ایغور پر تشدد کے الزام میں امریکہ نے چین کے چار اہلکاروں پر پابندیاں لگادیں

  • جمعہ 10 / جولائی / 2020
  • 840

امریکہ نے جمعرات کے روز چین کے چار اہلکاروں پر پابندیاں عائد کردی ہیں، جن میں ملک کے طاقتور پولٹ بیورو کا ایک رکن بھی شامل ہے۔  ان پر الزام ہے کہ وہ ایغور مسلمان اقلیتی کمیونٹی کے خلاف انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں میں ملوث ہیں۔

اس بات کا امکان ہے کہ اس اقدام کے نتیجے میں امریکہ اور چین کے تعلقات مزید تناؤ کا شکار ہوں گے۔ ان پابندیوں میں سنکیانگ خطے کے کمیونسٹ پارٹی کے سیکرٹری شین کئانگو اور سنکیاگ کا پبلک سیکیورٹی بیورو شامل ہیں۔ یہ اعلان ایسے وقت کیا گیا ہے جب امریکہ اور چین کے درمیان پہلے ہی کورونا وائرس  سے نمٹنے اور ہانگ کانگ میں اقدامات کے حوالے سے شدید اختلافات کی صورت حال موجود ہے۔

وائٹ ہاؤس کے ایک اہلکار نے کہا ہے کہ ''امریکہ نے عالمی برادری پر زور دیا ہے کہ وہ سنکیانگ میں چین کی کمیونسٹ پارٹی کی جانب سے  اقلیتوں کے خلاف روا رکھے جانے والے سلوک کے خلاف اٹھ کھڑی ہو۔ جنہیں حراست، جبری مشقت، مذہبی تشدد، زبردستی اسقاط حمل اور اسٹرلائزیشن جیسی صعوبتوں کا سامنا ہے۔​''۔

اس اعلان پر واشنگٹن میں چہنی سفارت خانے سے رابطہ کیا گیا۔ لیکن اس نے فوری طور پر بیان دینے سے انکار کیا۔  تاہم چین اپنے اقلیتی گروپ کے خلاف بدسلوکی کی اطلاعات کو مسترد کرتا ہے۔ اس کا مؤقف ہے کہ وہاں قائم کیمپوں میں پیشہ ورانہ تربیت فراہم کی جاتی ہے، جس سے شدت پسندی سے نمٹنے میں مدد ملتی ہے۔

امریکی پابندیاں  'گلوبل میگنسکی ایکٹ' کے تحت عائد کی گئی ہیں۔ اس وفاقی قانون کی رو سے دنیا بھر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزی میں ملوث افراد کے خلاف اقدام کی اجاسکتا ہے۔ اس طرح امریکہ میں ان کے اثاثہ جات کو منجمد کیا جاتا ہے۔ ایسے لوگوں پر  امریکہ کے سفر پر پابندی لگائی جاتی ہے، جب کہ امریکیوں کی جانب سے ان کے ساتھ کسی طرح کی لین دین پر بندش عائد کی جاتی ہے۔

یہ پابندیاں چین کے طاقتور پولٹ بیورو کے ایک رکن،  خطے کے پارٹی کے ایک سابق معاون سیکرٹری،  سنکیانگ کے پبلک سیکیورٹی کے ڈائریکٹر اور کمیونسٹ پارٹی کے سیکرٹری اور بیورو کے ایک سابق پارٹی سیکرٹری کے خلاف لگائی گئی ہیں۔

ایک بیان میں امریکی وزیر خارجہ مائیک پومپیو نے کہا ہے کہ ان لوگوں پر امریکی ویزا  کی پابندیاں عائد کی جائیں گی۔  وہ یا ان کے اہل خانہ امریکہ کا سفر نہیں کر سکیں گے۔

loading...