شہر شہر


  وقت اشاعت: 6 دن پہلے 

وسیم ایک چھلاوا تھا۔ ہم یار بیلی اسے ظالم ر نگ ساز کہتے تھے۔ ظالم اس کا تکیہ کلام تھا جو بالآخر دوستوں میں اس کا نام پڑ گیا ۔ کوئٹہ کی بولی میں ظالم ایک مفہوم میں بہت اچھا یا بہت خوبصورت کے لئے استعمال ہوتا ہے۔ وسیم کالج کے بعد مختلف گھروں وغیرہ میں رنگ و روغن کا کام کرتا تھا۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 08 جنوری 2017

پاکستانی اخبارات کے ادارتی صفحات میں خواتین لکھاری بہت کم دکھائی دیتی ہیں جو کہ تشویش ناک امر ہے۔ تاہم یہی سب سے بڑا مسئلہ نہیں ہے ۔ اس سے بھی زیادہ تشویش کی بات یہ ہے کہ اس مسئلے پر خود خواتین بھی بہت کم لکھتی ہیں۔ پاکستانی میڈیا میں 90 فیصد ادارتی مواد مرد لکھتے ہیں اور لامحالہ طور سے اس میں مردوں کا موقف ہی بار بار نمایاں ہوتا ہے ۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 04 جنوری 2017

ذوالفقار علی بھٹو شہید کی غریب نوازی اور عوام دوستی اکتسابی نہیں جبّلی تھی- اُنہیں غریبوں سے محبت اپنی غریب ماں سے مامتا میں ملی تھی - صدرجنرل محمد یحیی خان کے دورِحکومت میں الیکشن مہم کے دوران اُن پر بار بار رکیک حملے کیے گئے- یوں تو سانگھڑ اور ملتان میں اُن پر قاتلانہ حملے بھی ہوئے اور پیر آف مکھڈ کے سے سیاستدانوں کی طرف سے دھمکیاں بھی موصول ہوتی رہیں کہ : ’خبردار جو میرے حلقہء انتخاب میں قدم رکھا تو پھر واپس نہ جا سکو گے- میرے نشانچی پیر پگاڑا کے نشانچیوں کی مانند نالائق نہیں ہیں-‘ مگر رکیک ترین حملہ ہفت روزہ’’ زندگی ‘‘ کی وہ متعفن تحریر تھی جس میں بھٹو صاحب کی والدہ مرحومہ پر الزامات عائد کیے گئے تھے-

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 03 جنوری 2017

انگریزی اخبار ڈان کے رپورٹر عامر یٰسین کی خبر کے مطابق راولپنڈی صدر کی بنک روڈ اور حیدرروڈ پر منعقد ہونے والے بازار پر ٹریفک پولیس نے پابندی لگا دی ہے۔ یہ خبر پڑھتے ہوئے دفعتاً ایک ذاتی نقصان کا احتمال ہوا اور نقش ماضی کی کئی یادیں اُبھرتی چلی آئیں۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 02 جنوری 2017

یہ بات بہت معنی خیز ہے کہ داعش (دولتِ اسلامیہ عراق اور شام) نے ابوبکر البغدادی کی قیادت میں عراق کے اتنے بڑے علاقے کو اپنے زیرِنگیں کر لیا ہے جتنا بڑا علاقہ بہت سے عرب ممالک کے زیرِنگیں نہیں ہے-ابھی کل ہی کی بات ہے کہ داعش نے انصار بیت المقدس کو اپنا اتحادی قرار دیا ہے اور امریکہ میں قید پاکستانی ڈاکٹر فوزیہ صدیقی کی رہائی کا مطالبہ کیا ہے-

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 26 2016

اس وقت ضلع چکوال میں مبارک سلامت گونج رہی ہے۔ حال ہی میں مسلم لیگ (ن) میں شامل ہونے والے سردار صاحب کا گروپ چکوال ضلع کا چیئرمین اور نائب چیئرمین منتخب کروانے میں کامیاب ہوگیا۔ یوں مسلم لیگ نے چکوال فتح کر لیا۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 25 2016

انتظار حسین نے حکیم اجمل خان کی سوانح حیات لکھنے کی پیشکش بڑے تذبذب کے عالم میں اور بڑے تامل کے ساتھ قبول کی تھی۔ سید ابوالخیر مودودی سمیت متعدد قابلِ احترام شخصیتوں کے پُرزور اصرار پر اُنہوں نے یہ کہتے ہوئے یہ ذمہ داری قبول کی تھی کہ ’’یہ کام تو کسی مؤرخ اور محقق کے کرنے کا تھا۔ تاریخ اور تحقیق میرا میدان نہیں ہے1۔ ‘‘ کتاب پڑھتے وقت قاری االلہ کا شکر ادا کرتا ہے کہ یہ کتاب کسی مؤرخ اور محقق کی بجائے ایک تخلیق کار نے لکھی ہے۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 23 2016

یہ دستاویز کرنل (ریٹائرڈ) محمد رفیع کے چشم دید واقعات اور ذاتی مشاہدات پر مشتمل ہے۔ کرنل رفیع کوئی سیاست دان نہیں سپاہی ہیں، ایک سچے ، کھرے، نِڈر اور فرض شناس سپاہی۔ اتفاقاتِ زمانہ نے ایک وقت میں انہیں تاریخ کے کٹہرے میں لاکھڑا کیا تھا۔ وہ شخص جس نے تاریخ کے ہاتھوں قتل ہونے کی بجائے قید و بند قبول کرنے اور دارورسن چومنے کاراستہ منتخب کیا تھا اسے کرنل رفیع کی نگرانی میں دے دیا گیا تھا۔ کرنل رفیع نے اپنا فرض فولاد کے دل کے ساتھ ادا کیا مگر جب فرض سے سبکدوش ہوئے تو کھلا کہ فولاد کا دل تو اندر ہی اندر پگھل چکا ہے اور اس کے اندر تاریخی صداقتیں دھڑک رہی ہیں۔ کرنل رفیع کے سامنے ہماری بنتی بگڑتی ہوئی تاریخ کِتنی آتشیں تھی کہ اس کی آنچ میں فولاد پگھل کرخون بن گیا۔

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 20 2016

ہماری سیاست دائرے میں گردش کرتی چلی آ رہی ہے- ہرچند برس بعد ہم گھوم پھر کر اُسی مقام پر آ پہنچتے ہیں جہاں سے چلے تھے- اس لاحاصل پاکوبی کا سب سے بڑا سبب خود ہمارے اپنے بالادست طبقات ہیں- جب تک اقتدار ان طبقات کے مخصوص مفادات کے نگہبانوں کی گرفت میں رہے گا، عوام کے دیدہ و دل کی نجات کی گھڑی مسلسل دور سے دور ہوتی چلی جائے گی-

مزید پڑھیں

  وقت اشاعت: 14 2016

عظمتِ رفتہ کے نقوش اُجاگر کرنا ہماری تاریخ نگاری کا غالب رجحان ہے۔ تاریخ نویسی کا یہ جذباتی اور رومانی اندازِ نظر دورِ غلامی میں تو شاید ہماری نفسیاتی ضرورت تھا۔ مؤرخ نے اس ضرورت کو اس شان سے پورا کیا کہ تاثر کو تجزیہ کا نعم البدل مان لیا گیا۔ ہر رخصت ہونے والی شخصیت ہیرو ٹھہری اور ماضی کا حصہ بننے والا ہر دور زمان سنہری عہد قرار پایا۔

مزید پڑھیں

Threat is from inside

Army Chief General Raheel Sharif assured the nation that country’s borders are secure and the army is aware of threats and intrigues of the enemies. Speaking at an even

Read more