آزادی مارچ کو روکنے کیلئے پولیس کی حکمت عملی، سیکڑوں کنٹینرز منگوالیے

  • ہفتہ 19 / اکتوبر / 2019
  • 620

مولانا فضل الرحمان کے آزادی مارچ سے نمٹنے کے لئے اسلام آباد پولیس نے 550 سے زائد شپنگ کنٹینرز جمع کرنے کا فیصلہ کیا ہے تاکہ مارچ کو اسلام آباد میں داخل ہونے سے پہلے ہی روک دیا جائے۔  جمیعت علمائے اسلام بھی آزادی مارچ کے ذریعے دارالحکومت کو بند کرنا چاہتی ہے۔

پولیس ذرائع نے بتایا ہے کہ سٹی، صدر، انڈسٹریل ایریا اور دیہی پولیس کے سربراہان کے علاوہ پولیس کا لاجسٹک ڈویژن بھی کنٹینر اکٹھے کرنا چاہتا ہے۔ سٹی زون کی جانب سے 250 کنٹینرز کا مطالبہ کیا ہے جبکہ دیگر 3 زونز نے 100، 100 کنٹینر مانگے ہیں۔ محکمہ لاجسٹکس نے وینڈرز کو 450 کنٹینرز کا انتظام کرنے کا کہا ہے۔  یہ بھی کہا گیا ہے کہ مزید کنٹینر بھی درکار ہوسکتے ہیں۔  پولیس افسران کے مطابق ہر کنٹینر کا یومیہ کرایہ 5 ہزار روپے سے زائد ہے۔

اسلام آباد میں تقریباً 100 کنٹنیرز ریڈ زون کے اندر اور اطراف میں 10 مقامات کے لیے درکار ہوں گے۔ ان مقامات میں پی ٹی وی چوک، ایوب چوک، آغا خان روڈ، شاہراہ دستور پرسیکریٹریٹ چوک اور فرانس چوک، شاہراہ جمہوریت پر ریڈیو پاکستان چوک، خیابان سہروردی پر سرینا چوک، مری روڈ اور مارگلہ روڈ پر کنوینشن سینٹر شامل ہیں۔

پولیس نے ایکسپریس وے کی فیض آباد سے کورل فلائی اوور تک دونوں طرف سے جڑنے والی ہر سڑک کو بلاک کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ روالپنڈی سے جڑنے والی تمام سڑکوں کو بھی سیل کیے جانے کا امکان ہے۔

پولیس لاجسٹک کے پاس ایک ہزار گیس ماسک، 200 آنسو گیس لانچر اور 13 ہزار شیل موجود ہیں۔  ضرورت پڑنے پر لاٹھیاں، پلاسٹک ہیلمٹس، جیکٹس، شیلڈ، شن گارڈز اور اسلحہ بھی موجود ہے۔ پولیس کی جانب سے مقامی تاجروں کو خبردار کیا گیا ہے کہ اگر انہوں نے آزادی مارچ کے منتظمین یا شرکا کے ساتھ کوئی کاروبار کیا تو قانونی کارروائی کی جائے گی۔

ان تاجروں میں کھانا پکانے والی سروسز، ٹینٹ سروس، ہوٹلز، موٹلز، گیسٹ ہاؤسز، سرائے خانے، جنریٹرز، ورکشاپس، ہارڈویئر اسٹورز، ویلڈنگ ورکشاپس، ساؤنڈ سسٹم سروسز، کھدائی کرنے والے اور کرین مالکان شامل ہیں۔

اس سلسلے میں اسٹیشن ہاؤس افسران (ایس ایچ اوز) نے اپنی حدود میں موجود تاجروں کو تحریری وارننگ جاری کی ہے اور کہا ہے کہ تاجر دھرنے کے مظاہرین کے ساتھ ڈیل کرنے یا انہیں سروسز، معاونت یا سامان فراہم نہیں کریں گے۔ بصورت دیگر ان کے خلاف سخت ایکشن لیا جائے گا۔

loading...