سوشانت سنگھ خود کشی کیس میں سابق گرل فرینڈ گرفتار

  • بدھ 09 / ستمبر / 2020
  • 1490

بالی وڈ کے  اداکار سوشانت سنگھ راجپوت کی خودکشی کے کیس میں ایک نیا موڑ آ گیا ہے۔ تحقیقات کے دوران سوشانت کی گرل فرینڈ ریہا چکرورتی کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔

ریہا چکرورتی کو بھارتی نارکوٹکس کنٹرول بیورو (این سی بی) نے مسلسل تین دن تفتیش کے بعد گرفتار کیا ہے۔ ریہا چکرورتی پر سوشانت سنگھ راجپوت کو مبینہ طور پر خود کشی پر اکسانے اور منشیات فراہم کرنے کے الزامات ہیں۔  این سی بی  ریہا چکرورتی کے بھائی شووک چکرورتی اور سشانت کے ہاؤس مینیجر سیموئل مرنڈا کو پہلے ہی گرفتار کر چکا  ہے۔

ریہا پر اپنے بھائی شووک، سوشانت سنگھ کے مینیجر سیموئیل مرنڈا اور باورچی دپیش ساونت کی مدد سے سوشانت کے لیے چرس کا انتظام کرنے کے الزامات ہیں۔ 'این سی بی' نے منگل کو عدالت میں مؤقف اختیار کیا کہ ریہا چکرورتی منشیات فراہم کرنے والے سرگرم گروہ کا حصہ ہیں۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ ریہا چکرورتی کے وکیل ستیش منی شیندے کی جانب سے بدھ کو سیشن کورٹ میں درخواست دائر کیے جانے کا امکان ہے۔  انہوں نے ریہا کی گرفتاری کو انصاف کو مسخ کرنے کے مترادف قرار دیا۔

ریہا پر جرم ثابت ہونے کی صورت میں اُنہیں کم ازکم 10 سال اور زیادہ سے زیادہ 20 سال اور ایک لاکھ روپے جرمانے تک کی سزا ہو سکتی ہے۔ یاد رہے کہ سوشانت سنگھ راجپوت رواں برس 14 جون کو ممبئی میں اپنے گھر میں مردہ حالت میں پائے گئے تھے۔ خودکشی کے بعد ان کے خاندان نے سوشانت سنگھ کی گرل فرینڈ ریہا چکرورتی کو اس کا ذمہ دار قرار دیا تھا۔

سوشانت کے اہل خانہ نے موت کی تحقیقات جاری رکھنے کی بھی درخواست دائرکی تھی۔  سوشانت سنگھ کی موت کے حوالے سے تحقیقات سینٹرل بیورو آف انویسٹی گیشن (سی بی آئی) کر رہی ہے۔  سشانت سنگھ راجپوت کی مبینہ خودکشی کے بعد سے ہی ریہا چکرورتی کا نام خبروں کی زینت بنا ہوا ہے۔

بھارت کے انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ میں ریہا کی طلبی کی وجہ اُن کے اکاؤنٹ میں پندرہ کروڑ بھارتی روپوں کی مشکوک ٹرانزکشن بنی جس پر محکمے نے ریہا چکرورتی سمیت پانچ افراد کے خلاف منی لانڈرنگ کا مقدمہ درج کیا۔

loading...