آرمی چیف بھی چین پہنچ گئے، چینی فوجی قیادت سے ملاقات

  • منگل 08 / اکتوبر / 2019
  • 260

چیف آف آرمی اسٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ اور چین کی فوجی قیادت نے مقبوضہ کشمیر میں بھارتی جارحیت اور خطے پر اس کے اثرات کے بارے میں تبادلہ خیال کیا ہے۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ کے بیان کے مطابق جنرل قمر جاوید باجوہ نے کمانڈر آرمی جنرل ہان ویگو، پیپلز لبریشن آرمی (پی ایل اے)، جنرل ژو کلیانگ، سینٹرل ملٹری کمیشن کے نائب چیئرمین (سی ایم سی) سے پی ایل اے کے ہیڈ کوارٹرز میں ملاقات کی۔ آئی ایس پی آر کے مطابق ملاقاتوں میں علاقائی سیکیورٹی صورتحال کے ساتھ پاکستان اور چین کے مابین دفاعی تعاون پر بات چیت ہوئی۔

آرمی چیف نے چینی قیادت کو ان صورت حال سے آگاہ کیا جو مقبوضہ کشمیر میں جاری صورتحال کو حل نہ کیے جانے کی صورت میں پیدا ہو سکتی ہے۔ بھارت کو اقوامِ متحدہ کی قراردادوں کا احترام کرنے اور کشمیریوں کے انسانی حقوق کے تحفظ کو یقینی بنانا چاہیے۔

بیان میں کہا گیا کہ چینی قیادت نے مسئلہ کشمیر پر پاکستان کے اصولی مؤقف کی حمایت کی اور امن کے لیے پاکستان کے مؤقف کو سراہا۔ ملاقات میں دونوں ممالک کی فوجی قیادت نے اس بات پر اتفاق کیا کہ پاک بھارت کشیدگی حل نہ ہوئی تو اس کے امن اور خطے کے استحکام پر سنگین اثرات مرتب ہوں گے۔

آرمی چیف جنرل قمر باجوہ نے چینی قیادت کو سراہتے ہوئے کہا کہ پاکستان امن کا خواہاں ہے لیکن قوم کے عزت و وقار اور اصولوں پر سمجھوتہ نہیں ہوسکتا۔ فریقین نے خلیج کی صورتحال اور افغانستان میں امن کی کوششوں پر بھی سیر حاصل گفتگو کی اور پہلے سے موجود دفاعی تعاون کو فروغ دینے پر اتفاق کیا۔

خیال رہے کہ آرمی چیف کے علاوہ وزیر اعظم عمران خان، وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی اور سینئر وزرا و حکومتی عہدیدار 2 روزہ دورے پر چین میں موجود ہیں۔

loading...