پاناما کیس: جے آئی ٹی رپورٹ سپریم کورٹ میں پیش، عدالت مطمئن، تحقیقات مقررہ وقت میں مکمل کرنے کی ہدایت

پاناما کیس: جے آئی ٹی رپورٹ سپریم کورٹ میں پیش، عدالت مطمئن، تحقیقات مقررہ وقت میں مکمل کرنے کی ہدایت(panama-case-jit-report)

سپریم کورٹ میں پاناما فیصلے پر عمل درآمد کیس کی سماعت ہوئی۔ مشترکہ تحقیقاتی ٹیم نے اب تک ہونے والی پیش رفت کی رپورٹ پیش عدالت کے روبرو پیش کر دی۔

سپریم کورٹ میں جسٹس اعجاز افضل کی سربراہی میں 3 رکنی خصوصی بینچ نے پاناما جے آئی ٹی کی پیش رفت سے متعلق معاملے کی سماعت کی ۔ اس موقع پر کمرہ عدالت میں چیرمین پی ٹی آئی عمران خان، جہانگیر ترین، نعیم الحق، فواد چوہدری، دانیال عزیز اور شیخ رشید سمیت کئی سیاسی شخصیات بھی موجود تھیں۔ جسٹس اعجاز افضل نے مشترکہ تحقیقاتی ٹیم کے سربراہ واجد ضیا کو ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ یاد رہے کہ آپ کو یہ رپورٹ 60 روز میں مکمل کرنی ہے، آپ کو اس کے لیے اضافی وقت نہیں دیا جائے گا۔ جسٹس عظمت سعید نے ریمارکس دیے کہ ہمیں آپ اور آپ کی ٹیم پراعتماد ہے، آپ درست سمت میں جارہے ہیں، ہم اپنے حکم پرعمل کرانا جانتے ہیں،  کسی بھی محکمے سے تعاون چاہیے تو ہمیں بتائیں اور اگر کوئی محکمہ رکاوٹ ڈالے یا تعاون نہ کرے تو بھی ہمیں بتائیں ۔ سماعت کے دوران تحریک انصاف کے ترجمان فواد چوہدری نے عدالت سے درخواست کی کہ جے آئی ٹی کہ پیش رفت رپورٹ کو شیئر کیا جائے جسے مسترد کر دیا گیا۔

’ایران تنہا، پاکستانی وزیراعظم تماشائی بنے رہے‘(imran-khan-media-talk)

’ایران تنہا، پاکستانی وزیراعظم تماشائی بنے رہے‘

عمران خان کا کہنا ہے کہ نوازشریف نے بہت نیٹ پریکٹس کی لیکن انہیں میچ میں کھلایا نہیں گیا۔ انہیں 12 واں کھلاڑی بنا دیا گیا تاکہ وہ باہر بیٹھ کر تالیاں بجاتے رہیں۔

’دہشت گردی کیخلاف مشترکہ جدوجہد کرنا ہو گی‘(pm-nawaz-media-talk)

’دہشت گردی کیخلاف مشترکہ جدوجہد کرنا ہو گی‘

ریاض: وزیراعظم  نواز شریف کا کہنا ہے کہ تمام ممالک کو چاہیئے کہ وہ دنیا سے دہشت گردی کے ناسور کو ختم کرنے کے لئے مشترکہ جدوجہد کریں۔

مردان: یونیورسٹی کھل گئی، ہاسٹل سے اسلحہ برآمد(mardan-university-reopen)

مردان: یونیورسٹی کھل گئی، ہاسٹل سے اسلحہ برآمد

مردان: توہین مذہب کے الزام میں نوجوان طالب علم مشال خان کے قتل کے باعث بند ہونے والی عبدالولی خان یونیورسٹی کو 40 روز بعد کھول دیا گیا ہے۔

loading...

مسلمانوں لیڈروں کا امریکی تال پر رقص

امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ سعودی عرب کا دو روزہ دورہ مکمل کرنے کے بعد اسرائیل پہنچ چکے ہیں جہاں انہوں نے اسرائیل کو امریکہ کا خصوصی دوست قرار دیتے ہوئے کہا کہ فلسطین کا تنازعہ اسرائیلی اور فلسطینی رہنماؤں کے درمیان براہ راست بات چیت کے ذریعے ہی طے ہو سکتا ہے۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ جلد ہی اس مسئلہ کا حتمی حل تلاش کرنے کیلئے پیش رفت ہو گی تاہم انہوں نے تسلی کیا کہ انہیں ابھی پتہ نہیں ہے کہ یہ کیسے ہو گا۔ اس سے قبل کل رات انہوں نے ریاض میں مسلمان و عرب ملکوں کے سربراہوں کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے دہشت گردی ختم کرنے کی ضرورت پر زور دیا اور مسلمان ملکوں پر واضح کیا کہ انہیں خود اس جنگ کو لڑنا ہو گا اور مذہب کے نام پر خوں ریزی کرنے والوں کو اپنے معاشروں اور اس دنیا سے نکال باہر کرنا ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ مشرق وسطیٰ کے ممالک صرف امریکہ پر انحصار نہیں کر سکتے بلکہ انہیں خود یہ طے کرنا ہو گا کہ وہ کیسا مستقبل چاہتے ہیں اور کس ماحول میں اپنے بچوں کو پروان چڑھانا چاہتے ہیں۔ صدر ٹرمپ نے کہا کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ عقائد ، فرقوں یا مختلف تہذیبوں کی جنگ نہیں ہے بلکہ یہ ایسے مجرموں کے خلاف لڑائی ہے جو مذہب کے نام پر معصوم لوگوں کو ہلاک کرتے ہیں۔ یہ نیکی اور بدی کے درمیان لڑائی ہے۔ تاہم ان کی تقریر کی بنیاد ایران کو دہشت گردی کا سرپرست قرار دینے پر تھی۔

’ہلیری‘ تباہ ہو گئی(everest-rock-destroy)

’ہلیری‘ تباہ ہو گئی

دنیا کی بلند ترین چوٹی ماؤنٹ ایورسٹ پر موجود مشہور چٹان ہلیری سٹیپ تباہ ہو گئی ہے۔ اس مرتبہ کم برفباری ہوئی ہے جس سے یہ واضح ہو گیا ہے کہ وہ چٹان اب نہیں رہی۔

Islamic Council Norway Fails Muslims and the Society

By hiring Nikab-wearing Leyla Hasic, Islamic Council Norway has taken a clear stand in a controversial debate. Norwegian Muslims neither are represented nor served with t

Read more

loading...