کراچی پراسرار گیس کے اخراج سے 6 افراد ہلاک، درجنوں متاثر

  • سوموار 17 / فروری / 2020
  • 760

کراچی کے علاقے کیماڑی میں پراسرار گیس کے اخراج سے ہلاک ہونے والوں کی تعداد 6 ہو گئی ہے، جب کہ 100 سے زائد افراد مہلک گیس سے متاثر ہوئے ہیں۔ متعدد افراد کی حالت نازک بتائی گئی ہے۔

ایس ایس پی سٹی کراچی مقدس حیدر کے مطابق رات آٹھ بجے کیماڑی کے مختلف مقامات سے اچانک گیس کی بو آنا شروع ہوئی جو علاقے میں پھیل گئی جس سے شہری متاثر ہونا شروع ہوئے۔ ابتدائی اطلاعات کے مطابق کراچی کے علاقے کیماڑی اور اس کے اطراف میں واقع علاقوں میں مبینہ طور پر زہریلی گیس کے اخراج سے متاثر ہونے والے درجنوں افراد کو فوری طور پر قریبی اسپتالوں میں پہنچایا گیا۔ جنہیں سانس لینے میں دشواری کا سامنا تھا جب کہ ان کے پیٹ میں بھی تکلیف بتائی گئی۔

حکام کے مطابق دورانِ علاج دو خواتین سمیت 6 افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔ جن میں ایک 19 سالہ لڑکا بھی شامل ہے۔ پولیس کے مطابق ابتدائی طور پر دس افراد کو کیماڑی میں واقع ایک نجی اسپتال منتقل کیا گیا تھا۔ مقامی پولیس نے بتایا ہے کہ اس بارے میں تاحال معلوم نہیں ہے کہ گیس کے اخراج کا مقام کیا تھا۔ تاہم اس وقت واقعے سے متعلق مختلف اور متضاد آرا سامنے آ رہی ہیں۔ ایس ایس پی مقدس حیدر کے مطابق واقعے کی تحقیقات کی جا رہی ہیں۔

وائس آف امریکہ نے وفاقی وزیر برائے پورٹ اینڈ شپنگ علی زیدی کے ٹیلی فون نمبر پر رابطہ کیا تو پورٹ اینڈ شپنگ کے مشیر محمود مولوی نے ٹیلی فون اٹینڈ کیا۔ انہوں نے بتایا کہ وفاقی وزیر اسی واقعے کی بابت ایک ہنگامی اجلاس میں ہیں۔ تاہم انہوں نے بتایا کہ تحقیقات کے لیے پاکستان بحریہ کے این بی سی ڈی ادارے کے لوگ پہنچ چکے ہیں اور تحقیقات کر رہے ہیں۔

اس سے قبل مقامی میڈیا نے وفاقی وزیر علی زیدی کے اس بیان کا حوالہ دیا ہے کہ گیس کی لیکج کا واقعہ بندگاہ کے اندر پیش نہیں آیا۔ ان کے بیان کے مطابق جو بھی واقعے کے ذمہ دار ہیں ان کے خلاف سختی سے نمٹا جائے گا۔  وزیراعلی سندھ کے مشیر مرتضی وہاب نے وائس آف امریکہ کے ساتھ مختصر گفتگو میں کہا ہے کہ واقعے کی تحقیقات کی جا رہی ہیں اور کچھ بھی کہنا قبل از وقت ہو گا۔

loading...