حکومت کو کوئی مائی کا لعل نہیں ہٹا سکتا: وزیر داخلہ

  • منگل 08 / اکتوبر / 2019
  • 230

وزیر داخلہ بریگیڈیئر (ر) اعجاز شاہ نے کہا ہے کہ میں سمجھتا ہوں کہ مولانا فضل الرحمٰن 27 اکتوبر کو اسلام آباد نہیں آئیں گے۔ انہوں نے اسلام آباد میں میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ حکومت کو کوئی مائی کا لعل نہیں ہٹا سکتا۔

انہوں نے کہا کہ اسلام آباد کے بلیو ایریا میں دفعہ 144 لگی ہوئی ہے۔ میں سمجھتا ہوں کہ مولانا فضل الرحمٰن 27 اکتوبر کو نہیں آئیں گے۔ وہ جن لوگوں کو لارہے ہیں وہ کس لئے لارہے ہیں؟

بریگیڈیئر (ر) اعجاز شاہ کا کہنا تھا کہ عمران خان پہلے وزیراعظم ہیں، جنہوں نے کہا کہ مدینہ کی ریاست بنائیں گے۔ حکومت نہ مدرسوں کو چھیڑ رہی ہے، نہ ان کا نصاب تبدیل کر رہی ہے۔  بلکہ صرف اس میں انگیزی، تاریخ و دیگر مضمون شامل کئے جارہے ہیں تاکہ طلبہ دیگر ملازمتیں بھی کرسکیں۔

وزیر داخلہ نے کہا کہ جب عمران خان آئے تھے تب حالات اور تھے اور آج حالات مختلف ہیں۔  بریگیڈیئر (ر) اعجاز شاہ نے کہا کہ 2018 کے انتخابات میں پاکستان تحریک انصاف  کی حکومت عوام لے کر آئے ہیں۔ جب تک پی ٹی آئی پر عوام کا اعتماد رہے گا۔ اسے کوئی مائی کا لعل نہیں نکال سکتا۔ انہوں نے کہا کہ حکومت ڈیلیور کرتی ہے جبکہ اپوزیشن تنقید کرتی ہے۔ جب تک لوگ یہ سمجھیں گے کہ حکومت کی سمت ٹھیک ہے اور کرپٹ نہیں ہے تو کسی کے کہنے پر یہ حکومت نہیں گرسکتی۔

اس دوران ان سے پولیس کے عقوبت خانوں سے متعلق سوال کیا گیا، جس پر انہوں نے کہا کہ پولیس کے عقوبت خانے صرف اسلام آباد میں نہیں بلکہ کسی جگہ بھی نہیں ملتے۔ انہوں نے کہا کہ ہم 21ویں صدی میں آگئے ہیں۔ عقوبت خانے کہیں بھی نہیں ہوں گے لیکن اگر ان کی نشاندہی ہوگئی تو کارروائی کی جائے گی۔

وزیرداخلہ کا کہنا تھا کہ جب جرائم ہوتے ہیں تو اس کے بعد ردعمل دیکھیں جو آپ کو بتائے گا کہ کیسا ادارہ ہے۔ لیکن اگر ردعمل درست نہ ہو تو بتائیں لیکن اگر کارروائی ٹھیک ہو تو شاباش دیں تاکہ مزید بہتری آئے۔

جب ایک صحافی نے سوال کیا کہ مولانا فضل الرحمٰن کے لیے کوئی پیغام دے دیں تو وزیرداخلہ نے کہا کہ مولانا کو میرا سلام کہیں۔

loading...