العزیزیہ ریفرنس میں سزا کے خلاف درخواست کی سماعت 18 ستمبر کو ہوگی

  • منگل 10 / ستمبر / 2019
  • 390

اسلام آباد ہائی کورٹ نے سابق وزیراعظم نواز شریف کی العزیزیہ ریفرنس میں سزا کے خلاف درخواست کی سماعت کے لئے بنچ مقرر کردیا ہے۔ جج ارشد ملک کے ویڈیو تنازع کے بعد  سزا کے خلاف یہ پہلی سماعت ہے۔ اس  کے لیے 2 رکنی بینچ تشکیل دیا گیا ہے۔

بینچ اسلام آباد ہائی کورٹ کے جسٹس عامر فاروق اور جسٹس محسن ختر کیانی پر مشتمل ہوگا۔ مسلم لیگ (ن) کے قائد کی سزا کے خلاف دائر درخواست کی سماعت 18 ستمبر کو ہوگی۔

العزیزیہ ریفرنس میں نواز شریف کو سزا سنانے والے جج ارشد ملک کے ویڈیو لیک تنازع کے بعد سے ان کی سزا کے خلاف یہ پہلی سماعت ہے۔ ایک پریس کانفرنس میں ویڈیو دکھاتے ہوئے مریم نواز نے بتایا تھا کہ ویڈیو میں نظر آنے والے جج نے فیصلے سے متعلق ناصر بٹ کو بتایا کہ 'نواز شریف کے ساتھ زیادتی ہوئی ہے۔ فیصلے کے بعد سے میرا ضمیر ملامت کرتا رہا اور رات کو ڈراؤنے خواب آتے۔ لہٰذا نواز شریف تک یہ بات پہنچائی جائے کہ ان کے کیس میں جھول ہوا ہے‘۔

ارشد ملک نے سابق وزیر اعظم نواز شریف کو العزیزیہ ریفرنس میں 7 سال قید بامشقت اور بھاری جرمانے کی سزا سنائی تھی۔ جبکہ فلیگ شپ ریفرنس میں انہیں بری کردیا تھا۔

loading...