پاکستان میں کورونا کیسز 4400 سے زیادہ، دنیا میں 90ہزار ہلاکتیں

  • جمعرات 09 / اپریل / 2020
  • 700

پاکستان میں گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران مزید 258 کیسز رپورٹ ہوئے ہیں۔ اور کل مریضوں کی تعداد 4480 ہوگئی ہے جبکہ 65 افراد جاں بحق ہوچکے ہیں۔ دنیا میں کورونا وائرس کے متاثرین کی تعداد پندرہ لاکھ جبکہ ہلاک ہونے والوں کی تعداد 90 ہزار ہوگئی ہے۔

 وزیر اعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ اگر احتیاط نہ کی گئی تو اپریل کے آخر تک اسپتالوں پر دباؤ بڑھ سکتا ہے۔  پاکستان میں مستحق افراد کو 12 ہزار روپے ماہانہ فراہم کرنے کا آغاز کر دیا گیا ہے۔ عالمی ادارہ صحت نے درست معلومات فراہم نہ کرنے کے صدر ٹرمپ کے الزام کو مسترد کیا ہے۔ کورونا وائرس میں مبتلا برطانوی وزیر اعظم بورس جانسن بدستور انتہائی نگہداشت میں ہیں۔

بھارت کے زیرِ انتظام کشمیر میں کورونا وائرس کے مصدقہ کیسز 200 سے بڑھ گئے ہیں۔ جمعرات کو مزید 24 افراد میں کورونا وائرس کی تشخیص ہوئی ہے۔ جموں و کشمیر میں وائرس سے ہلاکتیں چار ہو گئی ہیں۔ حکام کا کہنا ہے کہ زیادہ تر مریضوں کی ان افراد سے قریبی تعلق یا رشتہ داری ہے جو پہلے سے ہی اس وائرس کا شکار ہیں۔ بھارتی کشمیر میں 40 ہزار افراد کو زیرِ نگرانی رکھا گیا ہے۔ جموں و کشمیر کے لگ بھگ سو علاقوں کو 'ریڈ زون' یا 'بفر زونز' قرار دیا گیا ہے۔ کئی علاقوں میں جراثیم کش اسپرے  کیا جا رہا ہے۔

امریکہ کی ریاست نیو یارک میں مسلسل دوسرے روز ریکارڈ ہلاکتیں ہوئی ہیں۔ ہلاکتوں میں اضافے، کورونا وائرس کے تیز پھیلاؤ اور مریضوں کی حالت بگڑنے کی رفتار سے ڈاکٹرز اور طبی عملہ بھی پریشان ہے۔ نیو یارک کو کورونا وائرس کا نیا مرکز قرار دیا جا رہا ہے جہاں کورونا وائرس کے مریضوں کی مجموعی تعداد ڈیڑھ لاکھ سے تجاوز کر چکی ہے جب کہ بدھ کو مزید 779 ہلاکتیں ہوئی ہیں۔ جو ریاست میں یومیہ ہلاکتوں کی سب سے بڑی تعداد ہے۔ گزشتہ دو روز سے نیو یارک میں مسلسل ریکارڈ یومیہ ہلاکتیں ہو رہی ہیں۔

انتظامیہ نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ کورونا وائرس سے ہونے والی ہلاکتوں کی اصل تعداد سرکاری اعداد و شمار سے کہیں زیادہ ہو سکتی ہے۔ کیوں کہ سرکاری تعداد میں وہ لوگ شامل نہیں ہیں جن کی موت گھروں میں ہی ہوئی ہو۔ حکام کا کہنا ہے کہ کم از کم 200 افراد روزانہ اپنے گھروں میں ہی انتقال کر رہے ہیں جن میں سے بڑی تعداد کورونا وائرس کے مریضوں کی بھی ہو سکتی ہے۔

نیو یارک کے گورنر اینڈریو کومو نے بھی نیوز بریفنگ کے دوران کورونا وائرس سے ہلاکتوں کی اصل تعداد زیادہ ہونے کا خدشہ ظاہر کیا ہے۔ اینڈریو کومو نے کہا کہ بدھ کو ریاست میں 779 افراد ہلاک ہوئے ہیں جو کورونا وائرس سے یومیہ ہلاکتوں کی سب سے بڑی تعداد ہے۔  نیو جرسی میں بھی کورونا وائرس سے ریکارڈ 275 یومیہ ہلاکتیں ہوئی ہیں۔

کورونا وائرس کا مرکز سمجھے جانے والے چین کے وسطی شہر ووہان کے شہریوں کو لاک ڈاؤن ختم ہونے کے بعد اب دوسروں شہروں کا سفر کرنے کی بھی اجازت مل گئی ہے۔ ووہان میں مکمل لاک ڈاؤن لگ بھگ تین ماہ تک جاری رہا۔

چین کے محکمہ ہوابازی نے بتایا ہے کہ بدھ کے روز ووہان آنے اور ووہان سے باہر جانے والی پروازوں کی تعداد 221 رہی۔ یہ پہلا دن تھا جب ووہان کے شہریوں کو سفر کرنے کی اجازت دی گئی۔ اس شہر میں داخلے اور باہر نکلنے کے لیے پل، سرنگیں اور ہائی ویز تین ماہ تک بند رہے۔ تاہم بدھ کو ان راستوں سے پانچ لاکھ شہریوں نے سفر کیا۔

ووہان سے صرف ان شہریوں کو سفر کرنے کی اجازت دی جا رہی ہے جن کے سیل فون پر موجود صحت کے ایپ میں سبز رنگ کا نشان دکھائی دیتا ہے۔ جس سے مراد یہ ہے کہ وہ لوگ صحت مند ہیں اور سفر کرنے کے قابل ہیں۔

loading...