو آزاد کروایا۔ لیکن سعودی حکمرانوں نے آج بھی اپنے ملک کے اندر غریب ممالک سے آنے والے مزدوروں کو غلام بنا کر رکھا ہوا ہے۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 23 ستمبر 2017

18 ستمبر 2017 کو بعد دوپہر فاتح گلگت کرنل مرزا حسن جرال ، کپتان جابر خان،  شاہ خان اور صوبیدار صفی اﷲ کی قبروں پر حاضری کے بعد رکن اسمبلی نواز خان ناجی نے مجھے وہ جگہ دکھائی جہاں سے مہاراجہ کے آخری گورنر گھنسارا سنگھ کو گرفتار کیا گیا تھا۔ یہ تمام قبریں اسمبلی سیکرٹریٹ کے احاطے میں ہیں جس کے ارد گرد اب سرکاری تعمیر جاری ہے۔ گورنرگھنسارا سنگھ کی رہائش اب موجودہ چیف سیکرٹری کی رہائش گاہ ہے۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 21 ستمبر 2017

یوں تو انسان کی خواہش ہوتی ہے کہ وہ ساری دنیا کی سیر کرلے لیکن چند مقامات دیکھنے کا مجھے جنون کی حد تک شوق تھا۔ وہ تھے مکہ، مدینہ، وادی کشمیر اور گلگت بلتستان۔ بھارتی مقبوضہ کشمیرکی وادی کا تو ابھی کوئی چانس نظر نہیں آ رہا لیکن مکہ ومدینہ اور گلگت کا جب بھی میں نے ارادہ کیا تو اچانک غیر متوقع حالات و واقعات آڑے آ جاتے۔ لیکن جب اﷲ تعالی کو منظور ہوا تو مکہ ومدینہ کی حاضری کا انتظام بھی راتوں رات ہوگیا۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 06 ستمبر 2017

ایران کے سپریم لیڈر آیتﷲ خامنائی کا شمار دنیا کی چند ایک ایسی اہم مضبوط سیاسی شخصیات میں شمار ہوتا ہے جن کی بات کو انتہائی سنجیدگی سے لیا جاتا ہے۔ وہ اسلامی انقلاب کے بانی آیت ﷲ خمینی کی 1989 میں وفات سے لے کر مسلسل ایران کے لیڈر چلے آ رہے ہیں۔ ملک  میں ان کے پاس آئینی قوت کے ساتھ ساتھ اخلاقی قوت بھی ہے جس کی وجہ سے ان کے خلاف اب تک کوئی بیرونی سازش کا میاب نہ ہو سکی ۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 24 اگست 2017

پختون خوہ ملی عوامی پارٹی کے سربراہ اور رکن پاکستان قومی اسمبلی  محمود خان اچکزئی ایک صاف گو اور بے باک اور جرات مند سیاسدان کے طور پر مشہور ہیں جو ہمیشہ اپنے ضمیر کے مطابق پارلیمانی زبان میں کھل کر اظہار خیال کرنا جانتے ہیں۔ آج کل اکثر پاکستانی سیاستدان دشنام طرازی کی مرض میں مبتلا ہیں۔ ﷲ تعالی ان سب کو افاقہ نصیب کرتے ہوئے رواداری کی دولت سے نوازے۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 16 اگست 2017

انتہائی متوازن سوچ اور رواداری کی دولت سے مالا مال کشمیری وحدت پسندوں نے پاک و ہند یوم آزادی کے موقع پر ایک بار پھر دونو ں ملکوں کی عوام کو آزادی کی مبارک باد دیتے ہوئے ان کے سرکاری اداروں کی کشمیر کے حوالے سے گمراہ کن مہم پر افسوس کا اظہار کیا ہے۔ متعصب اور شاطر ہندوستان صرف قومی تہواروں پر ہی نہیں بلکہ اپنے اور بھارتی مقبوضہ کشمیر کے بچوں کو بھی سکولوں میں پڑھاتا ہے کہ جموں کشمیر کا فیصلہ تقسیم ہند کے وقت ہو گیا تھا۔ لیکن پاکستان نے بعد میں اس فیصلہ کو مسترد کرکے عالمی سطع پر کشمیر پر اپنا حق جتانا شروع کر دیا۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 23 جولائی 2017

اچھائی کو عام کرنے اور برائی کو روکنے کا ایک اچھا طریقہ یہ ہے کہ اچھے کارنامے سرانجام دینے والے انسانوں کی حوصلہ افزائی کی جائے۔ اورحوصلہ افزائی کا بہترین طریقہ عزت افزائی ہوتا ہے۔ اسی اصول کے تحت تحریک استحکام پاکستان کونسل ہر سال نایاب شخصیات کو تلاش کرکے قومی سطح کی تقریب میں گولڈ میڈل ایوارڈ دیتی ہے۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 15 جولائی 2017

برطانیہ کا شمار ایسے سامراجی ممالک میں ہوتا ہے جن کی پالیسی نے دنیا میں بہت بد امنی پیدا کی۔ کئی قوموں نے اپنا حق آزادی کھویا اور کئی ممالک ٹکڑوں میں تقسیم ہوئے۔ برطانیہ نے جس بھی ملک پر قبضہ کیا اسے چھوڑنے سے پہلے کئی ٹکڑوں میں تقسیم کرکے ایسے مسائل پیدا کیے جن کی وجہ سے آزاد ہونے والی قومیں اپنی آزادی سے پوری طرح مستفید نہ ہو سکیں۔ اس طرح کی منفی پالیسیوں کے باوجود برطانیہ نے کچھ ایسے اصول اپنا رکھے ہیں جن کی وجہ سے دنیا میں اب بھی اس کا بھرم قائم ہے۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 12 جولائی 2017

یوں تو برطانیہ سے واپسی کے بعدپونچھ میں متعدد اجتماعات و تقریبات میں شرکت کی لیکن یہ دورے صرف جائے تقریب تک محدود رہے۔ کئی بار مختلف دوست احباب نے ذاتی دعوتیں دیں مگر حالات نے اجازت نہ دی ۔ میری بڑی بیٹی دس سالہ مومنہ نے چار سال کی عمر میں ہمارے ساتھ بن جوسہ کی سیر کی تھی ۔ اس نے اپنی چھوٹی بہنوں چھ سالہ امینہ اور چار سالہ سلویہ کے ساتھ کشتی سواری کا کئی بار زکر کیا ۔ ان کا اصرار تھا کہ وہ بھی بن جوسہ دیکھنا چاہتی ہیں۔ ذاتی زندگی کے حوالے سے یہ تین معصوم بیٹیاں میری کل کائنات ہیں جن کی ہر جائز خوائش پوری کرنے کی کوشش کرتا ہوں۔

مزید پڑھیں

Praise and prayers for the great people of Turkey

One year ago, this day, the people of Turkey set an example by defending their elected government and President Recep Tayyip Erdogan against military rebels.

Read more

loading...