جذبہ قربانی کے بغیر کوئی قوم ترقی نہیں کر سکتی: صدراور وزیر اعظم کے پیغامات

  • سوموار 12 / اگست / 2019
  • 230

صدر مملکت عارف علوی اور وزیر اعظم عمران خان نے قوم کو عیدالاضحیٰ کی مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہا کہ اعلیٰ انسانی مقاصد کے حصول کے لئے ایثار و قربانی سے دریغ نہ کرنا ہی اسلامی تعلیمات کا نچوڑ ہے۔

صدر مملکت عارف علوی نے دارالحکومت اسلام آباد کی فیصل مسجد اور وزیر اعظم نے اپنی رہائش گاہ بنی گالا میں عید کی نماز ادا کی۔ صدر پاکستان ڈاکٹر عارف علوی نے عید الاضحیٰ کے مبارک موقع پر پوری ملت اسلامیہ کو دلی مبارک باد پیش کرتے ہوئے کہا کہ اللہ تعالیٰ کو حضرت ابراہیم ؑ کا قربانی کا عمل اس قدر پسند آیا کہ اس کی یاد منانے کو مسلمانوں کے لیے عبادت کا درجہ دے دیا گیا۔

انہوں نے کہا کہ یہ دن ہمیں سبق دیتا ہے کہ اللہ کی رضا اور خوشنودی کے لیے اپنی عزیز ترین اشیا حتیٰ کہ اولاد کو بھی قربان کرنا پڑے تو گریز نہ کیا جائے۔ ڈاکٹر عارف علوی نے کہا کہ ایثار و قربانی جیسے عظیم جذبے کی اہمیت اجاگر کرنے کی ضرورت تو ہمیشہ رہی ہے لیکن موجودہ دور میں اس کی اہمیت مزید بڑھ گئی ہے۔

صدر مملکت نے مقبوضہ کشمیر بھارتی ریاستی جبر و تشدد کو سہنے والے مظلوم کشمیریوں کی توصیف کرتے ہوئے انہیں بھرپور خراج تحسین پیش کیا۔ انہوں نے کہا کہ آج ہمارے دل مقبوضہ کشمیر میں ہمارے بھائیوں کے ساتھ دھڑکتے ہیں جو بھارتی مظالم کا ڈٹ کر سامنا کر رہے ہیں۔ ان کی آزادی کا دن دور نہیں۔ ہمارے شہدا کو خراج عقیدت کہ جنہوں نے ہمارے لیے اپنی جانیں قربان کر دیں۔

وزیر اعظم عمران خان نے بھی قوم کے نام اپنے خصوصی پیغام میں اس مقدس تہوارپر ہم وطنوں کومبارکباد دیتے ہوئے کہاہے کہ یہ دن مسلمانوں کو رضائے الہٰی کے لیے حضرت ابراہیم علیہ السلام اورحضرت اسماعیل علیہ السلام کی بے مثال اطاعت وفرمانبرداری کی یاد دلاتا ہے۔

انہوں نے کہاکہ دوعظیم شخصیات کی لازوال قربانی کواللہ تعالیٰ نے اس حد تک پسند کیا اور سراہا کہ اسے مسلمانوں کے لیے تاحیات مذہبی فریضہ بنا دیا۔ وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ قربانی کا جذبہ کسی بھی قوم کی ترقی کے لیے ناگزیر ہے۔ قربانی کے جذبے کے بغیر دنیا کی کوئی قوم ترقی نہیں کر سکتی اور میری دعا ہے کہ آپ کی زندگی میں ایسے مواقع بار بار آتے رہیں۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان مشکل معاشی دور سے گزر رہا ہے اور قوم کو اقتصادی بحالی کی حکومتی کوششوں میں تعاون کرنا ہوگا۔

loading...