صدارتی نظام کے نفاذ سے ملک ٹوٹے گا: بلاول کا انتباہ

  • جمعرات 25 / اپریل / 2019
  • 510

پاکستان پیپلز پارٹی  چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے حکومت کو خبردار کیا کہ اگر ملک میں صدارتی نظام رائج کرنے کی کوشش کی گئی یا اٹھارہویں ترمیم کو چھیڑا گیا تو ملک ٹوٹ جائے گا۔

پارلیمنٹ کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بلاول بھٹو زرداری کا کہنا تھا کہ ہم پہلے دن سے کہتے آرہے ہیں کہ ہماری جماعت حکومت کے سامنے دیوار بن کر کھڑی ہوئی ہے اور وہ اٹھارہویں ترمیم اور جمہوری نظام کو چھیڑنے نہیں دیں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ ہم نے پہلے بھی ون یونٹ کو قبول نہیں کیا تھا اور آج بھی نہیں کریں گے کیونکہ ماضی کی آمرانہ سوچ کی وجہ سے ملک دولخت ہوا تھا۔ اگر آج بھی ون یونٹ یا صدارتی نظام قائم کرنے کی کوشش کی گئی تو ملک ٹوٹے گا۔

وزیراعظم عمران خان کی جانب سے اپنے خلاف ’صاحبہ‘ کے لفظ پر سوال کے جواب میں بلاول بھٹو زرداری کا کہنا تھا کہ صاحبہ کہنے سے کسی دوسرے کا نہیں بلکہ خود کا قد چھوٹا ہوگا۔  ان مزید کہنا تھا کہ وزیراعظم اپنے الفاظ سے پاکستان کی خواتین کو یہ پیغام دینا چاہ رہے ہیں کہ عورت ہونا ایک گالی ہے۔

بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ پاکستان میں خواتین مردوں کے شانہ بشانہ کھڑی ہیں۔  اس ملک کی بنیادوں میں خواتین کی جدوجہد شامل ہیں۔ بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ ہمیں خواتین کو اپنے معاشرے اور سیاست میں جگہ دینی چاہیے اور آگے لے کر آنا چاہیے۔

loading...